உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر کے Pulwama میں دہشت گردوں اور سیکورٹی فورسیز کے درمیان انکاونٹر

    جموں وکشمیر کے Pulwama میں دہشت گردوں اور سیکورٹی فورسیز کے درمیان انکاونٹر

    جموں وکشمیر کے Pulwama میں دہشت گردوں اور سیکورٹی فورسیز کے درمیان انکاونٹر

    جموں کشمیر کے پلوامہ میں سیکورٹی فورسیز اور دہشت گردوں کے درمیان انکاؤنٹر شروع ہوگیا۔ جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع کے چیوا کلان علاقے میں جمعہ کو دہشت گردوں اور سیکورٹی فورسیز کے درمیان تصادم شروع ہوا۔

    • Share this:
    پلوامہ: جموں کشمیر کے پلوامہ میں سیکورٹی فورسیز اور دہشت گردوں کے درمیان انکاؤنٹر شروع ہوگیا۔ جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع کے چیوا کلان علاقے میں جمعہ کو دہشت گردوں اور سیکورٹی فورسیز کے درمیان تصادم شروع ہوا۔ تفصیلات کے مطابق جموں وکشمیر پولیس اور فوج کی 50 راشٹریہ رائفلز کے علاوہ سی آر پی ایف کی ایک مشترکہ ٹیم نے چیوا کلان گاوں میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائی شروع کی، جیسے ہی سیکورٹی فورسز کی مشترکہ ٹیم مشتبہ مقام کی طرف پہنچی تو چھپے ہوئے دہشت گردوں نے سیکورٹی فورسز پرگولی چلائی، جس سے فائرنگ کا تبادلہ شروع ہوگیا۔
    جموں وکشمیر پولیس کے آئی جی کشمیر نے بھی ٹوئٹ کرکے تصدیق کی کہ سیکورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان گولیوں کا تبادلہ ہوا ہے۔ ذرائع کے مطابق یہ معلوم ہوا ہے کہ سیکورٹی فورسیز کے اس محاصرے میں دو دہشت گرد دارالعلوم میں پھنسے ہیں۔ جن کا تعلق لشکر طیبہ نامی ممنوعہ تنظیم سے بتایا جاتا ہے۔

    سیکورٹی فورسیز اور دہشت گردوں کے درمیان ہوئے اس کراس فائرننگ میں ایک عام شہری کو بھی گولی لگی ہے، جس کی شناخت ظہور احمد شیرگوجری کے بطور ہویی ہے۔ زخمی کو پلوامہ ڈسٹرکٹ اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔ جہاں پر اس کا علاج چل رہا ہے۔ تاہم اسپتال ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ زخمی کی حالت مستحکم ہے۔

    انکاونٹر میں ابھی تک ایک دہشت گرد کے ہلاک ہونے کی بھی خبر ہے۔ تاہم پولیس نے اس کی تصدیق نہیں کی ہے۔ واضح رہے کہ کل پلوامہ کے نائینہ علاقے میں لشکر طیبہ کے دو دہشت گرد سیکورٹی فورسیز کے ساتھ ہویی تصادم میں ہلاک کیے گئے تھے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: