உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پلوامہ حملے میں استعمال کیمیکل مواد کو ایمیزن سے خریدا گیا تھا ، درج ہو غداری کا کیس : کیٹ

    پلوامہ حملے میں استعمال کیمیکل مواد کو ایمیزن سے خریدا گیا تھا ، درج ہو غداری کا کیس : کیٹ

    پلوامہ حملے میں استعمال کیمیکل مواد کو ایمیزن سے خریدا گیا تھا ، درج ہو غداری کا کیس : کیٹ

    2019 میں جموں و کشمیر کے پلوامہ میں ہوئے حملے میں چالیس سی آر پی ایف جوانوں کی موت ہوگئی تھی ۔ اس حملے کی جانچ کررہی قومی جانچ ایجنسی نے اپنی رپورٹ میں اس بات کا انکشاف کیا تھا ۔ ایمیزن نے دہشت گردوں کے ذریعہ خریدے گئے کیمیکل کی تفصیلات کو بھی جانچ ایجنسیوں کے ساتھ شیئر کیا تھا ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : کنفیڈریشن آف انڈیا ٹریڈرس یعنی کیٹ نے لیجنڈ ای کامرس کمپنی ایمیزن پر ایک سنگین الزام لگایا ہے ۔ کیٹ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ایمیزن کی ویب سائٹ سے گانجا ، ماری جوآنا جیسی چیزوں کی فروخت کوئی پہلا اور نیا جرم نہیں ہے ۔ کیٹ نے بتایا کہ 2019 میں ہوئے پلوامہ دہشت گردانہ حملے میں دہشت گردوں نے جس کیمیکل کا استعمال بم بنانے کیلئے کیا تھا ، اس کو بھی ایمیزن کی ویب سائٹ سے خریدا گیا تھا ۔ اسی کیمیکل کا استعمال کرکے دہشت گردوں نے امپرووائزڈ ایکسپلوزیو ڈیوائس تیار کئے تھے ۔

      غور طلب ہے کہ 2019 میں جموں و کشمیر کے پلوامہ میں ہوئے حملے میں چالیس سی آر پی ایف جوانوں کی موت ہوگئی تھی ۔ اس حملے کی جانچ کررہی قومی جانچ ایجنسی نے اپنی رپورٹ میں اس بات کا انکشاف کیا تھا ۔ ایمیزن نے دہشت گردوں کے ذریعہ خریدے گئے کیمیکل کی تفصیلات کو بھی جانچ ایجنسیوں کے ساتھ شیئر کیا تھا ۔ بعد میں ایمیزن کی مدد سے ہی جانچ ایجنسیوں نے دو دہشت گردوں کو گرفتار بھی کیا تھا ۔ دہشت گردوں نے ایمیزن سے امونیم نائٹریٹ ، جو ہندوستان میں ایک ممنوعہ مادہ ہے ، اس کی خریداری کی تھی ۔

      کیٹ کے قومی صدر بی سی بھارتیہ اور جنرل سکریٹری پروین کھنڈیلوال نے کہا کہ این آئی اے کی طرف سے گرفتار افراد سے جب پوچھ گچھ کی گئی تھی تو انہوں نے اس بات کو قبول کرلیا تھا کہ حملے کی واردات کو انجام دینے کے لئے ایمیزن سے آئی ای ڈی ، بیٹری اور دیگر سامان کو خریدا تھا ۔ فارینسک جانچ میں سامنے آیا تھا کہ حملے میں امونیم نائٹریٹ ، نائٹرو گلسرین کا استعمال بم بنانے میں کیا گیا ۔

      کیٹ نے کہا کہ چونکہ ہمارے فوجیوں کے خلاف دہشت گردوں نے ممنوعہ اشیا امونیم نائٹریٹ کو بڑی آسانی سے آن لائن ذریعہ سے خرید لیا اور اس ممنوعہ اشیا کا استعمال ملک کے خلاف کیا گیا ، اس لئے بیچنے والے پلیٹ فارم ایمیزن پر غداری کا معاملہ درج کیا جانا چاہئے ۔ کیٹ نے کہا کہ ای کامرس ویب سائٹ کو اس بات کا دھیان رکھنا چاہئے کہ وہ کیسے کسی کو بھی کچھ بھی خریدنے کی اجازت دے سکتا ہے ۔

      بیان میں کہا گیا ہے کہ اس سے زیادہ یہ تعجب کی بات ہے کہ اتنے بڑے معاملہ کو پوری طرح سے ٹھنڈے بستے میں دیا گیا اور ایسے مواد کی فروخت کیلئے اس میں آگے کسی بھی طرح کی کارروائی نہیں کی گئی ۔

      بھارتیا اور کھنڈیلوال نے کہا کہ دھماکہ خیز مواد ایکٹ 1984 کے تحت امونیم نائٹریٹ کو 2011 میں ممنوعہ قرار دیا گیا تھا ۔ اس کے ساتھ ہی ہندوستان میں اس کی کھلی فروخت ، خرید، پروڈکشن پر ممنوعہ لگانے کیلئے ایک نوٹیفکیشن بھی جاری کیا گیا تھا ۔ کیٹ کے مطابق ممبئی سے پہلے امونیم نائٹریٹ کا استعمال 2006 میں وارانسی اور مالیگاوں میں اور 2008 میں دہلی میں ہوئے سیریل بلاسٹ میں ہوا تھا ۔

      سریش سینتھالیا نے اپنے بیان میں کہا کہ کیٹ 2016 سے ای کامرس پلیٹ فارم کیلئے ایک قانون اور ضوابط کی مانگ کررہا ہے ، لیکن ابھی تک اس سمت میں کسی بھی طرح کے ٹھوس قدم نہیں اٹھائے گئے ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: