உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پھندے پر لٹکتے ملے جموں یونیورسٹی کے ماہر نفسیات کے ایسوسی ایٹ پروفیسر، جنسی ہراسانی کے لگے تھے الزام

    پھندے پر لٹکتے ملے جموں یونیورسٹی کے ماہر نفسیات کے ایسوسی ایٹ پروفیسر، جنسی ہراسانی کے لگے تھے الزام

    پھندے پر لٹکتے ملے جموں یونیورسٹی کے ماہر نفسیات کے ایسوسی ایٹ پروفیسر، جنسی ہراسانی کے لگے تھے الزام

    Jammu University: کچھ ہی دیر بعد یونیورسٹی کے عملے کے ارکان موقع پر پہنچ گئے اور دروازہ کھٹکھٹایا۔ کوئی جواب نہ ملنے پر دروازہ توڑا گیا تو اندر چندر شیکھر پنکھے کے ساتھ رسی سے لٹکے ملے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu | Srinagar | Hyderabad
    • Share this:
      Jammu University: جموں یونیورسٹی کے ماہر نفسیات کے محکمہ میں برسرخدمت ایسوسی ایٹ پروفیسر چندرشیکھر نے اپنے آفس میں پھندا لگا کر خودکشی کرلی۔ پھندا لگانے کے ایک گھنٹہ پ ہلے ہی ایسوسی ایٹ پروفیسر کو ان کا معطل کیے جانے کا خط ملا تھا۔ یہ خط جموں یونیورسٹی کے رجسٹرار کی طرف سے لکھا گیا تھا۔

      ایسوسی ایٹ پروفیسر چندرشیکھر کے خلاف یکم ستمبر کو محکمے کی 22 سے 23 طالبات نے ایک ساتھ ڈین اسٹوڈنٹ ویلفیئر کے پاس شکایت درج کرائی تھی کہ چندرشیکھر انہیں جنسی ہراساں کررہے ہیں۔ شکایت کے بعد اس معاملے کو جانچ کے لئے جموں یونیورسٹی جنسی ہراسانی داخلی شکایت کمیٹی کے پاس بھیج دیا گیا۔

      بدھ 7 ستمبر کو شام 4 سے 5 بجے کے درمیان جموں یونیورسٹی کے رجسٹرار کا ایک ملازم اُنہیں معطل کیے جانے کا لیٹر لے کر چندرشیکھر کے کمرے میں پہنچا اور اس کے آدھے گھنٹے کے بعد ہی چندرشیکھر نے کمرا انددر سے بند کرلیا۔ کچھ دیر بات جب وہ ملازم دوبارہ ان کے پاس آیا تو دیکھا کہ کمرہ اندر سے بند ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      مرکزی قوانین کے لاگو ہونے سے جموں و کشیر میں مساوی نظام ہوا قائم

      جموں و کشمیر: بجبہاڑہ علاقہ میں 24 گھنٹوں میں دو انکاونٹرز، مزید دو دہشت گرد ہلاک

      یہ بھی پڑھیں:
      آزاد اور ان کی سیاسی پارٹی جموں و کشمیر کے سیاسی منظر نامہ پر کتنا ہوسکتی ہے اثر انداز؟

      Jammu and Kashmir: انسداد دہشت گردی کے سلسلے میں کئی مقامات پر ایس آئی اے کی چھاپہ ماری

      اس ملازم نے اس بات کی اطلاع رجسٹرار آفس کو دی۔ کچھ ہی دیر بعد یونیورسٹی کے عملے کے ارکان موقع پر پہنچ گئے اور دروازہ کھٹکھٹایا۔ کوئی جواب نہ ملنے پر دروازہ توڑا گیا تو اندر چندر شیکھر پنکھے کے ساتھ رسی سے لٹکے ملے۔ پولیس نے موقع سے متوفی کا موبائل فون بھی برآمد کر لیا ہے جسے فی الحال ضبط کر لیا گیا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: