உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: قدیم مارٹنڈ سوریہ مندر میں منوج سنہا کی پوجا پر اے ایس آئی نے کیا ناخوشی کا اظہار، جانئے پورا معاملہ

    J&K News: قدیم مارٹنڈ سوریہ مندر میں منوج سنہا کی پوجا پر اے ایس آئی نے کیا ناخوشی کا اظہار، جانئے پورا معاملہ

    J&K News: قدیم مارٹنڈ سوریہ مندر میں منوج سنہا کی پوجا پر اے ایس آئی نے کیا ناخوشی کا اظہار، جانئے پورا معاملہ

    Jammu and Kashmir : جموں و کشمیر کے ایل جی منوج سنہا کی جانب سے پوجا میں شرکت پر آثار قدیمہ نے اعراضات کئے ہیں اور اس پوجا کو اے ایس آئی قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی کے مترادف قرار دیا ہے۔ تاہم جموں و کشمیر کی انتظامیہ نے اس بات کی تردید کرتے ہوئے اے ایس آئی کے دعووں کو بے بنیاد قرار دیا ہے۔

    • Share this:
    جموں و کشمیر: جنوبی کشمیر کے مٹن کریوا میں واقع قدیم زمانے کے سوریہ مندر میں اتوار کے روز جموں و کشمیر کے ایل جی منوج سنہا کی جانب سے پوجا میں شرکت پر آثار قدیمہ نے اعراضات کئے ہیں اور اس پوجا کو اے ایس آئی قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی کے مترادف قرار دیا ہے۔ تاہم جموں و کشمیر کی انتظامیہ نے اس بات کی تردید کرتے ہوئے اے ایس آئی کے دعووں کو بے بنیاد قرار دیا ہے۔ پی ٹی آئی خبر رساں ایجنسی کے مطابق آثار قدیمہ نے اتوار یعنی 8 مئی کو ایل جی کی قدیم مارٹنڈ سوریہ مندر میں اشٹھ منگلم پوجا کو قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی قرار دیا ہے، جس کے بعد جموں و کشمیر کی انتظامیہ نے اس حوالے سے صفائی پیش کرتے ہوئے کہا کہ پوجا تمام قواعد و ضوابط کے نفاذ میں کی گئی اور اس دوران کوئی بھی خلاف ورزی نہیں کی گئی ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے : جموں وکشمیر: کولگام انکاونٹر میں لشکر طیبہ سے وابستہ پاکستانی دہشت گرد سمیت دو ہلاک


    مٹن اننت ناگ کا یہ معروف سوریہ مندر آٹھویں صدی میں راجا للتا دتیا مکتاپدا نے تعمیر کرایا تھا اور گردش ایام کے دوران یہ مندر پوری طرح سے خستہ حال ہو گیا اور کھنڈرات میں تبدیل ہو گیا۔ تاہم مندر کی تاریخی حثیت اور اس کی حفاظت کو ممکن بنانے کیلئے ان کھنڈرات کی دیکھ ریکھ کا ذمہ آرکولاجیکل سروے آف انڈیا یعنی آثار قدیمہ کے سپرد کیا گیا۔ جبکہ یہ مندر قومی اہمیت کا مقام قرار دیا گیا ہے اور یہ مندر مرکزی تحفظ یافتہ عمارات میں شمار ہوتا ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے : جموں وکشمیر: پلوامہ میں پولیس کی کارروائی، اغوا کیس کو 24 گھنٹے کے اندر حل کردیا گیا


    اگرچہ کافی عرصہ سے مندر میں مذہبی تقاریب کا سلسلہ منقطع ہوا ہے ، تاہم بیسویں صدی کے دوران ہندی فلموں کی شوٹنگ کا سلسلہ یہاں پر شروع ہوا اور اب تک فلم من کی آنکھیں اور حیدر سمیت کئی ساری بالی ووڈ ہندی فلموں کی شوٹنگ یہاں پر ہوئ ہے۔ مندر کی تاریخی ساخت کو تحفظ فراہم کرنے اور اس کی تجدید کاری کےلیے کئی بار مقامی لوگوں نے بھی سرکار سے مطالبہ کیا ہے۔

    اتوار کے روز پوجا کے دوران جموں و کشمیر کے ایل جی نے مارٹنڈ سوریہ مندر سمیت جموں و کشمیر کے سبھی تاریخی اور مذہبی مقامات کے تحفظ اور تجدید کاری کا عزم دہرایا تھا۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: