ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: ان لاک کے دوران کووڈ-19 گائڈ لائن کی اڑائی جارہی ہیں دھجیاں، امنڈ رہی ہے عوام کی بھیڑ

جموں وکشمیر کے مختلف اضلاع میں جاری ان لاک کے دوران بازاروں میں لوگوں کی زبردست بھیڑ امنڈ آئی ہے، جس کے دوران احتیاطی تدابیر کا کوئی پاس ولحاظ نظر نہیں آرہا ہے۔ دوکاندار، راہگیر یا ٹرانسپورٹر ہوں، لوگوں نے ماسک پہننا ہی چھوڑ دیا ہے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: ان لاک کے دوران کووڈ-19 گائڈ لائن کی اڑائی جارہی ہیں دھجیاں، امنڈ رہی ہے عوام کی بھیڑ
جموں وکشمیر: ان لاک کے دوران کووڈ-19 گائڈ لائن کی اڑائی جارہی ہیں دھجیاں

کپواڑہ: جموں وکشمیر کے مختلف اضلاع میں جاری ان لاک کے دوران بازاروں میں لوگوں کی زبردست بھیڑ امنڈ آئی ہے، جس کے دوران احتیاطی تدابیر کا کوئی پاس ولحاظ نظر نہیں آرہا ہے۔ دوکاندار، راہگیر یا ٹرانسپورٹر ہوں، لوگوں نے ماسک پہننا ہی چھوڑ دیا ہے۔ اس طرح جموں وکشمیر کے سرحدی کپواڑہ ضلع میں بھی صورتحال کچھ مختلف نہیں۔ ان لاک کے دوران بازاروں میں لوگوں کی زبردست بھیڑ امنڈ آنے سے کووڈ-19 پھیلنے کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔ ایسے میں دو گزکی دوری اور ان لاک کیلئے جاری کردہ گائیڈ لائن پر کوئی عمل نہیں ہورہا ہے، جس کی وجہ سے کووڈ ضلع بھر میں پھیلنے کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔وہیں ہر گزرنے والے دن کے ساتھ کپواڑہ ضلع میں  کووڈ-19 کے مریضوں  میں اضافہ ہورہا ہے اور اس بیچ انتظامیہ خاموش تماشائی بنے ہوئی ہے۔


نیوز 18 کے نمائندہ نے مختلف بازاروں کا دورہ کرکے حالات کا جائزہ لیا۔ اس بہچ ضلع بھر دوکانداروں راہگیروں ٹرانسپورٹ سے وابسطہ لوگوں نے کووڈ-19 کی گائیڈ لائنوں کی دھجیاں اڑائی ہیں۔ کسی بھی شخص کے چہرے پر ماسک نہیں ہے۔ 90 فیصد لوگوں نے ماسک پہنا ہی چھوڑ دیا ہے اور دو گز کی دوری کا بھی کوئی پاس و لحاظ نہیں رکھا گیا ہے۔ ایسے میں ضلع بھر میں کووڈ-19 کے کیسز میں اضافہ ہونے کا اندیشہ پیدا ہوگیا اور ساتھ ہی ہرگزرتے دن کے ساتھ کووڈ-19 کے مریضوں میں اضافہ ہو رہا ہے۔ تاہم انتظامیہ اس ساری صورتحال کو دیکھ کر انجان بن رہی ہے۔


بازاروں میں انتظامیہ کی جانب سے کوئی بھی افسر اس کی نگرانی  نہیں کر رہے ہیں۔ گرچہ انتظامیہ نے کووڈ -19 کی گایڈ لائن پہلے ہی مشتہر کی ہیں، لیکن ان کو زمینی سطح پر عمل میں لانے کیلئے انتظامیہ کی جانب سے کوئی بھی افسر نظر نہیں آرہا ہے۔ جس کی وجہ سے انتظامیہ پر بھی سوال اٹھنے لگے ہیں۔ واضح رہے اس وقت کپواڑہ ضلع میں کوویڈ مریضوں کی تعداد دو ہزار سے تجاوز کرچکی ہے اور ہر روز ایک درجن کے قریب افراد اس بیماری میں ملوث ہو رے ہیں اور ابھی تک درجنوں لوگ کووڈ-19 بیماری سے فوت ہوچکے ہیں۔ ایسے میں ضرورت اس بات کی ہے کہ حالات زیادہ خراب ہوں، اس سے قبل انتظامیہ کو کووڈ-19 کی گائڈ لائن کو عمل میں لایا جا نا چاہئے تاکہ مستقبل میں مریضوں کی تعداد کم ہوسکے۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 04, 2020 11:20 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading