உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عدالت نے Kashmir Files فلم بنانےوالوں کو روی کھنہ کی تصویرکشی کےمناظردکھانےسے روک دیا، کیوں؟ جانیے تفصیلات

     شوہر کی تصویر کشی کرنے والے مناظر کو ہٹانے یا اس میں ترمیم کرنے کے لیے کہا گیا

    شوہر کی تصویر کشی کرنے والے مناظر کو ہٹانے یا اس میں ترمیم کرنے کے لیے کہا گیا

    یہ فلم وادی سے کشمیری پنڈتوں کے اخراج پر مبنی ہے اور اس کے ہدایت کار وویک اگنی ہوتری ہیں۔ کشمیر فائلز ریلیز ہونے سے پہلے ہی کئی طرح کے تنازعات میں گھری ہوئی ہے۔ اسے حال ہی میں 11 مارچ 2022 کو ایک عرضی کی برخاستگی کے بعد بمبئی ہائی کورٹ سے اس کی شیڈول ریلیز کے لیے ہری جھنڈی ملی ہے۔

    • Share this:
      جموں و کشمیر (Jammu and Kashmir) میں عدالت نے جمعرات کو ’دی کشمیر فائلز‘ فلم (‘The Kashmir Files’ film) کے پروموٹرز کو جمعہ کو ریلیز ہونے والی فلم میں آنجہانی آئی اے ایف سکواڈرن لیڈر روی کھنہ کی تصویر کشی کے مناظر دکھانے سے روک دیا ہے۔ یہ حکم انڈین ایئر فورس کے افسر کی اہلیہ نرمل کھنہ کی جانب سے عدالت سے رجوع کرنے کے بعد سامنے آیا جس میں ان کے شوہر کی تصویر کشی کرنے والے مناظر کو ہٹانے یا اس میں ترمیم کرنے کے لیے کہا گیا کہ یہ حقائق کے منافی ہے۔

      روی کھنہ (Ravi Khanna) ان 4 آئی اے ایف اہلکاروں میں سے ایک ہیں، جنہیں 25 جنوری 1990 کو سری نگر میں مبینہ طور پر جموں اور کشمیر لبریشن فرنٹ (جے کے ایل ایف) کے سربراہ یاسین ملک کی قیادت میں ایک گروپ نے گولی مار کر ہلاک کیا تھا۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ جج جموں، دیپک سیٹھی نے آرڈر میں کہا کہ حقائق کو دیکھتے ہوئے جیسا کہ مدعی میں بیان کیا گیا ہے، مدعا علیہان کو عارضی حکم امتناعی کے ذریعے روک دیا گیا ہے کہ وہ فلم دی کشمیر فائلز میں مدعی کے شوہر یعنی سکواڈرن لیڈر روی کنا سے متعلق حرکات کی عکاسی کرنے والے مناظر دکھائے۔

      فلم نشہ میں پونم پانڈے کے سیکس سین دیکھ کر لوگوں کے اڑے ہوش، سنی لیونی سے کر ڈالا موازنہ تو بھڑک اٹھیں پونم پانڈے


      تاہم انہوں نے کہا کہ یہ حکم اعتراضات، تبدیلیوں یا ترمیم سے مشروط ہے اگر دوسری طرف سے کوئی تبدیلی کی جائے تو اس پر مزید فیصلہ ہوسکتا ہے۔ عدالت نے مزید کہا کہ اگر مدعا علیہان کو درخواست کی پیشگی اطلاع دیے بغیر درخواست گزار کو کوئی ریلیف نہیں دیا گیا تو درخواست گزار کا مقدمہ بے اثر ہو جائے گا اور اس لیے تاخیر سے ہار جائے گی۔

      ساکشی دھونی نے بتایا، شادی کے بعد کیسے بدل جاتی ہے زندگی؟ کرکٹر سے شادی کرنے کے چیلنج پر بھی کی بات




      یہ فلم وادی سے کشمیری پنڈتوں کے اخراج پر مبنی ہے اور اس کے ہدایت کار وویک اگنی ہوتری ہیں۔ کشمیر فائلز ریلیز ہونے سے پہلے ہی کئی طرح کے تنازعات میں گھری ہوئی ہے۔ اسے حال ہی میں 11 مارچ 2022 کو ایک عرضی کی برخاستگی کے بعد بمبئی ہائی کورٹ سے اس کی شیڈول ریلیز کے لیے ہری جھنڈی ملی ہے۔ جس میں کہا گیا تھا کہ یہ مسلم کمیونٹی کے خلاف نفرت کو فروغ دینے والا پروپیگنڈہ ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: