உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jammu and Kashmir: نہیں سنبھل رہی ہے کانگریس، اب بغاوت پر آمادہ ہوئے یہ عظیم لیڈر

    Jammu and Kashmir: نہیں سنبھل رہی ہے کانگریس، اب بغاوت پر آمادہ ہوئے یہ عظیم لیڈر

    Jammu and Kashmir: نہیں سنبھل رہی ہے کانگریس، اب بغاوت پر آمادہ ہوئے یہ عظیم لیڈر

    Ghulam Nabi Azad: جموں وکشمیر کانگریس میں سیاسی تصویر تیزی سے بدل رہی ہے۔ غلام نبی آزاد کے تقریباً 20 قریبی لیڈروں نے گزشتہ دو ہفتوں میں پارٹی کے الگ الگ عہدوں سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ اپنے استعفیٰ میں لیڈروں نے غلام احمد میر کو ریاستی یونٹ کے سربراہ کے عہدے سے ہٹانے سمیت کانگریس میں بڑی تبدیلی کا مطالبہ ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ملک کی سب سے پرانی پارٹی کانگریس (Congress) میں ان دنوں سب کچھ ٹھیک نہیں چل رہا ہے۔ لوک سبھا کے دو انتخابات میں زبردست شکست کے بعد پارٹی کے حوصلے پہلے سے ہی پست ہیں اور اب ممتا بنرجی کی ٹی ایم سی کانگریس کو توڑنے میں لگی ہے، لیکن ان سب کے درمیان کانگریس کے اپنے کچھ لیڈران نے ہی پارٹی کی ناک میں دم کر رکھا ہے۔ پنجاب میں کیپٹن امریندر سنگھ کی بغاوت کے بعد اب ایسا لگ رہا ہے کہ جموں وکشمیر میں سینئر لیڈر غلام نبی آزاد (Ghulam Nabi Azad) نے بھی پارٹی کے خلاف محاذ کھول دیا ہے۔ غلام نبی آزاد ان دنوں جموں وکشمیر میں زبردست ریلیاں کر رہے ہیں۔ خاص بات یہ ہے کہ ان ریلیوں میں وہ کانگریس کے خلاف بیان بازی کر رہے ہیں۔ سیاسی گلیاروں میں ایسی خبریں ہیں کہ غلام نبی آزاد خود اپنی پارٹی لانچ کرسکتے ہیں۔

      23 غیرمطمئن لیڈران میں شامل ہیں غلام نبی آزاد

      غلام نبی آزاد کانگریس کے ان 23 غیر مطمئن لیڈروں میں شامل ہیں، جنہوں نے گزشتہ سال پارٹی میں بڑی تبدیلی کا مطالبہ کرتے ہوئے سونیا گاندھی کو خط لکھا تھا۔ بدھ کو جموں وکشمیر کے پونچھ میں ایک ریلی کو خطاب کرتے ہوئے غلام نبی آزاد نے کہا تھا کہ کانگریس 2024 کے لوک سبھا انتخابات میں 300 سیٹوں کے ساتھ اقتدار میں آتی ہوئی نظر آرہی ہے۔ غلام نبی آزاد نے یہ بھی کہا ہے کہ جموں وکشمیر میں آرٹیکل 370 کو صرف سپریم کورٹ اور مرکزی حکومت ہی پھر سے بحال کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فی الحال ان کا واحد مطالبہ ریاست کی بحالی اور اسمبلی انتخابات کرانے کی ہے۔ ان کے اس بیان کو یو ٹرن کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ دراصل اس سے پہلے غلام نبی آزاد نے ایوان میں آرٹیکل 370 کو لے کر مرکزی حکومت پر جم کر نشانہ سادھا تھا۔

      جموں وکشمیر کے پونچھ میں ایک ریلی کو خطاب کرتے ہوئے غلام نبی آزاد نے کہا تھا کہ کانگریس 2024 کے لوک سبھا انتخابات میں 300 سیٹوں کے ساتھ اقتدار میں آتی ہوئی نظر آرہی ہے۔
      جموں وکشمیر کے پونچھ میں ایک ریلی کو خطاب کرتے ہوئے غلام نبی آزاد نے کہا تھا کہ کانگریس 2024 کے لوک سبھا انتخابات میں 300 سیٹوں کے ساتھ اقتدار میں آتی ہوئی نظر آرہی ہے۔


      مسلسل استعفیٰ دے رہے ہیں غلام نبی آزاد کے قریبی لیڈر

      جموں وکشمیر کانگریس میں سیاسی تصویر تیزی سے بدل رہی ہے۔ غلام نبی آزاد کے تقریباً 20 قریبی لیڈروں نے گزشتہ دو ہفتوں میں پارٹی کے الگ الگ عہدوں سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ اپنے استعفیٰ میں لیڈروں نے غلام احمد میر کو ریاستی یونٹ کے سربراہ کے عہدے سے ہٹانے سمیت کانگریس میں بڑی تبدیلی کا مطالبہ ہے۔ ان لیڈران نے الزام لگایا ہے کہ انہیں ریاستی کانگریس قیادت کے ’مخالفانہ رویہ‘ کے سبب یہ قدم اٹھانا پڑا ہے۔

      قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ  تعلیم و روزگار اور بزنس  کی خبروں کے لیے  نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: