ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کپواڑہ:گھرمیں زورداردھماکہ،بیٹی کی موت اورماں زخمی،مقامی لوگوں شفاف چانچ کی کررہے ہیں مانگ

رشتےداروں اور دیگر لوگوں کا کہنا کہ ابھی تک معاملے کو لیکر یہ پتا نہیں چل پارہا ہے کہ یہ کوئی بادوری شل جنگل سے انہوں نے خود لایا تھا ۔یا کسی شر پسند عناصر نے ان کے مکان کی طرف پھینک دیا ۔لوگوں کا کہنا کہ واقع کی نسبت شفاف چانچ ہونی چاہیے ۔تاکہ سچائی سب کے سامنے آسکے ۔

  • Share this:
کپواڑہ:گھرمیں زورداردھماکہ،بیٹی کی موت اورماں زخمی،مقامی لوگوں شفاف چانچ کی کررہے ہیں مانگ
علاج کے دوران بیٹی کی موت ہوگئی ۔

کپواڑہ ضلع کے شہرکوت ویلگام ہندواڑہ میں گزشتہ شام اس وقت کہرام مچ گیا ۔جب ایک رہائشی مکان ایک زور دار دھماکہ ہوا دھماکہ اس قدر شدید تھا کہ پورے علاقے میں دور دور تک اس کہ آواز سنی گئی ۔دھماکہ کی آواز سن کر تمام لوگ نے رہائش مکان کی طرف رک کیا ۔اور وہاں پر ماں بیٹی کو خون میں لت پت پایا گیا ۔اور پورے علاقے خوف حراس کا ماحول پیدا ہوگیا ۔مقامی لوگوں نے دونوں ماں بیٹی کو خون میں لت پت اسپتال پہچایا ۔لیکن اسپتال پہنچتے ہوئے 25 سالہ گلنارہ بانو کی موت واقع ہوگئی ۔ جبکہ خاتون سارہ بیگم کو سرینگر منتقل کیا گیا ۔جہاں وہ موت اور زندگی کی جنگ لڑ رہی ہے ۔ پورے علاقے میں اس واقع کو لیکر غم کی لہر دیکھی گئی اور اس واقع سے لوگ صدمے میں ہیں ۔


ادھر پولیس ذرائع کے مطابق واقع اس وقت پیش آیا ۔جب ماں بیٹی نزدیکی جنگلات سے کچھ جنگلی سبزی حاصل کرنے کے بعد گھر پہنچی۔اور پولیس ذرائع کے مطابق انہوں نے جنگل سے کوئی بوسیدہ شل بھی لایا تھا۔اور اسی دوران ایک زور دار دھماکہ ہوا جسمیں دونوں ماہ بیٹی شدید زخمی ہوگئی ۔دونوں کو زخمی حالت میں ہندوارہ منتقل کیا گیا ۔جہاں پر علاج کے دوران بیٹی کی موت ہوگئی ۔تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ انہوں نے واقعے کے بعد کیس درج کر کے ابتدائی تحقیقات شروع کی ۔


دھماکہ کی آواز سن کر تمام لوگ نے رہائش مکان کی طرف رخ کیا ۔اور وہاں پر ماں بیٹی کو خون میں لت پت پایا گیا
دھماکہ کی آواز سن کر تمام لوگ نے رہائش مکان کی طرف رخ کیا ۔اور وہاں پر ماں بیٹی کو خون میں لت پت پایا گیا


تاہم رشتےداروں اور دیگر لوگوں کا کہنا کہ ابھی تک معاملے کو لیکر یہ پتا نہیں چل پارہا ہے کہ یہ کوئی بادوری شل جنگل سے انہوں نے خود لایا تھا ۔یا کسی شر پسند عناصر نے ان کے مکان کی طرف پھینک دیا ۔لوگوں کا کہنا کہ واقع کی نسبت شفاف چانچ ہونی چاہیے ۔تاکہ سچائی سب کے سامنے آسکے ۔واضح رہے اسی طرح کا واقع اس سے پہلے بھی ہندواڑہ کے ایک دورداز جنگلاتی علاقے میں پیش آیا تھا ۔جہاں کئی بچے زخمی ہوئے تھے ۔ عام لوگوں کا کہنا ہے ۔کہ ملیٹنٹوں اور فوج کے درمیان انکاونٹر کے دوران کچھ بارودی مواد پھٹنے سے رہ جاتے ہیں ۔جسکی وجہ سے اسطرح کے حادثے پیش آتے ہیں ۔ ضرورت اسے بات کہ ہے ان علاقوں میں لوگوں کو احتیاط برتنے ہوگی تاکہ اس طرح کے واقعات دوبارہ رونما نہ ہو
Published by: Mirzaghani Baig
First published: May 29, 2021 12:02 AM IST