உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیر میں اس انداز میں منایا جا رہا ہے Christmas ، کرسمس کیک کےذریعے کشمیر کی بیکری کو فروغ 

    Christmas: کشمیر کے گُلمرگ کے ساتھ ساتھ اس بار دیگر علاقوں میں بھی کرسمس کی تیاریاں زوروں پر ہیں۔ سرینگر میں کرسمس کیک بنانے کا مقابلہ منعقد کیا گیا اور ان کے ذریعے بیکری کے ساتھ ساتھ کشمیر کے خوبصورت نظاروں کو نمایاں کیا گیا۔

    Christmas: کشمیر کے گُلمرگ کے ساتھ ساتھ اس بار دیگر علاقوں میں بھی کرسمس کی تیاریاں زوروں پر ہیں۔ سرینگر میں کرسمس کیک بنانے کا مقابلہ منعقد کیا گیا اور ان کے ذریعے بیکری کے ساتھ ساتھ کشمیر کے خوبصورت نظاروں کو نمایاں کیا گیا۔

    Christmas: کشمیر کے گُلمرگ کے ساتھ ساتھ اس بار دیگر علاقوں میں بھی کرسمس کی تیاریاں زوروں پر ہیں۔ سرینگر میں کرسمس کیک بنانے کا مقابلہ منعقد کیا گیا اور ان کے ذریعے بیکری کے ساتھ ساتھ کشمیر کے خوبصورت نظاروں کو نمایاں کیا گیا۔

    • Share this:
    سرینگر: گلمرگ کشمیر میں برفباری کے ساتھ ہی وایٹ کرسمس Christmas کی خوشی پھیل گئی ہے لیکن یہ خوشی اس بار گلمرگ تک محدود نہیں ہے ۔ محکمہ سیاحت جموں کشمیر ، سرینگر میں بھی کرسمس کے تعلق سے کئی پروگرام منعقد کر رہی ہے ۔ آج اس سلسلے میں انڈین انسٹیٹیوٹ آف ہوٹل منیجمنٹ میں کرسمس کیک بنانے کا مقابلہ منعقد کی گیا ۔ اس مقابلے میں کئی نوجوانوں اور بچوں نے بھی اپنے ہنر آزمائے۔

    محکمہ سیاحت کی جانب سے منعقد اس مقابلہ کا مقصد کشمیر کی بیکری کو فروغ دینے کے ساتھ ساتھ نوجوانوں کو ایک پلیٹ فارم مہیا کرانا تھا ۔مقابلہ کے دوران جو کیک تیار کئے گئے ان سے کشمیر جھلکتا تھا۔ کہیں گلمرگ کا مشہور گرجا تو کہیں جھیل میں شکارے۔ سیکریٹری ٹورزم سرمد حفیظ نے مقابلہ میں شامل افراد میں انعامات تقسیم کرنے کے موقع پر کہا کہ اس بار سرمائی سیزن کے دوران سیاحوں کی ریکارڈ تعداد کشمیر کی سیر کو آئے گی۔



    انھوں نے محکمہ سیاحت کے انتظامات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ پہلی بار گلمرگ کے ساتھ ساتھ پہلگام اور سونا مرگ میں بھی سرمائی کھیل ہونگے۔ سونا مرگ اس بار پہلی بار سیاحوں کے لئے کھلی رہے گی ۔انھوں نے کہا کہ موسم مہربان ہے اور گلمرگ میں برفباری ہوئی ۔



    کرسمس اور ونٹر فیسٹول کے لئے تمام تیاریاں کی گئی ہیں۔واضح رہئے کہ اس بار تیس سال کے بعد ڈلگیٹ سرینگر کا قدیم گرجا گھر عبادت کے لئے کھولا گیا ہے جو خراب حالت میں تھا۔ کئی ماہرین محکمہ سیاحت سے کووڈ قواعد ضوابط پر مکمل پاسداری کروانے کا مطالبہ کررہے ہیں اور محکمہ سیاحت کے عہدیدار کہہ رہے ہیں کہ انھوں نے اس سلسلے میں اقدامات کئے ہیں۔



    پچھلے سال نئے سال کے موقع پر گلمرگ میں سیاحوں کی بھیڑ تھی اور کووڈ ایس او پیز پر عمل نہیں کیا گیا۔ اس بار اومیکران کے چلتے مکمل پاسداری کروانے پر زور دیا جارہا ہے ۔

    قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: