உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیر کی تاریخی جامع مسجد میں پانچ ماہ بعد نماز جمعہ ادا کی گئی، نمازیوں نے اپنائی احتیاطی تدابیر

    کشمیر میں پانچ ماہ بعد نماز جمعہ ادا کی گئی، نمازیوں نے اپنائی تھیں احتیاطی تدابیر

    کشمیر میں پانچ ماہ بعد نماز جمعہ ادا کی گئی، نمازیوں نے اپنائی تھیں احتیاطی تدابیر

    وادی کشمیر کی تمام بڑی مساجد، خانقاہوں اور امام بارگاہوں میں پانچ ماہ بعد جمعہ کو نماز جمعہ کی ادائیگی سے محراب ومنبر گونج اٹھے۔ قابل ذکر ہے کہ کورونا وبا کے پیش نظر وادی میں قریب پانچ ماہ تک عبادت گاہیں بند رہیں، جنہیں 16 اگست کو کھول دیا گیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      سری نگر: وادی کشمیر کی تمام بڑی مساجد، خانقاہوں اور امام بارگاہوں میں پانچ ماہ بعد جمعہ کو نماز جمعہ کی ادائیگی سے محراب ومنبر گونج اٹھے۔ قابل ذکر ہے کہ کورونا وبا کے پیش نظر وادی میں قریب پانچ ماہ تک عبادت گاہیں بند رہیں، جنہیں 16 اگست کو کھول دیا گیا۔ پائین شہر کے نوہٹہ میں واقع قدیم ترین عبادت گاہ تاریخی جامع مسجد، جس میں غالباً وادی کا سب سے بڑا جمعہ اجتماع منعقد ہوتا ہے، میں بھی نماز جمعہ قریب پانچ ماہ بعد ادا کی گئی۔
      جامع مسجد کے میناروں سے اذان کی صدا گونجنے کے ساتھ ہی نمازی جامع مسجد میں داخل ہونے لگے۔ یو این آئی اردو کے ایک نامہ نگار نے جامع مسجد کا دورہ کرنے کے بعد بتایا کہ جامع مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے لئے نمازیوں کا جم غفیر جمع تھا۔ انہوں نے کہا کہ نمازیوں نے گھروں سے ہی حسب ہدایات مصلے ساتھ لائے تھے اور ماسک بھی لگا رکھی تھیں۔ انہوں نے بتایا کہ رضاکار ان نمازیوں کو مفت ماسکس فراہم کر رہے تھے، جن کے پاس ماسکس نہیں تھیں۔ انہوں نے کہا کہ نمازیوں نے دوران نماز بھی سماجی فاصلے (سوشل ڈیسٹنسنگ) کا خاص خیال رکھا ہوا تھا۔




      نمازیوں نے بتایا کہ درگاہ حضرت بل میں بھی نماز جمعہ کی ادا کی گئی، جس میں کافی تعداد میں نمازیوں نے شرکت کی اور وبا سے نجات اور متاثرین کی صحتیابی کے لئے دعائیں کی گئیں۔
      نمازیوں نے بتایا کہ درگاہ حضرت بل میں بھی نماز جمعہ کی ادا کی گئی، جس میں کافی تعداد میں نمازیوں نے شرکت کی اور وبا سے نجات اور متاثرین کی صحتیابی کے لئے دعائیں کی گئیں۔

      نمازیوں نے بتایا کہ درگاہ حضرت بل میں بھی نماز جمعہ کی ادا کی گئی، جس میں کافی تعداد میں نمازیوں نے شرکت کی اور وبا سے نجات اور متاثرین کی صحتیابی کے لئے دعائیں کی گئیں۔ وادی کے دیگر علاقوں میں بھی مساجد، خانقاہوں اور امام بارگاہوں میں نماز جمعہ ادا ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ اطلاعات کے مطابق تمام علاقوں میں نمازیوں نے گائیڈ لائنز پر مکمل عمل کیا ہوا تھا اور خطبا نے بھی نمازیوں سے وبا کی روک تھام کے لئے احتیاطی تدابیر عمل کرنے کی تاکید کی۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: