ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: اننت ناگ کے سرگفواڑہ علاقے میں سلامتی دستوں کے ساتھ تصادم میں 2 ملٹینٹ ہلاک

پولیس کے مطابق جنوبی کشمیر میں گزشتہ 3 ماہ سے جاری ملٹینسی مخالف آپریشنز میں اب تک 100 سے زائد ملیٹینٹوں کو مار گرایا گیا ہے جن میں لشکر طیبہ، حزب المجاہدین اور جیش کے کئی اعلیٰ کمانڈر بھی شامل ہیں۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: اننت ناگ کے سرگفواڑہ علاقے میں سلامتی دستوں کے ساتھ تصادم میں 2 ملٹینٹ ہلاک
جموں وکشمیر: اننت ناگ کے سرگفواڑہ علاقے میں سلامتی دستوں کے ساتھ تصادم میں 2 ملٹینٹ ہلاک

اننت ناگ۔ جنوبی کشمیر میں سیکورٹی فورسز کی جانب سے ملٹینسی مخالف آپریشن میں دو ملیٹینٹوں کی ہلاکت کی خبر ہے۔ تفصیلات کے مطابق جموں کشمیر پولیس، فوج کی 3 راشٹریہ رائفلز اور سی آر پی ایف نے ایک مشترکہ آپریشن کے دوران اننت ناگ کے سری گفواڑہ علاقے کا محاصرہ کیا جس کے بعد ایک رہائشی گھر میں موجود ملیٹینٹوں نے فورسز پر فائرنگ کی اور کافی دیر تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا۔ ذرائع کے مطابق اس انکاؤنٹر میں دو ملٹینٹ مارے گئے ہیں۔ تاہم پولیس نے ابھی تک ایک ہی ملیٹینٹ کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔


ادھر انکاؤنٹر کے ابتدا میں ہی انکاؤنٹر کے مقام کے نزدیک ایک مقامی خاتون گولی لگنے سے شدید طور پر زخمی ہو گئی۔ عارفہ نامی اس خاتون کو فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا جہاں پر اس کا علاج چل رہا ہے۔ ادھر امن و قانون کی بحالی کی غرض سے ضلع کے کئی حساس مقامات پر فورسز کی اضافی تعیناتی کی گئی ہے۔ جبکہ ضلع میں موبائل انٹرنیٹ خدمات کو بھی معطل کر دیا گیا ہے۔ فورسز کے مطابق انکاؤنٹر میں ملیٹینٹوں کا خاتمہ ممکن بنانے کے لئے کافی مشقتوں کا سامنا کرنا پڑا۔ جبکہ گنجان آبادی والے علاقے کی وجہ سے فورسز کو کافی احتیاط سے کام لینا پڑا۔


ادھر پولیس کے مطابق جنوبی کشمیر میں گزشتہ 3 ماہ سے جاری ملٹینسی مخالف آپریشنز میں اب تک 100 سے زائد ملیٹینٹوں کو مار گرایا گیا ہے جن میں لشکر طیبہ، حزب المجاہدین اور جیش کے کئی اعلیٰ کمانڈر بھی شامل ہیں۔ پولیس کا یہ بھی کہنا ہے کہ آئندہ دنوں میں اس طرح کے آپریشنز میں مزید شدت لائی جاۓ گی۔ ادھر پولیس نے سرگفواڑہ انکاؤنٹر کو ایک کامیاب آپریشن قرار دیا ہے، جبکہ پولیس کے مطابق گزشتہ کامیاب آپریشنز کے دوران نہ صرف بڑے پیمانے پر ملیٹنٹوں کو ہلاک کیا گیا ہے بلکہ ملیٹینٹوں کے بھرتی عمل پر بھی کافی اثر پڑا ہے جس کی وجہ سے گزشتہ برس کے مقابلے میں رواں برس ملیٹنٹ کی صفوں میں شامل ہونے والے نئے نوجوانوں کی تعداد میں بھی کافی کمی رونما ہوئی ہے۔

Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jul 13, 2020 11:59 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading