உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا- چین پر نہرو کی تنقید نہیں کروں گا، کسی کی حکمت عملی خراب ہو سکتی ہے نیت نہیں

    کارگل وجے دیوس کی یاد میں منعقدہ پروگرام میں شرکت کے لئے جموں و کشمیر میں ہندوستانی فوج کے جوانوں کے درمیان پہنچے ملک کے وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا، ‘ملک کی خدمت میں اپنی جان نچھاور کرنے والے شہیدوں کو ہم آج یاد کر رہے ہیں۔ ہماری فوج نے ہمیشہ ملک کے لئے قربانیاں دی ہیں۔

    کارگل وجے دیوس کی یاد میں منعقدہ پروگرام میں شرکت کے لئے جموں و کشمیر میں ہندوستانی فوج کے جوانوں کے درمیان پہنچے ملک کے وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا، ‘ملک کی خدمت میں اپنی جان نچھاور کرنے والے شہیدوں کو ہم آج یاد کر رہے ہیں۔ ہماری فوج نے ہمیشہ ملک کے لئے قربانیاں دی ہیں۔

    کارگل وجے دیوس کی یاد میں منعقدہ پروگرام میں شرکت کے لئے جموں و کشمیر میں ہندوستانی فوج کے جوانوں کے درمیان پہنچے ملک کے وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا، ‘ملک کی خدمت میں اپنی جان نچھاور کرنے والے شہیدوں کو ہم آج یاد کر رہے ہیں۔ ہماری فوج نے ہمیشہ ملک کے لئے قربانیاں دی ہیں۔

    • Share this:
      سری نگر: کارگل وجے دیوس کی یاد میں منعقدہ پروگرام میں شرکت کے لئے جموں و کشمیر میں ہندوستانی فوج کے جوانوں کے درمیان موجود رہے۔ کارگل وار میموریل میں 24 سے 26 جولائی تک مختلف پروگراموں کا انعقاد ہوگا۔ انہوں نے اس موقع پر اپنے خطاب میں کہا، ‘ملک کی خدمت میں اپنی جانیں قربان کرنے والے شہیدوں کو ہم آج یاد کر رہے ہیں۔ ہماری فوج نے ہمیشہ ملک کے لئے قربانی دی ہے۔ 1999 کی جنگ میں ہمارے کئی بہادر جوانوں نے اپنی جانوں کی قربانی دی، میں انہیں سلام پیش کرتا ہوں‘۔

      وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے اپنے خطاب میں مزید کہا، ’1962 میں چین نے لداخ میں ہمارے علاقے پر قبضہ کرلیا۔ تب پنڈت نہرو ہمارے ملک کے وزیر اعظم تھے۔ میں ان کی منشا پر سوال نہیں اٹھاوں گا۔ ارادے اچھے ہوسکتے ہیں، لیکن یہ پالیسیوں پر نافذ نہیں ہوتا ہے۔ میں بھی ایک خصوصی سیاسی جماعت سے آتا ہوں، لیکن میں ہندوستان کے کسی بھی وزیر اعظم کی تنقید نہیں کرنا چاہتا۔ کسی کی پالیسیوں سے متعلق ہم تنقید کرسکتے ہیں، لیکن کسی کی نیت سے متعلق سوال نہیں اٹھ سکتے۔ حالانکہ آج کا ہندوستان دنیا کے سب سے طاقتور ممالک میں سے ایک ہے‘۔



       

      راجناتھ سنگھ نے کہا کہ 1962 میں ہم لوگوں کو جو خمیازہ اٹھانا پڑا، اس سے ملک اچھی طرح واقف ہے۔ وزیر دفاع نے کہا کہ اس نقصان کی بھرپائی آج تک نہیں ہو پائی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک آج جس رفتار سے آگے بڑھ رہا ہے، میں ڈنکے کی چوٹ پر کہنا چاہتا ہوں کہ اب ہندوستان کمزور نہیں رہا، بلکہ دنیا کا طاقتور ملک بنتا جا رہا ہے۔ وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے اس موقع پر جموں میں ڈیوٹی کے دوران جان گنوانے والے سیکورٹی اہلکاروں کی فیملی کے اراکین سے ملاقات بھی کی۔

      وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا کہ کارگل جنگ میں فتح، ہندوستانی فوج کی بہادری اور یہ طاقت کا ایک قابل فخر باب ہے۔ ملک کی اتحاد، سالمیت اور خودمختاری کو بنائے رکھنے میں ہندوستانی فوج کا بہت بڑا تعاون ہے۔ راجناتھ سنگھ نے اپنی تقریر میں بریگیڈیئر عثمان کا بھی ذکر کیا ہے۔ انہوں نے جموں وکشمیر کے موجودہ حالات کو بنائے رکھنے میں فوج کے تعاون کی تعریف کی۔ واضح رہے کہ کارگل وجے دیوس ہر سال 26 جولائی کو منایا جاتا ہے، کیونکہ سال 1999 میں اسی دن ہندوستانی فوج نے کارگل جنگ میں پاکستان کے خلاف جیت حاصل کی تھی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: