உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ملک بھر میں ٹی بی کے خاتمے کے لئے کام کرنے پر 8 اضلاع کو گولڈ میڈل کا اعزاز حاصل، وادی کے 3 اضلاع اننت ناگ، پلوامہ اورکپواڑہ اضلاع منتخب

    ملک بھر میں ٹی بی کے خاتمے کے لئےکام کرنے پر 8 اضلاع کو گولڈ میڈل کا اعزاز حاصل

    ملک بھر میں ٹی بی کے خاتمے کے لئےکام کرنے پر 8 اضلاع کو گولڈ میڈل کا اعزاز حاصل

    ٹی بی یعنی تپ دق کے خاتمے کے لئے حکومت ہر محاذ پر اپنے وسائل اور خدمات کو بروئے کار لارہی ہے اور یہی وجہ ہے کہ اس سال ایک سروے کے مطابق وادی کے تین اضلاع میں ٹی بی کے کیسوں میں کمی کے پیش نظر ان اضلاع کو گولڈ میڈل سے نوازا گیا ہے۔

    • Share this:
    کشمیر: ٹی بی یعنی تپ دق کے خاتمے کے لیے حکومت ہر محاظ پر اپنے وسائل اورخدمات کو بروئے کار لارہی ہے اور یہی وجہ ہے کہ اس سال ایک سروے کے مطابق، وادی کے تین اضلاع میں ٹی بی کے کیسوں میں کمی کے پیش نظر ان اضلاع کو گولڈ میڈل سے نوازا گیا ہے۔
    Sub-National Certification for TB elimination  سروے کے مطابق، وادی کشمیر کے تین اضلاع جن میں کپواڑہ، پلوامہ اور اننت ناگ شامل ہیں، میں ٹی بی یعنی تپ دق کے کیسوں میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے اور اس سلسلے میں محکمہ صحت وخاندانی بہبود کے زیرنگراں سب نیشنل سٹیفیکشن سروے کی رپورٹ کے مطابق، تینوں اضلاع میں ٹی بی کے 60 فیصد کیسوں میں کمی واقع ہوئی اور اس میں ٹی بی سینٹروں کے نیم طبی و طبی عملہ نے جس جانفشانی سے کام کیا ہے، وہ قابل ستائش ہے۔
    ڈسٹرکٹ ٹی بی آفیسر، اننت ناگ/کولگام، ڈاکٹر فہیم عالم کا کہنا ہے کہ یہ ایک ٹیم ورک ہے اور محکمہ کے اعلیٰ افسران، انتظامیہ اور عملہ کی کوششوں کے باعث ٹی بی پر قابو پانے کا عمل شروع کیا گیا ہے، جس میں کامیابی حاصل ہوئی ہے۔
    واضح رہے کہ کولگام اور اننت ناگ اضلاع میں 17 لاکھ سے زائد آبادی میں سے گزشتہ سال 648 ٹی بی کے کیسوں کا علاج کرنا مطلوب ہو گیا ہے، جبکہ کیسوں میں بہت حد تک کمی واقع ہوئی ہے۔

    ماہرین کا کہنا ہے کہ جلد ہی اس بیماری پر قابو پاکر اس کا خاتمہ عمل میں لایا جائے گا۔ دونوں اضلاع میں اس وقت 16 ٹیسٹنگ مراکز قایم ہیں، جہاں ٹی بی کا ٹیسٹ اور اس کے بعد علاج و معالجہ شروع ہوتا ہے۔ ٹی بی کے خاتمے کے لئے بڑی پیمانے پر مہم جاری ہے جبکہ لیفٹینٹ گورنر نے بھی اپنے ٹوئٹ میں عملہ کو مبارکباد پیش کی ہے۔ ملک میں ایسے آٹھ اضلاع کا انتخاب عمل میں لایا گیا ہے، جہاں ٹی بی کے خاتمے میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے اور ان میں سے تین اضلاع وادی کے ہیں۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: