உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیر کے بالائی علاقوں میں snowfall، سردی میں گلمرگ میں سیاح تازہ برفباری سے ہو رہے ہیں لطف و اندوز

     کشمیر کے بالائی علاقوں میں تازہ برفباری ہو رہی ہے۔ گلمرگ میں سیاح تازہ برفباری کا لطف لے رہے ہیں ۔ وہیں چلہ کلان کے تیس دن مکمل ہونے کے باوجود بھی ٹھٹھرتی سردی جاری۔

    کشمیر کے بالائی علاقوں میں تازہ برفباری ہو رہی ہے۔ گلمرگ میں سیاح تازہ برفباری کا لطف لے رہے ہیں ۔ وہیں چلہ کلان کے تیس دن مکمل ہونے کے باوجود بھی ٹھٹھرتی سردی جاری۔

    کشمیر کے بالائی علاقوں میں تازہ برفباری ہو رہی ہے۔ گلمرگ میں سیاح تازہ برفباری کا لطف لے رہے ہیں ۔ وہیں چلہ کلان کے تیس دن مکمل ہونے کے باوجود بھی ٹھٹھرتی سردی جاری۔

    • Share this:
    محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے عین مطابق وادی کشمیر کے میدانی علاقوں میں بارشیں جبکہ بالائی علاقوں میں ہلکی برف باری ہوئی۔مشہور سیاحتی مقامات گلمرگ اور ٹنگمرگ میں آج ایک بار پھرتازہ برفباری ہوئی۔ سنیچر کے روز صبح سویرے سے گلمرگ میں تازہ برفباری شروع ہوئی۔تازہ برفباری دیکھ کر سیاح اور مقامی لوگ کافی خوش نظر آئے۔برفباری کے دوران بھی عالمی سطح کے اسکی سلوپس پر ملکی سیاح اور مقامی لوگ خوب اسکینگ کررہے ہیں۔ وہی پر گلمرگ کے افروٹھ اور کنگڈوری میں بھی تازہ برفباری ہوئی۔ افروٹھ اور کنگڈوری میں کافی تعداد میں سیاح برفباری کالطف لے رہے ہیں۔محکمہ موسمیات کہنا ہے کہ وادی میں 23 جنوری کو ہلکے سے درمیانی درجے کی برف باری کا امکان ہے اور چوبیس جنوری سے موسم میں بہتری واقع ہونے کی توقع ہے۔

    کشمیر میں مشہور چلہ کلان کے 30دن مکمل ہونے کے باوجود بھی وادی میں ٹھٹھرتی سردی جاری ہے لوگوں کو کوئی راحت نہیں ہو رہی ہے تاہم وادی کے کئی علاقوں میں شبانہ درجہ حرارت میں کافی بہتری ریکارڈ کی گئی محکمہ موسمیات کے مطابق گلمرگ میں گزشتہ روز شبانہ درجہ حرارت منفی7.5 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ادھر 40 روزہ طویل سردی کا بادشاہ ''چلی کلان'' 31 جنوری کو ختم ہوگا۔ادھر محکمہ موسمیات کی پیشگوئی کے مطابق بائیس اور تئیس جنوری کو برفباری سے زمینی و فضائی ٹرانسپورٹ عارضی طور پر متاثر ہو سکتا ہے۔ گلمرگ میں برفباری دیکھنے کے لئے ہی زیادہ تر سیاح اور مقامی سیلانی آتے ہیں۔

    ممبئی سے راکیش نامی سیاح نے نیوز18اردو کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ انہیں آج انتہائی خوشی ہوئی کہ گلمرگ پہنچنے پر انہوں نے تازہ برفباری دیکھی۔انہوں نے اس دوران کچھ تصویریں اور ویڈیوز اٹھاکر سب سے پہلے اپنے دوستوں کو بھیجے تاکہ وہ بھی گلمرگ آنے کے لئے تاریخ طے کریں۔ ایک اور سیاح نے بتایاکہ وہ پہلی بار گلمرگ آئے تاہم وہ کئی بار سوئیزر لینڈ گئے ہیں لیکن کشمیر جیسی خوبصورت جگہ نہیں ملی۔ انہوں نے کہاکہ اپنے ہی ملک میں ایسی خوبصورت جگہ ہے تو باہر کے ممالک میں جانے کی ضرورت کیا ہے۔انہوں نے ملک کے تمام لوگوں کو کشمیر آنے کی اپیل کی۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: