ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں اور کشمیر کے ایک۔ ایک ضلع میں 15 اگست کے بعد شروع ہو گا 4G انٹرنیٹ۔ حکومت نے سپریم کورٹ کو بتایا

مرکز نے بتایا کہ 4 جی انٹرنیٹ خدمات کا ٹرائل پندرہ اگست کے بعد جموں اور کشمیر ڈویژن کے ایک۔ ایک ضلع میں کیا جائے گا۔

  • Share this:
جموں اور کشمیر کے ایک۔ ایک ضلع میں 15 اگست کے بعد شروع ہو گا 4G انٹرنیٹ۔ حکومت نے سپریم کورٹ کو بتایا
جموں اور کشمیر کے ایک۔ ایک ضلع میں 15 اگست کے بعد شروع ہو گا 4G انٹرنیٹ

نئی دہلی۔ جموں وکشمیر میں 4 جی انٹرنیٹ (4G Internet In Jammu Kashmir) کے معاملہ پر مرکزی حکومت نے سپریم کورٹ کو بتایا ہے کہ ریاست کے دو اضلاع میں  15 اگست کے بعد ٹرائل بنیاد پر اس کی شروعات کی جائے گی۔ مرکز نے بتایا کہ 4 جی انٹرنیٹ خدمات کا ٹرائل پندرہ اگست کے بعد جموں اور کشمیر ڈویژن کے ایک۔ ایک ضلع میں کیا جائے گا۔


مرکز نے عدالت (Supreme Court) کو بتایا کہ کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ ریاست میں 4 جی انٹرنیٹ تک رسائی لوگوں کو دھیرے دھیرے دی جائے اور دو ماہ بعد اس کا جائزہ لیا جائے گا۔ عدالت نے مرکز کو بتایا کہ خصوصی کمیٹی نے ٹرائل کی بنیاد پر 4 جی انٹرنیٹ خدمات فراہم کرنے کا فیصلہ لیا ہے۔ جہاں ٹرائل ہو گا وہ علاقے کم حساس والا علاقے ہیں۔



بتا دیں کہ پچھلے سال پانچ اگست کو آرٹیکل 370  اور آرٹیکل 35 اے کے التزامات کو منسوخ کرنے سے ایک دن پہلے ہی ریاست میں انٹرنیٹ اور فون خدمات منسوخ کر دی گئی تھیں۔ حالانکہ، کچھ دن بعد فون لائن، پھر موبائل فون اور پھر  2 جی انٹرنیٹ کی خدمات فراہم کی گئیں۔

پچھلے مہینے جولائی کے آخری ہفتے میں جموں وکشمیر حکومت 19 اگست  2020 تک مرکز کے زیر انتظام خطے میں ہائی اسپیڈ انٹرنیٹ پر پابندی بڑھائے جانے کی بات کہی ہے۔ پرنسپل داخلہ سکریٹری کے ایک حکمنامہ میں کہا گیا ہے کہ موبائل ڈیٹا خدمات کے توسط سے سلامتی دستوں، سیاسی کارکنوں اور بے قصور شہریوں پر حملے سمیت دہشت گردانہ سرگرمیوں کا منصوبہ بنانے اور انہیں نافذ کرنے میں غلط استعمال کئے جانے کے امکانات کے پیش نظر ہائی اسپیڈ انٹرنیٹ تک پہنچ پر پابندی ضروری ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 11, 2020 12:59 PM IST