ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر: بھدرواہ میں ڈور اسٹیپس پر ویکسینیشن کی مہم شروع

پچھلے 22 دن کے لاک ڈاؤن اور تیزی سے بڑھ رہے کرونا معاملوں کو روکنے کے لئے بھدرواہ انتظامیہ نے ایک وسیع و عریض آبادی کو کرونا سے بچانے کے لئے ڈور سٹپس پہ لوگوں کو ویکسین لگانے کی مہم شروع کر دی ہے۔

  • Share this:
جموں و کشمیر: بھدرواہ میں ڈور اسٹیپس پر ویکسینیشن کی مہم شروع
پچھلے 22 دن کے لاک ڈاؤن اور تیزی سے بڑھ رہے کرونا معاملوں کو روکنے کے لئے بھدرواہ انتظامیہ نے ایک وسیع و عریض آبادی کو کرونا سے بچانے کے لئے ڈور سٹپس پہ لوگوں کو ویکسین لگانے کی مہم شروع کر دی ہے۔

جموں و کشمیر کے اضافی ضلع بھدرواہ میں کوویڈ 19 کے معاملوں میں اضافہ ہو رہا ہے اور کئی اموات بھی ہو رہی ہیں۔کرونا کے بڑھتے معاملوں کو روکنے کے لئے جموں کشمیر انتظامیہ نے کرونا کرفیو لگایا ہے۔ پچھلے 22 دن کے لاک ڈاؤن اور تیزی سے بڑھ رہے کرونا معاملوں کو روکنے کے لئے بھدرواہ انتظامیہ نے ایک وسیع و عریض آبادی کو کرونا سے بچانے کے لئے ڈور سٹپس پہ لوگوں کو ویکسین لگانے کی مہم شروع کر دی ہے۔ انتظامیہ کا کہنا ہے کہ کرونا کی اس چین کو جلد سے جلد توڑنے کے لئے ہم نے یہ قدم اُٹھایا ہے۔لاک ڈاؤن کے چلتے ٹرانسپورٹیشن نہ ہونے کی وجہ سے لوگ ویکسینیشن سنٹزز پر نہیں پہنچ پا رہے تھے۔اسی لئے ہم نے یہ قدم اُٹھایا۔ ضلع ڈوڈہ میں پہلا کیمپ بھدرواہ قصبے کے تاریخی کھکھل گراؤنڈ میں 5 وارڈوں (2،3،4،5، 6) کے لئے لگایا گیا جس میں 45 سال سے زائد عمر کے لوگوں کو ویکسین کی پہلی خوراک لگائی گئی۔پہلے مرحلے میں 200 افراد کو ویکسین لگائی گئی۔منسیپل کمیٹی بھدرواہ کے نائب صدر رشی کوتوال نے کہا کہ ماہرین کے مطابق کورونا وائرس کی دوسری لہر زیادہ شدید اور متعدی ہے لہذا زیادہ سے زیادہ آبادی کو حفاظتی ٹیکے لگا کر ڈھال فراہم کرنا زیادہ اہم ہوجاتا ہے۔


انہوں نے کہا کہ 'ویکسین اٹ ڈورسٹپس پہل کے تحت ویکسینیشن سینٹر پر قطار میں کھڑے ہونے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ اب صحت کی ٹیمیں کسی خاص علاقے یا رہائشی معاشرے کا دورہ کریں گی جس کے لئے لوگوں کو صرف انتظامیہ کو اطلاع دینے کی ضرورت ہے۔ سی بیچ بی ایم او بھدرواہ ڈاکٹر شکیل احمد سنبریہ نے انکشاف کیا کہ محکمہ صحت کے ویکسینیٹروں کو اُن سبھی جگہوں پر ویکسینیشن کے بھیجا جائے گا جہاں سے اُنہیں اطلاع ملے گی۔

لوگوں کی ہچکچاہٹ کو دور کرنے اور ویکسین کو اپنانے کی تاکید کرتے ہوئے ، سربراہ ویکسینیٹر رینو شرما نے زور دے کر کہا کہ ہمارے سائنس دانوں نے ویکسین تیار کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی ہے اور قوم کے لئے معاشرتی ذمہ داری کو قبول کرتے ہوئے، ہمیں مہاماری سے قیمتی جانوں کو بچانے کے لئے جلد سے جلد لوگوں کو ویکسین لگنی چاہیئے۔ کرونا کرفیو کے بیچ گھر گھر جا کر ویکسین لگانے کے لئے مقامی لوگوں نے انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا۔ محلہ کھکھل کے ایڈوکیٹ ماجد ملک نے بتایا ، "سبھی لوگوں کے پاس نجی گاڑیوں کی رسائی حاصل نہیں ہے اور عوامی ٹرانسپورٹ کے سفر پر پابندی کی وجہ سے ویکسینیشن سینٹر تک پہنچنا مشکل تھا کیونکہ سنٹر شہر سے 3 کلومیٹر کی دوری پر ہے۔"


ملک نے مزید کہا ، "انتظامیہ کی طرف یہ اقدام خاص طور پر غریبوں ، بوڑھوں اور جسمانی معذور لوگوں کے لئے بہت مددگار ہے۔" 65 سال کی رزیہ بیگم جو جسمانی طور پر معذور ہے اُس نے بتایا، میں ویکسینیشن سنٹر پہ ویکسین لگانے جا ہی نہیں سکتی تھی کیونکہ میں دونوں ٹانگوں سے معذور ہوں۔ آج میرے گھر کے سامنے ہی ویکسین لگائے جا رہے ہیں۔ میں نے اپنے پڑوسی سے گزارش کی کہ مجھے ویکسین لگانے کے لئے گھر سے باہر لے جائے۔ آج میں نے ویکسین کی پہلی خوراک لی میں بہت خوش ہوں اور میں انتظامیہ کا شکریہ ادا کرتی ہوں۔ 'ویکسین اٹ ڈورسٹپس' کے اقدام جاری رکھتے ہوئے اسی طرح کے کیمپوں کو بالترتیب 22,23,24 اور 25 مئی کو مسجد اسکول ، نگر اسکول ، ہالیہان اور اولڈ ایس ڈی ایچ بھدرواہ میں منعقد کیا جائے گا۔
Published by: Sana Naeem
First published: May 22, 2021 10:15 AM IST