ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

شیرکشمیر اسپورٹس اسٹیڈیم بانڈی پورہ میں سنتھٹک ٹریک کے تعمیرکو لےکر تنازعہ ہوا مزید گہرا، ایک طلبا تنظیم نے پہنچایا مرکز تک معاملہ

بانڈی پورہ کے شیر کشمیر اسپورٹس اسٹیڈیم میں سنتھٹک ٹریک تعمیر کرنے کا معاملہ مزید گرما گیا ہے۔ کیونکہ ایک طلبا تنظیم نے یہ معاملہ مرکزی حکومت تک پہنچایا ہے، جس کے بعد اس معاملے میں کارروائی کرنے کے لئے نوٹس جاری کی گئی ہے۔

  • Share this:
شیرکشمیر اسپورٹس اسٹیڈیم بانڈی پورہ میں سنتھٹک ٹریک کے تعمیرکو لےکر تنازعہ ہوا مزید گہرا، ایک طلبا تنظیم نے پہنچایا مرکز تک معاملہ
شیرکشمیر اسپورٹس اسٹیڈیم بانڈی پورہ میں سنتھٹک ٹریک کے تعمیرکو لےکر تنازعہ ہوا مزید گہرا

بانڈی پورہ کے شیر کشمیر اسپورٹس اسٹیڈیم میں سنتھٹک ٹریک تعمیر کرنے کا معاملہ مزید گرما گیا ہے۔ کیونکہ ایک طلبا تنظیم نے یہ معاملہ مرکزی حکومت تک پہنچایا ہے، جس کے بعد اس معاملے میں کارروائی کرنے کے لئے نوٹس جاری کی گئی ہے۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسٹیڈیم میں ٹریک تعمیر کرنے کا سنگ بنیاد یکم اگست 2019 کو رکھا گیا تھا۔ تاہم بعد میں 5 اگست کے بعد پیدا شدہ صورتحال کے پیش نظر یہ کام شروع ہی نا ہوسکا۔ دوسری جانب کچھ عرصہ قبل یہ معاملہ اس وقت پھر ایک بار زندہ ہوگیا، جب محکمہ کھیل کود نے ایک بار پھر اس پروجیکٹ کے حوالے سے ٹینڈر نکالے۔


دوسری جانب ٹینڈر نکالتے ہی کھلاڑیوں اور مختلف اسپورٹس تنظیموں نے باضابطہ طور پر احتجاج کا سلسلہ شروع کیا۔ ان لوگوں کا کہنا تھا کہ ٹریک کی تعمیر کے بعد اسٹیڈیم میں فٹبال اور کرکٹ مقابلوں کے لئے ہمیشہ کے لئے بند ہوجائے گا، جبکہ ٹریک کی حمایت میں کھڑے لوگوں کا کہنا تھا کہ یہ ایک بڑا پروجیکٹ ہے اور اس سے بانڈی پورہ کو کھیل کود کے معاملے میں ایگ مقام ملے گا۔ ایک جانب جہان ٹریک کے حمایتی اور مخالفین اس معاملے کو لے کر رائے عامہ کو اپنے موافق بنانے کی کوششوں میں لگے تھے۔


یہ معاملہ اس وقت پھر ایک بار زندہ ہوگیا، جب محکمہ کھیل کود نے ایک بار پھر اس پروجیکٹ کے حوالے سے ٹینڈر نکالے۔
یہ معاملہ اس وقت پھر ایک بار زندہ ہوگیا، جب محکمہ کھیل کود نے ایک بار پھر اس پروجیکٹ کے حوالے سے ٹینڈر نکالے۔


وہیں اس بیچ جموں وکشمیر اسٹوڈنٹس ایسوسی ایشن نے اس معاملے کو مرکز میں وزارت کھیل کود کے پاس پہنچایا، جس کے بعد مرکزی حکومت یوٹی میں محکمہ کھیل کود کے سکریٹری کو اس معاملے میں نوٹس جاری کرکے جلد کارروائی کرنے کی تاکید کی۔ اس تازہ ترین پیش رفت کے بعد ٹریک کے مخالفین کی مخالف مزید بڑھ گئی ہے اور انھیں لگتا ہے کہ مرکزی حکومت کی مداخلت کے بعد اس فیصلےکو بدل کر اسٹیڈیم کے بجائے کسی دوسری جگہ پر ٹریک تعمیر کیا جائے گا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 10, 2020 01:00 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading