ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

بڑی خبر: سری نگر میں تصادم، پاکستانی کمانڈر سمیت لشکر طیبہ کا دہشت گرد ہلاک

جموں و کشمیر کے گرمائی دارالحکومت سری نگر کے رام بن علاقے میں پیر کی صبح دہشت گردوں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان شروع ہونے والا تصادم جاری ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 12, 2020 02:07 PM IST
  • Share this:
بڑی خبر: سری نگر میں تصادم، پاکستانی کمانڈر سمیت لشکر طیبہ کا دہشت گرد ہلاک
سری نگر میں تصادم، پاکستانی دہشت گرد سیف اللہ محاصرے میں

سری نگر: جموں و کشمیر کے گرمائی دارالحکومت سری نگر کے رام بن علاقے میں پیرکی صبح دہشت گردوں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان شروع ہونے والا تصادم جاری ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ دہشت گردوں کے چھپنے کی مصدقہ اطلاع موصول ہونے پرجموں وکشمیر پولیس اور سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کی ایک مشترکہ ٹیم نے پیرکی صبح سری نگرکے رام باغ علاقے کو محاصرے میں لےکر تلاشی آپریشن شروع کیا۔ کشمیر زون پولیس نے اپنے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر ایک ٹوئٹ میں کہا: 'سری نگر انکاؤنٹر اپ ڈیٹ: دو دہشت گرد ہلاک، تلاشی کارروائی ہنوز جاری ہے'۔


قبل ازیں سرکاری ذرائع نے بتایا کہ دہشت گردوں کے چھپنے کی مصدقہ اطلاع موصول ہونے پرجموں وکشمیر پولیس اور سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کی ایک مشترکہ ٹیم نے پیر کی علی الصبح سری نگر کے رام باغ علاقے کو محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا۔ انہوں نے کہا کہ جوں ہی تلاشی آپریشن کی ایک ٹیم مشتبہ مقام کے نزدیک پہنچی تو وہاں پناہ گزیں دہشت گردوں نے ان پر فائرنگ شروع کر دی جس کے نتیجے میں طرفین کے درمیان تصادم چھڑگیا۔ دریں اثنا کشمیر زون پولیس کے انسپکٹر جنرل وجے کمار نے جائے تصادم آرائی پر نامہ نگاروں کو بتایا تھا کہ اس انکاؤنٹر میں لشکر طیبہ سے وابستہ پاکستانی کمانڈر سیف اللہ اور ایک مقامی جنگجو پھنسے ہوئے ہیں۔

انہوں نےکہا کہ جوں ہی تلاشی آپریشن کی ایک ٹیم مشتبہ مقام کے نزدیک پہنچی تو وہاں پناہ گزیں جنگجوؤں نے ان پر فائرنگ شروع کر دی جس کے نتیجے میں طرفین کے درمیان تصادم چھڑ گیا۔ ایک سینئر پولیس افسر نے تصادم چھڑنے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ طرفین کے درمیان تصادم آرائی جاری ہے۔ دریں اثنا کشمیر زون پولیس کے انسپکٹر جنرل وجے کمار کا کہنا ہے کہ اس انکاؤنٹر میں لشکر طیبہ سے وابستہ پاکستانی کمانڈر سیف اللہ اور ایک مقامی جنگجو پھنسے ہوئے ہیں۔ پولیس کا کہنا ہے کہ سیف اللہ حالیہ پانپور حملے، جس میں سی آر پی ایف کے دو اہلکار ہلاک جبکہ دیگر تین زخمی ہوئے تھے، کے علاوہ نوگام اور چاڑورہ میں سیکورٹی فورسز پر ہوئے حملوں میں بھی ملوث ہے۔



جموں وکشمیر کے گرمائی دارالحکومت سری نگر کے رام باغ علاقے میں پیرکی صبح دہشت گردوں اور سیکورٹی فورسزکے درمیان شروع ہونے والا تصادم ایک پاکستانی کمانڈر سمیت لشکر طیبہ کے دو جنگجوئوں کی ہلاکت پر ختم ہو گیا ہے۔ طرفین کے درمیان تصادم کی وجہ سے کئی رہائشی ڈھانچے بھی خاکستر ہوئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ سیف اللہ حالیہ پانپور حملے، جس میں سی آر پی ایف کے دو اہلکار ہلاک جبکہ دیگر تین زخمی ہوئے تھے، کے علاوہ چاڈورہ میں سیکورٹی فورسز پر ہوئے حملے میں بھی ملوث ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ سیف اسی سال پاکستان سے کشمیر آیا تھا اور پہلے شمالی کشمیر میں سرگرم تھا اورگزشتہ دو ماہ سے وسطی کشمیر میں سرگرم تھا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 12, 2020 01:03 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading