ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: لشکر کےدو دہشت گردوں کی ہلاکت فورسز کے لئے بڑی کامیابی: ڈائریکٹر جرنل آف پولیس

سونبورہ پانپور انکاونٹر کے حوالے سے آج اونتی پورہ میں فورسز کی ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران ڈریکٹر جنرل آف پولیس دلباغ سنگھ نے میڈیا سے خطاب کرتے ہوئےکہا کہ سونبورہ انکاونٹر میں مارے جانے والے دہشت گرد فورسز کے لئے ایک بڑی کامیابی ہے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: لشکر کےدو دہشت گردوں کی ہلاکت فورسز کے لئے بڑی کامیابی: ڈائریکٹر جرنل آف پولیس
جموں وکشمیر: لشکر کےدو دہشت گردوں کی ہلاکت فورسز کے لئے بڑی کامیابی: ڈائریکٹر جرنل آف پولیس

سونبورہ پانپور انکاونٹر کے حوالے سے آج اونتی پورہ میں فورسزکی ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران ڈائریکٹر جنرل آف پولیس دلباغ سنگھ نے میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سونبورہ انکاونٹر میں مارے جانے والے دہشت گردوں کو فورسز کے لئے ایک بڑی کامیابی قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہا یہ دونوں کئی سارے معاملات میں ملوث تھے اور یہ نوجوانوں کو دہشت گردانہ صفوں میں شامل کرانے میں اہم رول ادا کرتے تھے۔ انہوں نے کہا یہ دونوں اونتی پورہ کے رہنے والے تھے، جن کی شناخت اعجاز احمد ریشی اور سجاد احمد صوفی کے طور ہوٸی ہے۔


ڈی جی پی نے اس جھڑپ میں مارے جانے والے دہشت گرد فورسز کے لئے ایک بڑی کامیابی قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مذکورہ دہشت گرد کئی ساری وارداتیں انجام  دینے میں ملوث تھے۔ انہوں نے کہا کہ اعجاز احمد ریشی بہت پہلے سے دہشت گردوں کے ساتھ ملا ہوا تھا اور سال 2016  میں اعجاز نے ای ڈی آئی پانپور حملے میں دہشت گردوں کو ٹرانسپورٹ فراہم کیا تھا، جس میں فوج کے چار اور سی آر پی ایف کے چار اہلکار شہید ہوئے تھے اور اس کے بعد انہوں خود دہشت گرد تنطیم لشکر طیبہ میں شمولیت اختیار کی تھی اور کئی سال قبل فرستبل پانپور میں ایک سی آر پی ایف گاڑی پرحملہ کیا تھا، جس میں 8 سی آر پی ایف اہلکار شہید ہوئے تھے اور اس کے بعد کدل بل پانپور میں بھی فورسز پر حلمہ کیا تھا، جس میں فورسزکے تین جوان شہید ہوئے تھے۔


ڈی جی پی کا مزید کہنا تھا کہ اعجاز احمد نوجوانوں کو دہشت گردی کی جانب راغب کرکے میں اپنا کلیدی رول نبھا رہا تھا۔ انہوں نےکہا کہ پولیس کی کوشش ہمیشہ رہتی ہے کہ نوجوانوں کو دہشت گردی سے دور رکھا جائے اور کچھ روز قبل اونتی پورہ پولیس نے چار نوجوانوں کو گھر والوں کی مدد سے واپس قومی دائرے میں لایا گیا، جنہوں نے دہشت گردانہ صفوں میں شمولیت اختیار کی تھی۔ اس دوران ڈی جی  نے کہا کہ حال ہی میں مارے گئے ایڈوکیٹ بابرقادری کے قاتلوں کو پکڑنے کے لئے پولیس تحقیات کررہی ہے اور انہیں کچھ اہم سراغ بھی مل گئے ہیں۔ امید کی جاتی ہے کہ بہت ہی جلد اس کے قاتلوں کو سامنے لایا جائےگا۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 29, 2020 01:30 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading