உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

     کارگل وجے دیوس پر وزیر دفاع نے پاکستان کو وارننگ دی- کوئی بھی جنگ ہوا تو جیت ہندوستان کی ہوگی

    Defence Minister Rajnath Singh: جموں میں وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا کہ اگر کسی غیر ملکی طاقت نے ہم پر بری نظر ڈالی اور جنگ ہوا تو ہم فاتح ہوں گے‘۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان نے 1947 کے بعد سے سبھی جنگوں میں پاکستان کو ہرایا اور سخت شکست کے بعد اس نے پراکسی جنگوں کو انجام دیا۔ 

    Defence Minister Rajnath Singh: جموں میں وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا کہ اگر کسی غیر ملکی طاقت نے ہم پر بری نظر ڈالی اور جنگ ہوا تو ہم فاتح ہوں گے‘۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان نے 1947 کے بعد سے سبھی جنگوں میں پاکستان کو ہرایا اور سخت شکست کے بعد اس نے پراکسی جنگوں کو انجام دیا۔ 

    Defence Minister Rajnath Singh: جموں میں وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا کہ اگر کسی غیر ملکی طاقت نے ہم پر بری نظر ڈالی اور جنگ ہوا تو ہم فاتح ہوں گے‘۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان نے 1947 کے بعد سے سبھی جنگوں میں پاکستان کو ہرایا اور سخت شکست کے بعد اس نے پراکسی جنگوں کو انجام دیا۔ 

    • Share this:
      جموں: وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے اتوار کو کہا کہ ’ہم پر بری نظر ڈالنے والا کوئی بھی ہو‘ ہندوستان منہ توڑ جواب دینے کے لئے تیار ہے۔ انہوں نے اعتماد ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ اگر کوئی جنگ ہوا تو ہندوستان فاتح بن کر ابھرے گا۔ پاکستان کے قبضے والے جموں وکشمیر (پاک مقبوضہ کشمیر) کے حصے کو پھر سے حاصل کرنے کی وکالت کرتے ہوئے راجناتھ سنگھ نے کہا کہ یہ ہندوستان کا حصہ ہے اور اس ملک کا حصہ بنا رہے گا۔

      راجناتھ سنگھ نے یہاں ’کارگل وجے دیوس‘ کے موقع پر منعقدہ ایک پروگرام کے دوران کہا، ’میں آپ کو اعتماد کے ساتھ بتانا چاہتا ہون کہ اگر کسی غیر ملکی طاقت نے ہم پر بری نظر ڈالی اور جنگ ہوا تو ہم فاتح ہوں گے‘۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان نے 1947 کے بعد سے سبھی جنگوں میں پاکستان کو ہرایا اور سخت شکست کے بعد اس نے پراکسی جنگوں کو انجام دیا۔

      راجناتھ سنگھ نے قوم کو اطمینان دلاتے ہوئے کہا کہ مسلح افواج مستقبل کے سبھی چیلنجز کا سامنا کرنے کے لئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین کے ساتھ جنگ کے دوران جموں وکشمیر کے لوگ اپنی فوج کے ساتھ کھڑے رہے۔ انہوں نے کہا، ’کوئی ہندو ہو یا مسلم، سبھی اپنی فوج کے ساتھ کھڑے ہیں اور اسے ہم بھول نہیں سکتے‘۔

      وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے مزید کہا، ‘ملک کی خدمت میں اپنی جانیں قربان کرنے والے شہیدوں کو ہم آج یاد کر رہے ہیں۔ ہماری فوج نے ہمیشہ ملک کے لئے قربانی دی ہے۔ 1999 کی جنگ میں ہمارے کئی بہادر جوانوں نے اپنی جانوں کی قربانی دی، میں انہیں سلام پیش کرتا ہوں‘۔ انہوں نے اپنے خطاب میں مزید کہا، ’1962 میں چین نے لداخ میں ہمارے علاقے پر قبضہ کرلیا۔ تب پنڈت نہرو ہمارے ملک کے وزیر اعظم تھے۔ میں ان کی منشا پر سوال نہیں اٹھاوں گا۔ ارادے اچھے ہوسکتے ہیں، لیکن یہ پالیسیوں پر نافذ نہیں ہوتا ہے۔ میں بھی ایک خصوصی سیاسی جماعت سے آتا ہوں، لیکن میں ہندوستان کے کسی بھی وزیر اعظم کی تنقید نہیں کرنا چاہتا۔ کسی کی پالیسیوں سے متعلق ہم تنقید کرسکتے ہیں، لیکن کسی کی نیت سے متعلق سوال نہیں اٹھ سکتے۔ حالانکہ آج کا ہندوستان دنیا کے سب سے طاقتور ممالک میں سے ایک ہے‘۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: