ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

فلائٹس منسوخ ہونے کے باوجود سیاح خوشی۔خوشی گلمرگ لوٹے واپس، لیا گلمرگ کی خوبصورتی کا مزہ

دراصل یہاں سیاحوں کو سرینگر بین الاقوامی ائیر پورٹ سے خراب موسم کی وجہ سےفلائٹس منسوخ ہوگئےجس کے بعدیہ سیاح خوشی خوشی گلمرگ واپس لوٹے۔

  • Share this:
فلائٹس منسوخ ہونے  کے باوجود  سیاح خوشی۔خوشی گلمرگ لوٹے واپس، لیا گلمرگ کی خوبصورتی کا مزہ
دراصل یہاں سیاحوں کو سرینگر بین الاقوامی ائیر پورٹ سے خراب موسم کی وجہ سےفلائٹس منسوخ ہوگئےجس کے بعدیہ سیاح خوشی خوشی گلمرگ واپس لوٹے۔

جموں۔کشمیر: گلمرگ، کشمیر شدید برفباری کےدوران مختلف سیاحتی مقامات پرجہاں سیاح درماندہ ہوگئےساتھ ہی برفباری کے دوران فلائٹس ملتوی ہونے کی وجہ سے پریشان بھی ہوگئے۔ یہ فطری طور ظاہر ہوتا ہےکہ جب کسی کو اپنے وطن لوٹنا ہوتا ہےتو وہ خوشی سے پھولے نہیں سماتے اس دوران جب ان کی فلائٹ یاگاڑی کسی وجوہات کی وجہ سےمنسوخ ہوتی ہے تو مایوسی کے سوا اس شخص کے پاس کچھ نہیں نظرنہیں آتا۔ تاہم سیاحتی مقام گلمرگ میں ملک کی مختلف ریاستوں سے آئے ہوئےسیاحوں کےچہروں پرکچھ اس کےبرعکس نظرآیا۔


دراصل یہاں سیاحوں کو سرینگر بین الاقوامی ائیر پورٹ سے خراب موسم کی وجہ سےفلائٹس منسوخ ہوگئےجس کے بعدیہ سیاح خوشی خوشی گلمرگ واپس لوٹے۔ انہوں نےگلمرگ میں ان دنوں کو بغیر مایوس ہونے کےب جائےبرف سے ڈھکی چادر پر خوب اسکنگ کی۔ نیوز 18 اردو سےبات کرتے ہوئے ان سیاحوں نےکہا کہ وہ فلائٹ منسوخ ہونے سے مایوس نہیں ہوئے بلکہ وہ خوشی سے گلمرگ واپس لوٹے۔ جہاں انہوں نے مزیدگلمرگ کی خوبصورتی کالطف اٹھایا۔


ممبئی سےایک سیاح جوڑے نے نیوزایٹین اردوکوبتایاکہ یہ سب یہاں یعنی کشمیری لوگوں کی پیاراور محبت کی وجہ سےممکن ہوتاہےجب یہ لوگ بہترین مہمان نوازی اور خلوص سےپیش آتےہیں تویہاں تمام غم بھول جاتےہیں۔ دہلی سےایک اور خاتون سیاح نےنیوز ایٹین کوبتایاکہ یہاں کےلوگوں کےپیارمحبت سےایسا لگ رہاہےکہ وہ اپنےگھرمیں ہیں انہیں یہاں اپنےگھرجیساماحول مل رہاہے۔ ایک سیاح نےبتایاکہ یہاں کشمیرمیں کسی کوبھی کسی راستےسےمتعلق پوچھتےہیں تووہ پرخلوص اندازسے وہ راستہ دکھاتےہیں۔ کسی طرح کی کوئی کوتاہی نہیں بھرتےہیں۔اس طرح کشمیرکی مہمان نوازی کی ایک بارپھرتعریفیں ہوئے۔ گلمرگ میں مقامی لوگ ان سیاحوں کابھی خاص خیال رکھتےہیں۔لوگ بھی سیاحوں کی آمد کے سلسلے میں کافی خوش ہوتے ہی۔

Published by: Sana Naeem
First published: Jan 15, 2021 02:57 PM IST