ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : بجبہاڑہ میں دہشت گردانہ حملہ کے بعد سیکورٹی فورسیز نے علاقہ کا کیا محاصرہ ، تلاشی کارروائی تیز

سی آر پی ایف کے آئی جی آپریشنز راجیش کمار نے کہا کہ یہ حملہ اس وقت انجام دیا گیا جب سی آر پی ایف کی ٹیم معمول کی ڈیوٹی پر تھی اور اس دوران ہتھیاروں سے لیس ملی ٹینٹوں نے ان پر حملہ کر دیا ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : بجبہاڑہ میں دہشت گردانہ حملہ کے بعد سیکورٹی فورسیز نے علاقہ کا کیا محاصرہ ، تلاشی کارروائی تیز
جموں و کشمیر : بجبہاڑہ میں دہشت گردانہ حملہ کے بعد سیکورٹی فورسیز نے علاقہ کا کیا محاصرہ ، تلاشی کارروائی تیز

اننت ناگ : اننت ناگ کے بجبہاڑہ علاقہ میں پادشاہی باغ کے مقام پر ملی ٹینٹوں کے حملہ میں سی آر پی ایف کا ایک سپاہی شہید جبکہ 6 سالہ بچہ جاں بحق ہوگیا ۔ شہید جوان کی شناخت مغربی بنگال کے کانسٹیبل  شائے مل کمار ڈے کے طور پر ہوئی ہے جبکہ بچہ کی شناخت موچھو یاری پورہ کے نیہان یاسین کے طور پر ہوئی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق اسکوٹی پر سوار دو ملی ٹینٹوں نے پادشاہی باغ کے نزدیک سی آر پی ایف کی گشتی پارٹی پر اندھا دھند فائرنگ کی ، جس میں سی آر پی اہلکار شائے مل کمار ڈے شدید طور پر زخمی ہو گئے ۔ جبکہ اس دوران نیہان کو بھی گولی لگی ۔ دونوں کو اگر چہ سب ڈسٹرکٹ اسپتال بجبہاڑہ پہنچایا گیا ۔ تاہم وہاں پر ڈاکٹروں نے دونوں کو مردہ قرار دیا۔


واقعہ کے فوراً بعد فوج ، جموں کشمیر پولیس اور سی آر پی ایف نے پورے علاقہ کا محاصرہ کرلیا ہے اور مفرور ملی ٹینٹوں کی تلاش شروع کر دی ہے ۔ سیکورٹی فورسیز کے اعلیٰ افسران نے بھی جائے واردات ک جائزہ لیا اور متعلقہ سیکورٹی اہلکاروں کے ساتھ تبادلہ خیال کر کے پورے حالات کا جائزہ لیا۔


اس موقع پر سی آر پی ایف کے آئی جی آپریشنز راجیش کمار نے کہا کہ یہ حملہ اس وقت انجام دیا گیا جب سی آر پی ایف کی پارٹی معمول کی ڈیوٹی پر تھی اور اس دوران ہتھیاروں سے لیس ملی ٹینٹوں نے ان پر حملہ کر دیا ۔ آئی جی نے بتایا کہ حملہ کے وقت علاقہ میں عام لوگوں کی کافی زیادہ نقل و حرکت تھی ، جس کا فائدہ اٹھا کر حملہ آور وہاں سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔


راجیش کمار نے کہا کہ سی آر پی ایف نے جوابی کارروائی کرتے وقت عام لوگوں کی جانوں کا تحفظ یقینی بنایا ۔ لیکن مفرور ملی ٹینٹوں کی تلاش بڑے پیمانے پر شروع کر دی گئی ہے اور جلد ہی اس سلسلہ میں سراغ حاصل کیا جائے گا ۔

دریں اثنا نیہان کی لاش اس کے آبائی علاقہ یاری پورہ کولگام پہنچائی گئی ، جہاں پر صف ماتم بچھ گئی ۔ جموں کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ سمیت کئی سیاسی لیڈران نے بجبہاڑہ حملہ کی م‍ذمت کی ہے ۔ عمر عبداللہ نے ٹویٹ کرکے اس حملہ کو بزدلانہ قرار دیا ہے ۔ عمر عبداللہ نے کمسن نیہان کی ہلاکت کو بھی تاریخ کا ایک سیاہ باب قرار دیا ہے ۔
First published: Jun 26, 2020 04:33 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading