ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

پلوامہ کی فروٹ منڈیوں میں دفعہ 370 کی منسوخی کے ڈیڑھ سال کے بعد میوے کا کاروبار دوبارہ ہوا شروع

ضلع سے وابستہ میوہ کاشتکاروں اور اس سے منسلک تاجروں نے فروٹ منڈیوں کو کھولنے کے لیے کافی جدوجہد کی جس پر ضلع انتظامیہ پلوامہ نے فروٹ منڈیوں میں کاروبار کی بحالی کو منظوری دے دی ہے۔

  • Share this:
پلوامہ کی فروٹ منڈیوں میں دفعہ 370 کی منسوخی کے ڈیڑھ سال کے بعد میوے کا کاروبار دوبارہ ہوا شروع
پلوامہ کی فروٹ منڈیوں میں دفعہ 370 کی منسوخی کے ڈیڑھ سال کے بعد میوے کا کاروبار دوبارہ ہوا شروع

پلوامہ۔ جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع کو سیب اور دیگر میوہ جات کی پیداوار میں جہاں کلیدی اہمیت حاصل ہے ۔ وہیں اس میں مارکٹنگ کا ہونا لازمی ہے ۔ ضلع پلوامہ میں گُذشتہ سال دفعہ 370  کی منسوخی کے بعد ضلع پلوامہ میں قائم سبھی فروٹ منڈیوں میں میوے کا کاروبار متاثر ہوا تھا۔ جبکہ رواں برس کورونا وائرس کے سبب بھی منڈیوں کو چالو کرنے میں تاخیر ہی ہوئی تھی۔


ضلع سے وابستہ میوہ کاشتکاروں اور اس سے منسلک تاجروں نے فروٹ منڈیوں کو کھولنے کے لیے کافی جدوجہد کی جس پر ضلع انتظامیہ پلوامہ نے فروٹ منڈیوں میں کاروبار کی بحالی کو منظوری دے دی ہے۔ پریچھو پلوامہ میں قائم میگا فروٹ منڈی کو چالو کرنے سے پہلے کوویڈ 19 کے سبب ایس او پیز کی تمام تیاریاں مکمل کرکے کاروبار شروع کردیا گیا ۔ جس سے ضلع پلوامہ کے میوہ کاشتکاروں نے کُچھ راحت پائی۔ اس وقت منڈی میں ناشپاتی اور سیب کی بلگیرین کے اقسام کا کاروبار شروع ہوا ہے ۔ ڈیڑھ سال کے بعد منڈی میں دوبارہ کاروبار شروع ہونے سے جہاں کاشتکاروں میں خوشی ہے ۔ وہیں گُذشتہ سال سے منڈی بند ہونے سے ابھی میوے کے کاروبار میں سُست رفتاری ہی دیکھی جارہی ہے۔


ضلع انتظامیہ پلوامہ نے اب پریچھو پلوامہ کی میگا فروٹ منڈی کے ساتھ ساتھ پچہار کی کنڈی فروٹ منڈی کو بھی چالو کر دیا ہے۔ ہر سال ضلع پلوامہ کی فروٹ منڈیوں سے کروڑوں روپیوں کا صرف سیب کا کاروبار ہوتا ہے۔ یہاں کی بیشتر آبادی باغبانی اور زرعی شعبے سے وابستہ ہے اور یہاں کی معیشت میں ان دونوں شعبوں کا کافی اہم رول ہے۔ پریچھو میگا فروٹ منڈی میں کاروبار کرنے والے میوہ کاشتکاروں کا کہنا ہے کہ اُنہوں نے کورونا وائرس کو مدنظر رکھتے ہوئے تمام ایس او پیز کو منڈی میں اپنایا ہے۔ تاہم منڈی کے لیے مختص کی گئی مزید پچاس کنال آراضی کو منڈی سے ملانے کے بعد منڈی میں بھیڑ نہیں ہوگی۔ وہیں ہارٹیکلچر مارکٹنگ آفیسر پلوامہ کا کہنا ہے کہ جلد ہی منڈی کی توسیع کی جائے گی اور منڈی میں کورونا وائرس کے سبب ایس او پیز پر عمل کیا جارہا ہے۔


 
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 21, 2020 02:57 PM IST