ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کشمیری نوجوان دہشت گردی کا راستہ ترک کرکے قومی دھارے میں شامل ہوں: کمانڈر 2 سیکٹر کا بیان

بریگیڈیئر ٹی ایس ٹھاکر نے کشمیری نوجوانوں کو دہشت گردی کی راہ ترک کرکے اپنا سارا دھیان کھیل کود اور تعلیم کی جانب مرکوز کرنے کا مشورہ دیا تاکہ آگے چل کر کشمیری نوجوان نہ صرف جموں وکشمیر بلکہ پورے ملک کی ترقی کی راہ میں کلیدی رول ادا کر سکے۔

  • Share this:
کشمیری نوجوان دہشت گردی کا راستہ ترک کرکے قومی دھارے میں شامل ہوں: کمانڈر 2 سیکٹر کا بیان
کشمیر ی نوجوان دہشت گردی کا راستہ ترک کرکے قومی دھارے میں شامل ہوں: کمانڈر 2 سیکٹر کا بیان۔ فائل فوٹو

اننت ناگ: فوج کی 2 سیکٹر کے کمانڈر بریگیڈیئر ٹی ایس ٹھاکر نے دہشت گردی میں شامل ہوئے کشمیری جوانوں کو بندوق کی راہ ترک کرکے قومی دھارے میں شامل ہونے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بندوق کسی بھی مسئلے کا حل نہیں ہے، لیکن کشمیری جوانوں کو گمراہ کرکے کچھ عناصر کی جانب سے بندوق تھامنے کےلئے آمادہ کیا جا رہا ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ بندوق تھام کر کشمیری نوجوان کسی بھی صورت میں لوگوں کی بھلائی یا فلاح و بہبود نہیں کر سکتے ہیں۔ بریگیڈیئر ٹی ایس ٹھاکر نے مزید کہا کہ اگر کسی کو لگتا ہے کہ ہتھیار اٹھا کر وہ اپنی کوئی بات منوا سکتے ہیں یا پھر کسی مسئلے کا ازالہ ہوگا تو وہ لوگ بالکل غلط ہیں۔ کیونکہ بندوق اٹھانے سے آج تک کوئی بھی مسئلہ حل نہیں ہوا پے۔


بریگیڈیئر ٹی ایس ٹھاکر نے کشمیری نوجوانوں کو دہشت گردی کی راہ ترک کرکے اپنا سارا دھیان کھیل کود اور تعلیم کی جانب مرکوز کرنے کا مشورہ دیا تاکہ آگے چل کر کشمیری نوجوان نہ صرف جموں وکشمیر بلکہ پورے ملک کی ترقی کی راہ میں کلیدی رول ادا کر سکے۔ کولگام کے چینی گام میں فورسز اور دہشت گردوں کے مابین ہوئے انکاؤنٹر کو بریگیڈیئر ٹی ایس ٹھاکر نے ایک کامیاب ترین آپریشن قرار دیا اور کہا کہ اس انکاؤنٹر میں ایک مقامی اور ایک پاکستانی دہشت گرد کو مار گرایا گیا۔ بریگیڈیئر ٹھاکر نے کہا کہ کولگام کا آپریشن سراغ رسانی پر مبنی تھا اور اس میں فورسز یا عام شہریوں کی حفاظت کو یقینی بنا کر اسے اختتام پذیر کیا گیا۔


بریگیڈیئر ٹی ایس ٹھاکر نے اننت ناگ کے کعبہ مرگ حضرت بل کی درگاہ میں حاضری دی اور وہاں پر چادر چڑھائی۔ اس موقع پر ان سے کئی عوامی وفود بھی ملاقی ہوئے اور ان کی نوٹس میں انہیں درپیش مختلف مسائل بھی آئے۔ فوجی کمانڈر نے لوگوں کو ان کے مسائل کا ازالہ ممکن بنانے کے لئے مقامی سول انتظامیہ سے بات کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ ان کے ہمراہ 19 راشٹریہ رائفلز کے کمانڈنگ افسر کرنل دھرمیندر یادو و دیگر افسران بھی تھے۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 10, 2020 11:16 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading