உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پی ایم مودی کے دورے سے پہلے جموں میں CISF جوانوں سے بھری بس پر گرینیڈ سے حملہ، 1جوان شہید، 8زخمی، 4 دہشت گرد مارے گئے

    Youtube Video

    Terrorist Attack on CISF personnel: ۔ ذرائع کے مطابق اس حملے کی منصوبہ بندی سرحد پار بیٹھے دہشت گردوں نے کی تھی، تاکہ وزیر اعظم کے دورہ سے قبل جموں میں ایک بڑا دہشت گردانہ حملہ کیا جا سکے۔ یہ معاملہ جمعہ کی صبح تقریباً 4.15 بجے کا ہے۔ دہشت گردوں نے جموں میں چڈھا کیمپ کے قریب فوجیوں کی بس پر گرینیڈ سے حملہ کیا۔ سی آئی ایس ایف ذرائع نے اس کی تصدیق کی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی. جموں و کشمیر میں صبح کی شفٹ ڈیوٹی پر جا رہے سی آئی ایس ایف ( Terrorist Attack on CISF personnel) کے 15 اہلکاروں سے بھری بس پر بڑا دہشت گرد حملہ ہوا ہے۔ یہ معاملہ جمعہ کی صبح تقریباً 4.15 بجے کا ہے۔ دہشت گردوں نے جموں میں چڈھا کیمپ کے قریب فوجیوں کی بس پر گرینیڈ سے حملہ کیا۔ سی آئی ایس ایف ذرائع نے اس کی تصدیق کی ہے۔ حالانکہ فوجیوں نے فوری طور پر مورچہ سنبھال لیا اور دہشت گردوں کے خلاف جوابی کارروائی شروع کر دی۔ جوابی کارروائی کے بعد دہشت گرد موقع سے فرار ہوگئے ہیں۔ سی آئی ایس ایف CISF   ذرائع کے مطابق دہشت گردوں کا منصوبہ بس پر حملہ کر کے زیادہ سے زیادہ فوجیوں کی جوان لینا اور ان کے ہتھیاروں کو تباہ کرنے کا تھا لیکن جوابی کارروائی میں انہیں بھاگنا پڑا۔

      موصولہ اطلاعات کے مطابق اس حملے میں سی آئی ایس ایف کا 1 جوان شہید ہوا ہے، جب کہ 8 فوجی زخمی ہوئے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی سیکورٹی فورسز نے ایک دہشت گرد کو مار گرایا ہے۔ اے این آئی نے جموں و کشمیر پولیس کے حوالے سے بتایا کہ بارہمولہ انکاؤنٹر میں کل 4 دہشت گرد مارے گئے ہیں۔ ان میں سے، لشکر کے اعلیٰ کمانڈر یوسف کانترو نے سال 2020 میں بی ڈی سی کے صدر سردار بھوپندر سنگھ کو مار ڈالا تھا، جسے آج سیکورٹی فورسز نے ڈھیر کر دیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: وزیراعظم نریندر مودی 24 اپریل کو جموں وکشمیر کے ایک روزہ دورے پر پہنچیں گے جموں

      ذرائع کے مطابق اس حملے کی منصوبہ بندی سرحد پار بیٹھے دہشت گردوں نے کی تھی، تاکہ وزیر اعظم کے دورہ سے قبل جموں میں ایک بڑا دہشت گردانہ حملہ کیا جا سکے۔ بتا دیں کہ جمعرات کو کٹھوعہ میں پانچ مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا تھا، جن کے پاس سے نقشے اور موبائل فون برآمد ہوئے تھے۔ ان مشتبہ افراد سے پوچھ گچھ کے دوران سیکورٹی ایجنسیوں کو اہم معلومات ملی تھیں، جن میں حملے کا ٹاسک جیش محمد کو دیا گیا ہے۔



      پختہ اطلاع ملنے کے بعد پولیس اور سیکورٹی فورسز کی ٹیموں نے آس پاس کے علاقوں کی تلاشی مہم شروع کردی۔ جموں کے مضافات میں سشما اور جلال آباد کے درمیان ایک علاقے میں دہشت گردوں کی موجودگی کا پتہ چلا اور دہشت گردوں کے ساتھ انکاؤنٹر جمعہ کی صبح شروع ہوا۔ سیکورٹی فورسز کے ساتھ دہشت گردوں کا انکاؤنٹر اب بھی جاری ہے اور آس پاس کے علاقوں  محاصرہ کر لیا گیا ہے۔



      غور طلب ہے کہ  وزیراعظم نریندر مودی 24 اپریل کو جموں وکشمیرکے ایک روزہ دورے پر آرہے ہیں۔ وزیراعظم سانبہ ضلع کے پالی پنچایت حلقے میں پنچایتی راج اداروں کے نمائندوں اور عام لوگوں کے مشترکہ جلسے سے خطاب کریں گے۔ قومی پنچایتی راج دن کے موقع پر وزیراعظم ملک کے دیگر حصوں میں پنچایتی راج اداروں کے لاکھوں ممبران سے بھی مخاطب ہونگے۔ وزیر اعظم کے اس دورے سے متعلق تمام تیاریاں مکمل کی جارہی ہیں ان تیاریوں کا جائزہ لینے کے لیے  وزیراعظم کے دفتر میں وزیر مملکت ڈاکٹر جیتندر سنگھ اور جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے پالی سانبہ کا دورہ کیا تھا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: