ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کووڈ ویکسینیشن کے دوران کیا موسیقی پروگرام کا اہتمام، ذہنی تناؤ کو دور کرنے کی اہم پہل

کورونا کے دوران لوگوں میں ذہنی تناؤ کی شرح بھی کافی حد تک بڑھ گئ ہے جبکہ تفریح کے لمحات سمٹ جانے کی وجہ سے کووڈ میں سرگرم عمل مختلف طبقات کے افراد ذہنی دباؤ کا شکار ہو رہے ہیں۔ جن میں صحافی بھی شامل ہیں۔

  • Share this:
کووڈ ویکسینیشن کے دوران کیا موسیقی پروگرام کا اہتمام، ذہنی تناؤ کو دور کرنے کی اہم پہل
صحافیوں نے پروگرام کی ستائش کی

جموں کشمیر:- کورونا کے دوران لوگوں میں ذہنی تناؤ کی شرح بھی کافی حد تک بڑھ گئ ہے جبکہ تفریح کے لمحات سمٹ جانے کی وجہ سے کووڈ میں سرگرم عمل مختلف طبقات کے افراد ذہنی دباؤ کا شکار ہو رہے ہیں۔ جن میں صحافی بھی شامل ہیں۔ حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے ڈسٹرکٹ انفارمیشن سینٹر اننت ناگ نے میوزیکل پروگرام کے دوران صحافیوں و میڈیا نمایندوں کےلئے ویکسینیشن عمل کا اہتمام کیا۔

دراصل کورونا کے دوران میدان میں سرگرم عمل صحافتی حلقوں سے منسلک افراد ذہنی تناؤ کا شکار ہو گۓ ہیں۔ جبکہ ذہنی آرام اور سکون قلب کےلئے میسر تمام تفریحی سامان کے سمٹ جانے کی وجہ سے میڈیا جیسے شعبوں سے منسلک افراد پریشانی میں مبتلا ہو گئے ہیں۔ جس کے تناظر میں ڈسٹرکٹ انفارمیشن اننت ناگ نے ضلع انتظامیہ اور محکمہ صحت کے اشتراک سے صحافیوں کے لیے ویکسینیشن مہم کا آغاز موسیقی کے ساتھ کیا۔ جس کا صحافتی برادری نے خیر مقدم کیا۔


ویکسینیشن کے لیے ڈسٹرکٹ انفارمیشن دفتر میں آنے والے صحافیوں اور میڈیا نمایندوں کے مطابق کشمیر میں گزشتہ 3 برسوں سے کووڈ اور مختلف وجوہات کے باوجود بھی صحافی اپنے پیشہ ورانہ فرائض انجام دے رہے ہیں تاہم پریشانیوں اور مصائب کے چلتے اکثر میڈیا نمایندے اور صحافی ذہنی تناؤ کا شکار ہو گۓ ہیں جبکہ کووڈ کی موجودہ صورتحال کے دوران سماجی روابط بھی سمٹ جانے کی وجہ سے مزید مشکلات پیدا ہو گئ ہیں۔ اننت ناگ ورکنگ جرنلسٹس ایسوسی ایشن کے صدر ایس طارق کے مطابق کشمیر میں ہر طرح کی حالات میں میڈیا نمایندے اپنی پیشہ ورانہ خدمات انجام دیتے آۓ ہیں اور بعض اوقات یہ لوگ ورک لوڈ اور صورتحال کی وجہ سے ذہنی تناؤ کے شکار ہوتے ہیں۔




ایسے میں ڈسٹرکٹ انفارمیشن اننت ناگ کی جانب سے موسیقی کے پروگرام کا اہتمام یقینی طور پر ایک منفرد پہل تھی اور اس دوران جہاں صحافیوں نے کووڈ ویکسین کروایا وہیں موسیقی کی دھن اور نغموں کی گونج سے یقینی طور تفریحی لمحات بھی میسر ہوۓ۔ اننت ناگ ورکنگ جرنلسٹس ایسوسی ایشن کے جنرل سکریٹری ساحل سہیل کے مطابق موجودہ دور میں تفریح کا ذریعہ بالکل منقطع ہو گیا جسکا براہ راست اثر ہر اس طبقے کو پڑ رہا ہے جو موجودہ حالات کے باوجود اپنے فرائض چکی انجام دہی میں سرگرم عمل ہیں۔ ساحل سہیل کے مطابق کشمیر کے صحافتی حلقے نے ہر طرح کی حالات کا سامنا کیا ہے یہی وجہ ہے کہ کووڈ کی موجودہ صورتحال میں بھی یہاں کے صحافی اور میڈیا نمایندے صحافتی قدروں کو بلند رکھے ہوئے ہیں۔ تاہم تفریحی سامان کے سمٹ جانے کی وجہ سے صحافیوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، ایسے میں جو ڈسٹرکٹ انفارمیشن آفس اننت ناگ نے جو پہل کی وہ ایک حیران کن پر دل کو محضوض کرنے والا پروگرام تھا جسکا کھلے دل سے خیرمقدم کیا گیا ۔

ڈسٹرکٹ انفارمیشن افسر اننت ناگ۔ خان زادہ عثمان کے مطابق صحافیوں اور میڈیا نمایندوں کی پیشہ ورانہ خدمات کو مدنظر رکھتے ہوئے اسطرح کے پروگراموں کو موجودہ  صورتحال میں کافی مثبت پہلو ہے جسے میڈیا صنعت اور صحافت سے وابستہ افراد کو ایک دلکش ماحول میں ویکسینیشن کی جانب راغب کیا۔ جبکہ محکمہ اطلاعت کے فنکاروں نے کووڈ اور ویکسینیشن سے منسلک پیغامات کو عام کرنے کےلئے اسے موسیقی کا رنگ دیا۔
اننت ناگ کے ڈپٹی چیف میڈیکل افسر، ڈاکٹر ایم وائ زاگو- کے مطابق صحافی اور میڈیا نمایندے ہائ رسک گروپ میں آتے ہیں اور سرکار کی عین ہدایات کے تناظر میں میڈیا نمائندوں کی ویکسینیشن عمل میں لائی گئ تاکہ اسے سماج کے دوسرے طبقات میں بھی ویکسینیشن کے حوالے سے ایک مثبت پیغام ہو سکے۔ اس موقع پر اے سی آر اننت ناگ ، سید یاسر کبروی بھی موجود رہے ۔ یاسر کا کہنا ہے کہ ضلع اننت ناگ میں تمام ہائ رسک گروپوں کی ویکسینیشن کا عمل جاری ہے اور اس گروپ میں میڈیا نمایندے بھی شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انتظامیہ کی کوشش ہے کہ ضلع میں جلد سے جلد ویکسینیشن کا 100 فی صدی ہدف پر کیا جا سکے تاکہ کورونا سے لڑنے میں  اجتماعی سطح پر جیت حاصل کی جا سکے۔

صحافیوں کے لئے محکمہ اطلاعت کی جانب سے منعقدہ میوزیکل ویکسینیشن پروگرام کا مقصد نہ صرف میڈیا نمایندوں کو موجودہ وبائ صورتحال میں تفریحی سامان میسر کرنا ہے ، بلکہ اس پروگرام کے ذریعے کورونا کے خلاف جنگ جیتنے کےلئے مثبت پیغامات کو عام کرنے کی بھی کوشش کی گئ۔ واضح رہے کہ کورونا کے دوران عام زندگی جہاں پٹری سے نیچے آگئی ہے وہیں سماجی روابط بھی محدود اور سمٹ کر رہ گۓ ہیں۔ جبکہ میڈیا اور دیگر شعبوں سے منسلک افراد کو پریشان کن صورتحال کا سامنا ہے ۔ ایسے میں ڈسٹرکٹ انفارمیشن آفس چاننت ناگ کی جانب سے میوزیکل ویکسینیشن پروگرام یقینی طور پر خود اعتمادی کو بحال کرنے کی بھی ایک مثبت کوشش تصور کی جا رہی ہے۔
Published by: Sana Naeem
First published: May 27, 2021 10:34 PM IST