உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News : سری نگر میں دہشت گردوں نے سیکورٹی فورسیز پر پھینکا گرینیڈ، حملے میں سی آر پی ایف کا ایک جوان زخمی

    J&K News : سری نگر میں دہشت گردوں نے سیکورٹی فورسیز پر پھینکا گرینیڈ، حملے میں سی آر پی ایف کا ایک جوان زخمی ۔ تصویر : اےا ین آئی ۔

    J&K News : سری نگر میں دہشت گردوں نے سیکورٹی فورسیز پر پھینکا گرینیڈ، حملے میں سی آر پی ایف کا ایک جوان زخمی ۔ تصویر : اےا ین آئی ۔

    Terrorist Attack in J&K: جموں و کشمیر میں دہشت گردوں نے پھر سے فوج اور سیکورٹی فورسیز کو نشانہ بنانے کی کوشش کی ہے ۔ سری نگر میں دہشت گردوں نے سیکورٹی فورسیز پر گرینیڈ سے حملہ کیا ۔ اس حملہ میں سی آر پی ایف کا ایک جوان معمولی طور پرزخمی ہوگیا ۔

    • Share this:
      سری نگر : جموں و کشمیر میں دہشت گردوں نے پھر سے فوج اور سیکورٹی فورسیز کو نشانہ بنانے کی کوشش کی ہے ۔ سری نگر میں دہشت گردوں نے سیکورٹی فورسیز پر گرینیڈ سے حملہ کیا ۔ اس حملہ میں سی آر پی ایف کا ایک جوان معمولی طور پرزخمی ہوگیا ۔ یہ حملہ علی جان روڈ پر واقع عیدگاہ کے پاس ہوا ۔ اس واقعہ کے بعد مجرموں کو پکڑنے کیلئے پولیس نے گھیرا بندی اور تلاشی مہم شروع کردی ہے ۔



       

      یہ بھی پڑھئے: IAS افسر شاہ فیصل کی ایڈمنسٹریٹیو سروس میں واپسی، مرکزی حکومت نے دی یہ نئی ذمہ داری


      قابل ذکر ہے کہ اس سے قبل 4 اگست کو پلوامہ کے گدورہ علاقے میں دہشت گردوں کے گرینیڈ حملے میں ایک مہاجر مزدور ہلاک اور دو دیگر زخمی ہو گئے تھے۔ مہلوک مزدور کی شناخت محمد ممتاز کے طور پر ہوئی تھی جو بہار کے ساکوا پارسا کا رہنے والے تھے۔ زخمیوں کا پلوامہ کے سرکاری ضلع اسپتال میں علاج کیا گیا۔ ان کی شناخت محمد عارف اور محمد مجبور کے نام سے ہوئی ہے۔ دونوں بہار کے رام پور کے رہنے والے تھے۔

       

      یہ بھی پڑھئے: جموں۔کشمیر انتظامیہ ناقص کارکردگی کا مظاہرہ کرنےوالے و داغداراہلکاروں کی فہرست کر رہی تیار


      وہیں جمعرات کو راجوری ضلع میں صبح دہشت گردوں نے فوج کے ایک کیمپ پر ایک خود کش حملہ کردیا تھا، جس میں چار جوان شہید ہوگئے تھے ۔ سیکورٹی فورسیز نے جوابی کارروائی میں دو دو دہشت گردوں کو مار گرایا تھا ۔ تقریبا تین سال کے بعد جموں و کشمیر میں ایسا فدائین حملہ ہوا تھا ۔ پولیس نے بتایا کہ دونوں دہشت گردوں کے بارے میں ایسا مانا جارہا ہے کہ وہ پاکستان میں واقع دہشت گرد تنظیم جیش محمد سے تعلق رکھتے تھے ۔

      کشمیر وادی میں آخری بڑا خودکش حملہ 14 فروری 2019 کو جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع کے لوتھپورہ میں ہوا تھا، جس میں سی آر ایف پی کے 40 جوان شہید ہوگئے تھے ۔ اس کے بعد ہندوستان نے پاکستان مقبوضہ کشمیر میں گھس کر دہشت گرد تنظیم جیش محمد کے ٹھکانوں پر ائیر اسٹرائیک کی تھی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: