ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : پی ڈی پی کے سابق لیڈر الطاف بخاری نے لانچ کی اپنی نئی پارٹی ، کیا یہ بڑا وعدہ

الطاف بخاری نے کہا کہ ان کی جماعت جموں وکشمیر اور نئی دہلی کے درمیان پائی جانے والی دوریوں کو دور کرنے نیز اعتماد کی بحالی کے لئے کام کرے گی ۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 08, 2020 11:03 PM IST
  • Share this:
جموں و کشمیر : پی ڈی پی کے سابق لیڈر الطاف بخاری نے لانچ کی اپنی نئی پارٹی ، کیا یہ بڑا وعدہ
جموں و کشمیر : پی ڈی پی کے سابق لیڈر الطاف بخاری نے لانچ کی اپنی نئی پارٹی ، کیا یہ بڑا وعدہ

سری نگر : سابق وزیر سید محمد الطاف بخاری نے اتوار کے روز 'جموں کشمیر اپنی پارٹی' کو رسمی طور پر لانچ کرتے ہوئے کہا کہ ان کی جماعت جموں وکشمیر اور نئی دہلی کے درمیان پائی جانے والی دوریوں کو دور کرنے نیز اعتماد کی بحالی کے لئے کام کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری جماعت کا منشور ترقی ہے ، ہماری قومی نقطہ نظر رکھنے والی ایک علاقائی جماعت ہے اور ہم صرف سچائی کی سیاست کریں گے ۔


الطاف بخاری نے اتوار کے روز شیخ باغ لال چوک میں واقع اپنی رہائش گاہ پر منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں اپنی نئی سیاسی اننگ کا باضابطہ طور پر اعلان کرتے ہوئے کہا کہ انہیں پرانے اور نئے سیاسی چہروں نے جوائن کیا ہے اور مستقبل میں مزید لوگ جوائن کرنے جارہے ہیں۔ اس موقع پر قریب دو درجن سیاسی لیڈران نے اس نئی سیاسی جماعت میں شرکت کی جن میں سے اکثر پی ڈی پی یا کانگریس کے ساتھ جڑے تھے۔



پریس کانفرنس کے دوران ایک نامہ نگار کے سوال کہ کشمیر میں کچھ لوگ انہیں سابق وزیر اعظم بخشی غلام محمد کے نام سے پکار رہے ہیں تو الطاف بخاری کا اس پر کہنا تھا کہ جموں وکشمیر کو اس وقت مرحوم بخشی کے اقتصادی وژن کی ضرورت ہے۔ ان کا کہنا تھاکہ 'یہ حقیقت ہے کہ میں پی ڈی پی میں تھا۔ جمہوریت میں لیڈران کا اپنا مقام ہوتا ہے۔ جو لیڈران بند ہیں ، انہیں رہا کیا جانا چاہیے ۔ بخشی صاحب کا ایک سیاسی وژن تھا ۔ ان کا ایک اقتصادی وژن تھا۔ آج کے وقت میں اس اقتصادی وژن کی بہت ضرورت ہے۔ اس وقت چھوٹے سے بڑے تمام تاجروں کی حالت انتہائی خراب ہے ۔ کیا ایسی صورتحال میں ہمیں خاموش بیٹھنا چاہیے؟ میرے ضمیر نے مجھے اس کی اجازت نہیں دی۔ اگر میری بات آج نہیں سنی جائے گی ، تو کل ضرور سنی جائے گی۔ ہم لوگوں میں سے ہیں ۔ ہم عام لوگوں کی نمائندگی کررہے ہیں ۔ عام لوگ مشکلات میں پھنسے ہیں'۔
First published: Mar 08, 2020 11:03 PM IST