ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں میں کورونا لاک ڈاؤن کا نظر آرہا ہے اثر ،تمام کاروبار بند ، گاڑیوں کی آمد و رفت سڑکوں سے غائب

Jammu and Kashmir News : جموں و کشمیر میں بڑھتے کورونا کے معاملات کے چلتے گورنر انتظامیہ نے جموں و کشمیر کے سبھی اضلاع میں کورونا لاک ڈاؤن لگا دیا ہے ۔ جموں میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے تمام کاروباری دوکانیں بند ہیں ۔ سڑکوں سے ٹرانسپورٹ غائب ہے ۔

  • Share this:
جموں میں کورونا لاک ڈاؤن کا نظر آرہا ہے اثر ،تمام کاروبار بند ، گاڑیوں کی آمد و رفت سڑکوں سے غائب
جموں میں کورونا لاک ڈاؤن کا نظر آرہا ہے اثر ،تمام کاروبار بند ، گاڑیوں کی آمد و رفت سڑکوں سے غائب

سری نگر : جموں و کشمیر میں بڑھتے کورونا کے معاملات کے چلتے گورنر انتظامیہ نے جموں و کشمیر کے سبھی اضلاع میں کورونا لاک ڈاؤن لگا دیا ہے ۔ جموں میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے تمام کاروباری دوکانیں بند ہیں ۔ سڑکوں سے ٹرانسپورٹ غائب ہے ۔ لوگوں کی آمد و رفت بھی دیکھنے کو نہیں مل رہی ہے ۔ لوگوں کا پورا تعاون انتظامیہ کے لگائے ہوئے لاک ڈاؤن کو مل رہا ہے ۔


قابلِ ذکر ہے کہ کورونا کے بڑھتے معاملات کے بعد گورنر انتظامیہ نے پہلے جموں و کشمیر کے کئی اضلاع میں نائٹ کرفیو لگایا تھا ۔ 29 اپریل کی جمعرات کو انتظامیہ نے جموں میں جمعرات سے لے کر سوموار 3 مئی صبح 7 بجے تک لاک ڈاؤن رکھنے کا فیصلہ لیا تھا ۔ اب اس لاک ڈاؤن کو بڑھاتے ہوئے جمعرات کی صبح 7بجے تک کیا ہے۔ لوگوں نے اس فیصلہ کا خیرمقدم کیا ہے۔ انتظامیہ نے لوگوں سے درخواست کی ہے کہ وہ اپنے اپنے گھروں میں ہی رہیں ، اسی سے ہم کورونا کو ہرا سکتے ہیں ۔


رگھوناتھ بازار، جیول چوک، بس اڈا اور باقی بازار ان بازاروں میں آئے دن لوگ ہزاروں کی تعداد میں خریداری کرنے کے لئے آتے ہیں ۔ آج یہ سبھی بازار سنسان ہیں ۔ کیول شرما کاروباری کا کہنا ہے کہ آج حالات ایسے نہیں ہیں کہ ہم اپنا فائدہ یا نقصان دیکھیں اس وقت ہمیں کورونا سے لوگوں کی جان بچانے کی فکر ہے۔ میں نے اپنی دوکان بند کی ہے اور گھر میں بیٹھ کر سرکار کو اپنا تعاون دے رہا ہوں ۔


ویئر ہاوس کے صدر دیپک گپتا کا کہنا ہے کہ وہ پہلے سے ہی لاک ڈاؤن کے حق میں تھے اور اب جو سرکار نے لاک ڈاؤن بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے وہ اس سے خوش ہیں ۔ دیپک چاہتے ہیں کہ کورونا پوری طرح سے ختم ہو اور لاک ڈاؤن ہی واحد راستہ ہے ۔ کورونا کی جو چین بنی ہے ، اُس کو توڑنے کے لئے۔

دیپک نے مزید کہا کہ جموں کے اسپتالوں میں بھی اب آکسیجن کی کمی ہونے کی خبریں سامنے آرہی ہیں ۔ جموں میں حالات زیادہ کشیدہ نہ ہو ، اس لئے وہ لاک ڈاؤن کو پوری طرح سے اپنا تعاون دے رہے ہیں ۔

جموں کے رہنے والے روپ کرشن رینا کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے پریشانیوں کا سامنا تو کرنا پڑ رہا ہے ۔ لیکن وہ خوش ہے کہ جموں و کشمیر میں لاک ڈاؤن لگا دیا گیا اور اس کو بڑھا بھی دیا گیا۔ جس طرح سے کورونا کے معاملات سامنے آرہے تھے ، لاک ڈاؤن لگانا ضروری ہو گیا تھا ۔ میں انتظامیہ کے اس فیصلے کا خیرمقدم کرتا ہوں اور اپنے پریوار کے ساتھ گھر میں رہ کر انتظامیہ کو اپنا تعاون دوں گا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 04, 2021 12:19 AM IST