ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں کے بعد وادی کشمیر کے بھی ان چار اضلاع میں اسکول بند رکھنے حکم ، بتائی گئی یہ بڑی وجہ

وادی کشمیر میں صوبائی انتظامیہ نے احتیاط کے طور پر چار اضلاع سری نگر، بڈگام، بارہمولہ اور بانڈی پورہ میں پرائمری سطح تک کے تمام سرکاری ونجی تعلیمی ادارے اگلے احکامات تک بند رکھنے کے احکامات جاری کئے ہیں ۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 07, 2020 10:06 PM IST
  • Share this:
جموں کے بعد وادی کشمیر کے بھی ان چار اضلاع میں اسکول بند رکھنے حکم ، بتائی گئی یہ بڑی وجہ
طلبہ کا کہنا ہےکہ خدا خدا کرکے کسی طرح میں قریب ساڑھے چار سال کے بعد گریجویشن کورس سے فارغ ہوا۔ مجھے پڑھنے کا بہت شوق ہے اور دلی کی ایک بڑی یونیورسٹی میں پوسٹ گریجویشن کرنے کی آرزو ہے۔ اس یونیورسٹی نے داخلوں کے لئے انٹرنس امتحانات کے لئے درخواستیں طلب کی ہیں لیکن میں تیاری کرنے سے محروم ہوں کیونکہ کورونا وائرس کے خطرات کے باعث گھر میں ہی محصور ہوا ہوں اور اس پر طرح یہ کہ 4Gفور جی موبائل انٹرنیٹ سروس بھی مسلسل بند ہے۔ (تصویر:فائل فوٹو، نیوز18)۔

جموں وکشمیر کے سرمائی دارالحکومت جموں میں دو متاثرین میں کورونا وائرس کے قوی علامات وامکانات پائے جانے کے پیش نظر انتظامیہ نے جموں اور سانبہ اضلاع کے تمام سرکاری وغیر سرکاری پرائمری اسکولوں کو ماہ رواں کی 31 تاریخ تک بند کرنے کے احکامات جاری کئے ہیں ۔ ادھر وادی میں صوبائی انتظامیہ نے احتیاط کے طور پر چار اضلاع سری نگر، بڈگام، بارہمولہ اور بانڈی پورہ میں پرائمری سطح تک کے تمام سرکاری ونجی تعلیمی ادارے اگلے احکامات تک بند رکھنے کے احکامات جاری کئے ہیں ۔ وادی کے باقی اضلاع میں انتظامیہ نے اسکولوں میں دعائے صبح کے اجتماعات اگلے احکامات تک معطل رکھنے کے احکامات جاری کرنا شروع کردیے ہیں۔


جموں کشمیر انتظامیہ کے ترجمان روہت کنسل نے ہفتہ کی شام اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ وادی کے چار اضلاع بانڈی پورہ، بارہمولہ، سری نگر اور بڈگام میں پرائمری اسکول 31 مارچ تک بند رہیں گے۔ دریں اثنا یونین ٹریٹری انتظامیہ نے جموں کشمیر میں بائیو میٹرک حاضری نظام کو بھی 31 مارچ تک معطل کر دیا ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق یہ اقدام بھی احتیاط کے طور پر ہی اٹھایا گیا ہے۔


ناظم تعلیم جموں انورادھا گپتا نے جموں اور سانبہ اضلاع میں تمام سرکاری و غیر سرکاری پرائمری اسکولوں میں 31 مارچ تک تدریسی عمل معطل رکھنے کے احکامات صادر کئے ہیں۔  حکم نامے میں بتایا گیا کہ جموں اور سانبہ اضلاع کے تمام سرکاری و غیر سرکاری پرائمری اسکولوں میں 31 مارچ تک تدریسی عمل معطل رہے گا ۔ تاہم اساتذہ ڈیوٹی پر حسب معمول حاضر ہوں گے۔ حکم نامے میں بتایا گیا کہ اس دوران اگر پرائمری جماعتوں کے کوئی متحانات ہوں گے تو انہیں ملتوی کیا جائے گا اور ان کے لئے اسکول انتطامیہ نئے تاریخوں کا اعلان کرے گی۔


سری نگر میں ایک مقامی خبر رساں ایجنسی نے صوبائی کمشنر کشمیر بصیر احمد خان کے حوالے سے کہا ہے کہ وسطی کشمیر کے دو اضلاع سری نگر اور بڈگام اور شمالی کشمیر کے دو اضلاع بارہمولہ اور بانڈی پورہ میں پرائمری سطح تک کے تمام اسکول اگلے احکامات تک بند رہیں گے۔ انتظامیہ کے ترجمان روہت کنسل نے ہفتہ کی صبح اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ جموں میں دو مریضوں کے ٹیسٹ رپورٹس آئے ہیں جن کے مطابق ان میں کورونا وائرس ہونے کے قوی امکانات ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ دونوں متاثرین گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں میں علاحدہ وارڈس میں زیر علاج ہیں اور ان کی حالت مستحکم ہے۔

ترجمان نے بتایا کہ دونوں متاثرین بغیر اجازت کے اسپتال چھوڑ کر چلے گئے تھے اب انہیں واپس لایا گیا ہے۔ انہوں نے لوگوں سے گھبرانے کے بجائے تعاون اور احتیاط کرنے کی اپیل کی ہے۔ روہت کنسل نے جموں اور سانبہ اضلاع میں تمام پرائمری اسکول 31 مارچ تک بند کرنے کے حکامات جاری کئے اور اس کے علاوہ جموں کشمیر میں بائیو میٹرک حاضری نظام بھی ماہ رواں کی 31 معطل کردیا۔ چین میں جنم لے کر دنیا میں تیزی سے پھیلنے والے کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے انتظامیہ نے جموں کشمیر میں محکمہ صحت کو الرٹ پر رکھا ہے۔

جموں کشمیر میں کورونا وائرس کنٹرول کے نوڈل افسر ڈاکٹر شفقت خان کا کہنا ہے کہ یونین ٹریٹری میں تین سو کیسوں کے نمونے جمع کئے گئے ہیں جن میں سے 27 نمونوں کو ٹیسٹ کے لئے دلی بھیجا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ انتظامیہ جموں کشمیر میں ہی ایک لیبارٹری قائم کرے گی تاکہ نمونوں کو ٹیسٹ کے لیے دلی نہ بھیجنا پڑے۔
First published: Mar 07, 2020 10:06 PM IST