ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر میں 8 ماہ میں 26 دہشت گرد کمانڈروں کو مار گرایا گیا : ڈی جی پی

ڈائریکٹر جنرل پولیس جموں و کشمیر دلباغ سنگھ نے کہا کہ جموں و کشمیر میں دہشت گردی کا خاتمہ ہر حال میں کیا جائے گا ۔ تاہم ان کے اہل خانہ کو کسی بھی قسم کی تکلیف نہیں پہنچائی جائے گی ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر میں 8 ماہ میں 26 دہشت گرد کمانڈروں کو مار گرایا گیا : ڈی جی پی
جموں و کشمیر میں 8 ماہ میں 26 دہشت گرد کمانڈروں کو مار گرایا گیا : ڈی جی پی

جموں و کشمیر کے کپوارہ ضلع کے کرال گنڈ ہندوارہ میں ٹاپ لشکر کمانڈر نصیرالدین اور اس کے ساتھی کی ہلاکت کو بڑی کامیابی سے تعبیر کرتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل پولیس جموں و کشمیر دلباغ سنگھ نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ جموں و کشمیر میں دہشت گردی کا خاتمہ ہر حال میں کیا جائے گا ۔ تاہم ان کے اہل خانہ کو کسی بھی قسم کی تکلیف نہیں پہنچائی جائے گی ۔ ہنداورہ میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل پولیس کا کہنا تھا کہ دہشت گردی مخالف آپریشنوں میں اعلی دہشت گرد کمانڈر مارے  گئے ہیں ، جن سے دہشت گردی کا کافی دھچکا پہنچا ہے۔


سرحد پار سے دراندازی کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ ابھی پوری طرح سے سرحدیں سیل نہیں ہو سکتیں ، لہذا دراندازی کا خطرہ برقرار ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ امن و امان کی بحالی پہلی ترجیح ہے اور عوام بھی پولیس کے ساتھ بھر پور تعاون کر رہے ہیں ۔ مرکز کی جانب سے سو فورسز کمپنیوں کی واپسی کا ذکر کرتے ہوئے ڈی جی پی نے کہا کہ یہ معمول کا عمل ہے اور حالات کے مطابق ہی فورسیز کی واپسی اور تعیناتی ہوتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان لگاتار کشمیر میں امن و امان خراب کرنے کی تاک میں ہے ، اس لئے پاکستان اس پار دہشت گرد بھیج کر تخریبی کارروائی انجام دینے کی کوشش کررہا ہے ۔ لیکن پاکستان کی ہر کوشش کو ناکام بنا دیا جائے گا ۔


دلباغ سنگھ کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں کو مارنے سے دہشت گردی ختم نہیں ہوگی ۔ لہذا نوجوانوں کو دہشت گرد بننے سے روکنا ہے ۔ تاکہ دہشت گردی اپنے آپ ختم جائے ۔ ساتھ انہوں نے کہا کہ وادی میں کسی بھی سیکورٹی اہلکار کو وردی کا ناجائز فائدہ اٹھانے کی اجازت نہیں ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں عوام کی سلامتی کیلئے کام کرنا ہوگا اور دہشت گردی کے خاتمہ کیلے عوام کا ساتھ ضروری ہے ۔کشمیر دلباغ سنگھ نے مزید کہا کہ جموں و کشمیر میں آٹھ ماہ میں 26 دہشت گرد کمانڈروں کو ہلاک کیا گیا ، جس کی وجہ سے دہشت گردوں کی کمر ٹوٹ گئی ہے اور دہشت گردی کو کافی دھچکہ لگا ہے ، اس لئے پاکستان بھی 26 دہشت گردوں کی ہلاکت پر بوکھلا چکا ہے ۔


مارے گئے ملیٹنٹوں کے قبضے سے باری مقداد میں اسحلہ بارود ضبط کیا گیا ۔ جبکہ ملیٹنٹوں کی جانب سے سی آر پی اہلکار سے چھینی گئی رائفل بھی برآمد کرنے کا پولیس نے دعوی کیا ۔
مارے گئے ملیٹنٹوں کے قبضے سے باری مقداد میں اسحلہ بارود ضبط کیا گیا ۔ جبکہ ملیٹنٹوں کی جانب سے سی آر پی اہلکار سے چھینی گئی رائفل بھی برآمد کرنے کا پولیس نے دعوی کیا ۔


انہوں نے کہا کہ امن و امان خراب کرنے کی کسی کوبھی اجازت نہیں دی جائے گی اور امن و امان خراب کرنے والوں کو بخشا نہیں جائے گا ۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ ای جی پی کشمیر وجے کمار ، ڈی آئی جی شمالی کشمیر سلمان چودھری ، ایس پی ہندوارہ ڈاکٹر جی وی سندیپ اور فوج کے سیوین سکٹر کمانڈر ایم ایس راٹھور بھی موجود تھے ۔

مارے گئے ملیٹنٹوں کے قبضے سے باری مقداد میں اسحلہ بارود ضبط کیا گیا ۔ جبکہ ملیٹنٹوں کی جانب سے سی آر پی اہلکار سے چھینی گئی رائفل بھی برآمد کرنے کا پولیس نے دعوی کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ابھی تک 16 نوجوانوں کو دہشت گردی کی صف سے پرامن طور واپس بلاکر ان کو اپنے گھر والوں کے حوالے کیا گیا ہے ، جو پولیس کیلئے ایک بڑی کامیابی ہے اور دہشت گردوں کیلئے ایک بڑا دھچکہ ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Aug 20, 2020 10:02 PM IST