உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے کہا- کشمیری نوجوانوں کی طالبان میں شمولیت کی خبریں فرضی اور بے بنیاد

    کشمیری نوجوانوں کی طالبان میں شمولیت کی خبریں فرضی اور بے بنیاد، ڈی جی پی دلباغ سنگھ کا دعویٰ

    کشمیری نوجوانوں کی طالبان میں شمولیت کی خبریں فرضی اور بے بنیاد، ڈی جی پی دلباغ سنگھ کا دعویٰ

    افغانستان میں طالبان کے قبضے کے بعد وہاں کے حالات کا کشمیر کی صورتحال پر کس طرح کا اثر پڑے گا؟ ڈی جی پی نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ حالات پر قریبی نگاہ رکھی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی طرح کی فکر کرنے کی کوئی ضرورت نہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
    جموں و کشمیر: جموں و کشمیر کے ڈائریکٹر جنرل پولیس دلباغ سنگھ کا کہنا ہے کہ کشمیر کے نوجوان اپنے مستقبل کو تابناک بنانے کی کوششوں میں مصروف ہیں، لہٰذا وہ قوم دشمن عناصر کے بہکاوے میں نہیں آرہے ہیں۔ وہ آج بارہمولہ میں سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لینے کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔

    ڈائیریکٹر جنرل آف پولیس نے کہا کہ علحیدگی پسند لیڈر سید علی شاہ گیلانی کی وفات کے بعد وادی کے حالات پُرامن ہیں اور گزشتہ دو روز کے دوران کشمیر میں تشدد کا ایک بھی واقع پیش نہیں آیا۔ انہوں نے کہا کہ عام لوگوں نے پولیس اور انتظامیہ کو اپنا بھر پور تعاون پیش کیا تاکہ وادی کی امن قانون کی صورتحال میں کسی طرح کا بگاڑ پیدا نہ ہو۔ دلباغ سنگھ نے کہا کہ حفاظتی عملہ صبر و تحمل سے اپنا کام انجام دے رہا ہے تاکہ شر پسند عناصر کی امن دشمن کوششوں کو ناکام بنایا جاسکے۔

    ڈی جی پی نے کہا کہ انہوں نےکل وسطی کشمیر کے چند علاقوں کا دورہ کیا اور آج شمالی کشمیرکےحالات کا جائزہ لینے کے لئے وہ بارہمولہ آئے۔ انہوں نے کہا کہ وہ عنقریب ہی وادی کشمیر کے دیگر علاقوں کا بھی دورہ کریں گے۔ ڈی جی پی نے کہا کہ وادی کے عوام مبارک بادی کے مستحق ہیں کیونکہ انہوں نے امن قائم رکھنے میں اہم رول نبھایا اور ایک مرتبہ پھر یہ ثابت کردیا کہ  وہ امن کے شیدائی ہیں۔ موبائیل انٹرنیٹ سروس کی دوبارہ بحالی کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے دلباغ سنگھ نے کہا کہ اس معاملے پر جلد ہی غور وخوض کیا جائے گا اور خدمات کی بحالی سے متعلق لیا جائے گا۔

    ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے کہا کہ پاکستان اور کشمیر میں موجود پاکستان نواز ایجنٹ ایسی خبریں پھیلا کر لوگوں کو گمراہ کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔ جبکہ یہاں کی صورتحال پُر امن ہے۔
    ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے کہا کہ پاکستان اور کشمیر میں موجود پاکستان نواز ایجنٹ ایسی خبریں پھیلا کر لوگوں کو گمراہ کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔ جبکہ یہاں کی صورتحال پُر امن ہے۔


    افغانستان میں طالبان کے قبضے کے بعد وہاں کے حالات کا کشمیر کی صورتحال پر کس طرح کا اثر پڑے گا؟ ڈی جی پی نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ حالات پر قریبی نگاہ رکھی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی طرح کی فکر کرنے کی کوئی ضرورت نہیں۔ سوشل میڈیا کی رپورٹس کہ گزشتہ چند دنوں میں کشمیر کے کچھ نوجوانوں نے طالبان میں شمولیت اختیار کی ہے۔ دلباغ سنگھ نے کہا کہ اس طرح کی خبریں بالکل بے بنیاد ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی جھوٹی خبریں پھیلانا ملک دشمن عناصر کی جانب سے کئے جارہے پروپگینڈے کا حصہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور کشمیر میں موجود پاکستان  نواز ایجنٹ ایسی جھوٹی خبریں پھیلا کر لوگوں کو گمراہ کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔

    ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے کہا کہ کشمیر کے نوجوان اپنا مستقبل سنوارنا چاہتے ہیں اور وہ جموں و کشمیر اور ملک کی ترقی میں مثبت کردار ادا کرنے کے متمنی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کے نوجوان اپنے مستقبل کو روشن بنانے کے ساتھ ساتھ کھیل سرگرمیوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نوجوان نسلف کرکٹ، والی بال، فٹبال، رگبی اور دیگر کھیل سرگرمیوں میں حصہ لے کر اپنا مستقبل روشن کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں اور کوئی بھی نوجوان اب ملٹینسی کی راہ اختیار کرنا نہیں چاہتا۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: