உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بڈگام پولیس نے 3 ٹپر، 2 ٹریکٹر، 2 جے سی بی اور 2 سنٹرو گاڑیاں ضبط کیں، جانئے کیا ہے معاملہ

    بڈگام پولیس نے 3 ٹپر، 2 ٹریکٹر، 2 جے سی بی اور 2 سنٹرو گاڑیاں ضبط کیں، جانئے کیا ہے معاملہ

    بڈگام پولیس نے 3 ٹپر، 2 ٹریکٹر، 2 جے سی بی اور 2 سنٹرو گاڑیاں ضبط کیں، جانئے کیا ہے معاملہ

    Budgam News: پولیس نے کہا کہ کمیونٹی ممبران سے درخواست کی جاتی ہے کہ وہ اپنے پڑوس میں ہونے والے جرائم کے بارے میں معلومات اپنے متعلقہ پولیس یونٹوں کے ساتھ شیئر کریں ۔ تاکہ بر وقت کارروائی ہوجائے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir | Srinagar | Jammu
    • Share this:
    بڈگام : وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام میں بیروہ  پولیس اسٹیشن کو ہردمل پورہ بیروہ اور نالہ سکھ ناگ پر معدنیات کی غیر قانونی کھدائی اور نقل و حمل کی اطلاع ملی ، جس کے بعد پولیس پارٹی بیروہ نے مخصوص مقامات پر چھاپہ مار کر 3 ٹپر، 2 جے سی بی اور 2 ٹریکٹر کو قبضے میں لے لیا، جو غیر قانونی طور پر ریت سے بھری ہوئی تھی۔ بجری اور 7 افراد کو موقع پر ہی گرفتار کرلیا۔ مزید یہ کہ 2 سینٹرو گاڑیاں بھی قبضے میں لی گئیں جن میں سے ایک ڈرائیور کو گرفتار کیا گیا جو کہ پولیس کی نقل و حرکت پر نظر رکھے ہوئے تھا۔

     

    یہ بھی پڑھئے: مرکزی حکومت جموں و کشمیر کے قبائلیوں کو با اختیار بنانے کیلئے کر رہی ہیں اقدامات


    گرفتار ڈرائیوروں کی بعد میں شناخت کی گئی۔ ان میں زبیر احمد وانی ولد محمد یوسف وانی ساکنہ گوری پورہ اور شاکر احمد وار ولد عبد الحمید کانہامہ، غلام حسن گنائی ساکنہ بیروہ، شفیقت علی ملک ساکن سہی پورہ ماگام، مظفر احمد ملک ولد عبدالرحیم ملک ساکنہ کھادی بانہال، شوکت احمد منٹو ولد عبدالحمید ساکنہ ستہارن کھاگ، عمران احمد تانترے ولد غلام حسن ساکنہ اٹلگام، دانش حسین میر ولد غلام محمد ساکن ہیگام کے طور پر ہوئی۔

     

    یہ بھی پڑھئے: پہلگام میں اپنی نوعیت کی پہلی ایکوائن بین الاقوامی کانفرنس اختتام پذیر


    ملوث افراد کے خلاف مقدمہ ایف آئی آر نمبر *126/2022 اور 127/2022* قانون کی متعلقہ دفعات کے تحت پولیس اسٹیشن بیروہ میں درج کیا گیا ہے اور تفتیش شروع کردی گئی ہے۔ پولیس نے واضح کیا کہ غیر قانونی کان کنی کی سرگرمیوں میں ملوث پائے جانے والے افراد کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔

    پولیس نے کہا کہ کمیونٹی ممبران سے درخواست کی جاتی ہے کہ وہ اپنے پڑوس میں ہونے والے جرائم کے بارے میں معلومات اپنے متعلقہ پولیس یونٹوں کے ساتھ شیئر کریں ۔ تاکہ بر وقت کارروائی ہوجائے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: