உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Covid19: پھر پیر پسار رہا ہے کوروناوائرس ، سرینگر کے بعد شکنجے میں بارہمولہ اور کپواڑہ

    بارہمولہ میں نومبر کے پہلے ہفتہ میں کووڈ مثبت فیصد 0.6فیصد درج کیا گیا تھا جو تیسرے ہفتے میں 1.3فیصد درج کیا گیا ۔ کپواڑہ ضلع میں بھی گراف بڑھ رہا ہے۔

    بارہمولہ میں نومبر کے پہلے ہفتہ میں کووڈ مثبت فیصد 0.6فیصد درج کیا گیا تھا جو تیسرے ہفتے میں 1.3فیصد درج کیا گیا ۔ کپواڑہ ضلع میں بھی گراف بڑھ رہا ہے۔

    بارہمولہ میں نومبر کے پہلے ہفتہ میں کووڈ مثبت فیصد 0.6فیصد درج کیا گیا تھا جو تیسرے ہفتے میں 1.3فیصد درج کیا گیا ۔ کپواڑہ ضلع میں بھی گراف بڑھ رہا ہے۔

    • Share this:
    سرینگر شہر میں انتظامیہ کی طرف سے کچھ علاقوں میں کووڈ کرفیو نافذ کے بعد اب کووڈ معاملوں میں کچھ کمی آئی ہے لیکن بارہمولہ اور کپواڑہ میں کووڈ فیصد میں تیزی سے اضافہ درج کیا جاریا ہے ۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق سرینگر میں نومبر کے پہلے ہفتے میں کووڈ فیصد 1.9 فیصد تھا جو نومبر کے تیسرے ہفتے میں کم ہوکر 1.7 فیصد پہنچ گیا ہے لیکن بارہمولہ اور کپواڑہ اضلاع میں اس میں اضافہ درج کیا گیا ہے ۔ بارہمولہ میں نومبر کے پہلے ہفتہ میں کووڈ مثبت فیصد 0.6فیصد درج کیا گیا تھا جو تیسرے ہفتے میں 1.3فیصد درج کیا گیا ۔ کپواڑہ ضلع میں بھی گراف بڑھ رہا ہے۔

    نومبر کے پہلے پفتے میں جہاں کووڈ مثبت فیصد معاملے 0.2فیصد درج کیا گیا تھا وہ اب تیسرے ہفتے میں بڑھ کر 0.6فیصد تک پہنچ گیا ہے ۔ کشمیر میں کووڈ مثبت کیس نومبر کے پہلے ہفتے میں 0.43 فیصد سے بڑھ کر نومبر کے تیسرے ہفتے میں 0.58 فیصد تک پہنچ گیا ہے ۔جی ایم سی سرینگر کے کمیونٹی میڈیسن شعبہ کے صدر پروفیسر ایس محمد سلیم کا کہنا ہے کہ وادی میں شادیوں کے سیزن اور دیگر سیاسی اور سرکاری تقریبات کی وجہ سے کووڈ معاملوں میں اضافہ ہوا ہے ۔
    ماہرین کہتے ہیں کہ کووڈ قواعد وضوابط پر عمل نہیں کیا جارہا ہے اور یہ سرینگر اور دیگر اضلاع کے بازاروں میں عیاں ہے ۔ حیرت کی بات یہ ہئےہے کہ لوگ کووڈ کے خطرات سے واقف ہیں لیکن اس کے باوجود ماسک نہیں پہنتے اور اس کے لئے بہانے بنا رہے ہیں۔

    کشمیر میں سرما میں وائرس سے پھیلنے والی بیماریوں اور خاص طور سے چھاتی کے امراض بڑھ جاتے ہیں ایسے میں ڈاکٹر سلیم کہتے ہیں کہ ان بیماریوں پر بھی ماسک پہننے سے قدغن لگائی جاسکتی ہے جموں کشمیر میں 24 اکتوبر تک کووڈ کے 1684 متحرک ہیں جن میں سے 1437 کشمیر صوبہ میں ہیں۔ مرکزی وزارت صحت نے جموں کشمیر انتظامیہ کو ٹیسٹنگ بڑھانے کے لئے کہا ہے ۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: