உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر کے ملیٹنسی متاثرہ علاقوں میں عام لوگوں کی مدد کے لئے ہاتھ بڑھا رہی ہے سی آر پی ایف

    جموں وکشمیر کے ملیٹنسی متاثرہ علاقوں میں سیکورٹی فورسیز ملیٹنسی اور پر تشدد واقعات کو روکنے کے علاوہ عام لوگوں کی مدد کے لئے بھی سامنے آرہے ہیں۔

    جموں وکشمیر کے ملیٹنسی متاثرہ علاقوں میں سیکورٹی فورسیز ملیٹنسی اور پر تشدد واقعات کو روکنے کے علاوہ عام لوگوں کی مدد کے لئے بھی سامنے آرہے ہیں۔

    جموں وکشمیر کے ملیٹنسی متاثرہ علاقوں میں سیکورٹی فورسیز ملیٹنسی اور پر تشدد واقعات کو روکنے کے علاوہ عام لوگوں کی مدد کے لئے بھی سامنے آرہے ہیں۔

    • Share this:
    پلوامہ: جموں وکشمیر کے ملیٹنسی متاثرہ علاقوں میں سیکورٹی فورسیز ملیٹنسی اور پر تشدد واقعات کو روکنے کے علاوہ عام لوگوں کی مدد کے لئے بھی سامنے آرہے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق جموں کشمیر کے پلوامہ ضلع کو جہاں ملیٹنسی کے اعتبار سے کافی حساس مانا جاتا ہے۔

    وہیں سیکورٹی فورسیز کی جانب سے پلوامہ میں ملیٹنسی کا مقابلہ کرنے کے ساتھ ساتھ عام لوگوں کی مدد کے لئے سامنے آرہی ہے، اس کے تحت سی آرپی ایف کی 182 بٹالیں کی جانب سے ضلع پلوامہ کے ناو پورہ پائن علاقے میں عام لوگوں کی سہولیات کے لئے مفت طبی کمپ کے علاوہ مستحق خواتین میں سلائی کی مشینیں تقسیم کیں۔

    یہ بھی پڑھیں۔

    جموں وکشمیر: اودھم پور میں ITBP جوان کی فائرنگ میں 3 ساتھی زخمی، بعد میں خود کو ماری گولی

    ناو پورہ پائن کے گورنمنٹ ہائی اسکول میں منعقد ہوئے کمپ اور تقسیم کاری کا افتتاح سی آر پی ایف 182 بٹالین کے کمانڈنگ آفیسر دیپک ڈونڈیال نے کیا۔ کمپ میں سی آر پی ایف کے علاوہ محکمہ صحت کے ڈاکٹروں نے مریضوں کا علاج کے ساتھ ساتھ ان میں ادویات بھی تقسیم کی گئی۔ اس موقع پر سی آر پی ایف کی 182 بٹالین کے کمانڈنگ آفیسر نے سرکاری اسکول کے بچوں کے ساتھ تبادلہ خیال کیا اور کچھ مستحق خواتین میں سلائی کی مشینیں تقسیم کی گئی۔

    اس موقع پر سی او 182 بٹالین نے میڈیا کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ سی آر پی ایف نے عام لوگوں کی مدد کے لئے مددگار ہیلپ لائن کے ذریعہ ضرورت مندوں کو امداد فراہم کیا جارہا ہے۔ جبکہ اب آئندہ آنے والے دنوں میں  ہنر مندی کی یونٹ بھی سی آر پی ایف قائم کرنے جا رہی ہے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: