உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: کشمیری پنڈتوں کیلئے وزیراعظم روزگار پیکیج کو بی جے پی نے تہس نہس کردیا: جی اے میر

    J&K News: کشمیری پنڈتوں کیلئے وزیراعظم روزگار پیکیج کو بی جے پی نے تہس نہس کردیا: جی اے میر

    J&K News: کشمیری پنڈتوں کیلئے وزیراعظم روزگار پیکیج کو بی جے پی نے تہس نہس کردیا: جی اے میر

    Jammu and Kashmir : وزیراعظم پیکیج کے تحت وادی میں تعینات کشمیری پنڈت ملازمین کے احتجاج کو جائز قرار دیتے ہوئے جموں و کشمیر کانگریس نے مودی حکومت پر وزیراعظم روزگار پیکیج کو تہس نہس کرنے کا الزام لگایا ہے۔

    • Share this:
    جموں و کشمیر: وزیراعظم پیکیج کے تحت وادی میں تعینات کشمیری پنڈت ملازمین کے احتجاج کو جائز قرار دیتے ہوئے جموں و کشمیر کانگریس نے مودی حکومت پر وزیراعظم روزگار پیکیج کو تہس نہس کرنے کا الزام لگایا ہے۔ جموں و کشمیر پردیش کانگریس کے صدر جی اے میر نے کہا کہ یو پی اے نے کشمیری پنڈتوں کی بازآبادکاری اور ان کی وادی واپسی کیلئے وزیراعظم روزگار پیکیج کو مرتب کیا تھا، لیکن بی جے پی نے اس میگا پروجیکٹ کی ساخت کو سخت نقصان پہنچایا ہے۔ میر نے کہا کہ بی جے پی نے اس اسکیم کو سرد مہری کی نظر کر دیا اور یہی وجہ ہے کہ آج تک کشمیری پنڈتوں کی بازآبادکاری اور وادی واپسی ممکن نہیں بن سکی۔

     

    یہ بھی پڑھئے: رہبر کھیل، جنگلات اور زراعت کی پالیسی پر تنازعہ، انتظامیہ نے دی صفائی


    میر نے کہا کہ پی ایم پیکیج یو پی اے کی دین ہے، جس کو مرتب کرنے کا ایک واحد مقصد یہ تھا کہ کشمیری پنڈتوں کو روزگار فراہم کیا جا سکے اور بعد میں ایسے ملازمین کے افراد خانہ کو ایک منظم پالیسی کے تحت وادی میں واپس بسایا جا سکے۔ لیکن نریندر مودی کی قیادت والی حکومت نے اس پیکیج میں کوئی پیش رفت نہیں لائی اور کشمیری پنڈتوں کی حالت پہلے سے ابتر ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: کشمیری پنڈت ملازمین کا احتجاج جاری، اب مظاہرین نے اپنایا یہ نیا طریقہ


    غلام احمد میر کا مزید کہنا ہے کہ بی جے پی سرکار نے کشمیری پنڈتوں کو محض ایک ووٹ بینک کیلئے استعمال کیا ہے اور ان کا سیاسی استحصال کرنے کی کوششیں لگاتار جاری ہیں۔ میر نے الزام لگایا کہ مودی کی حکومت کشمیری پنڈتوں کے دیرینہ مسائل کا حل کرنے میں ناکام ہو گئی ہے۔ جبکہ راہل بٹ کے قتل کے بعد کشمیری پنڈت مزید عدم تحفظ کے شکار ہو گئے ہیں اور سرکار ان کے مطالبات پر غور کرنے کے بجائے ان کی آواز کو سرد خانے میں ڈال رہی ہے ۔

    میر نے مطالبہ کیا کہ سرکار جلد سے جلد پی ایم پیکیج احتجاجی ملازمین کے مطالبات پر غور کر کے ان کے مسائل کو حل کرنے کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھائے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: