உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں۔ کشمیر میں Target Killing سے نمٹنے کیلئے وزیر داخلہ امت شاہ ننے طلب کی آج اہم میٹنگ

    Youtube Video

    Target Killing in Jammu-Kashmir: ٹارگیٹ کلنگ کی وجہ سے مسلسل بگڑتی صورتحال سے نمٹنے کیلئے وزیر داخلہ امت شاہ Home Minister Amit Shah نے خود مورچہ سنبھال لیا ہے۔ امت شاہ نے دہشت گردانہ حملوں اور وادی کے تحفظ کو لیکر ایک بڑی اہم میٹنگ طلب کی ہے۔

    • Share this:
      Target Killing: جموں۔ کشمیر میں کشمیری پنڈتوں اور غیر مقامی لوگوں پر مسلسل حملوں کے حوالے سے آج بڑا فیصلہ کیا جاسکتا ہے۔ ٹارگیٹ کلنگ کی وجہ سے مسلسل بگڑتی صورتحال سے نمٹنے کیلئے وزیر داخلہ امت شاہ  Home Minister Amit Shah  نے خود مورچہ سنبھال لیا ہے۔ امت شاہ نے دہشت گردانہ حملوں اور وادی کے تحفظ کو لیکر ایک بڑی اہم میٹنگ طلب کی ہے۔ اس میٹنگ میں لیفٹننٹ گورنر منوج سنہا، وزرارت داخلہ کے سینئر افسران اس میٹنگ میں شرکت کریں گے ۔ واضح ہو کہ یہ جموں کشمیر کی صورتحال کے حوالے سے یہ پندرہ دن میں دوسری میٹنگ ہے۔

      وہیں مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ Home Minister Amit Shah نے جمعرات کو قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوبھال NSA Ajit Doval سے ملاقات کی اور کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگ کے حالیہ واقعات پر تبادلہ خیال کیا تھا۔ مرکزی وزیر مملکت، وزیر اعظم کے دفتر ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے بھی میٹنگ میں شرکت کی تھی۔ وزیر داخلہ کشمیر کی صورتحال پر معلومات حاصل کی تھیں۔

      یہ میٹنگ ایک ایسے دن ہوئی جب جموں و کشمیر کے کولگام میں وادی میں ہندوؤں پر دوسرے ٹارگیٹ حملے میں راجستھان کے ایک بینک منیجر کو ایک دہشت گرد نے گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا ۔ دہشت گردوں نے علاقائی دیہاتی بینک کی آریہ برانچ میں داخل ہونے کے بعد بینک منیجر وجے کمار کو گولی مار دی۔ تھی سی سی ٹی وی فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ قاتل شاخ میں داخل ہوتا ہے، گولی چلاتا ہے اور فرار ہو جاتا ہے۔ زخمی وجے کمار نے اس وقت آخری سانس لی جب اسے اسپتال لے جایا جا رہا تھا۔ اس سے پہلے بھی ہندو خاتون ٹیچر رجنی بالا کو گولی ماری گئی تھی۔

      وادی میں ٹارگیٹ کلنگ: کولگام میں دہشت گردوں نے بینک ملازم کا گولی مار کر کیا قتل

      قابل ذکر بات یہ ہے کہ مئی کے مہینے میں دوسری بار ایک کشمیری پنڈت کا قتل ہوا ہے۔ 12 مئی کو راہل بھٹ کو بڈگام ضلع کی چاڈورہ تحصیل میں تحصیلدار کے دفتر کے اندر گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔ کشمیر میں مئی کے مہینے میں اب تک ٹارگیٹ کلنگ کے تقریبا ساتسے آٹھ واقعات پیش آچکے ہیں۔ ان میں سے چار عام شہری اور تین پولیس اہلکار تھے جو ڈیوٹی پر نہیں تھے۔

      وہیں اس کے بعد گزشتہ کل کشمیر میں ٹارگیٹ کلینگ (Target Killing) کے ایک اور واقعہ میں دو غیر ریاستی مزدوروں کو گولی کا نشانہ بنایا گیا جن میں سے ایک کی موت ہوگئی۔ بڈگام ضلع کے ماگرے پورہ چاڈورہ علاقے میں رات کو ملیٹنٹوں نے اینٹ کے بٹھے ہر کام کررہے دو مزدروں کو گولی مار دی جس میں وہ زخمی ہوگئے۔ زخمیوں میں ارنیا بہار سے تعلق رکھنے والے دل خوش کمار اور پنجاب کے راجن شامل تھے۔ دونوں زخمی افراد کو نزدیکی اسپتال پہنچایا گیا لیکن ایک کی حالت نازک ہونے کی وجہ سے اُسے سرینگر کے ایس ایم ایچ ایس اسپتال منتقل کیا گیا۔

      دل خوش کمار ساکن ارنیا بہار کی اسپتال پہنچنے تک موت ہوگئی۔ اسے گردن میں گولی ماری گئی تھی۔ دوسرے زخمی شخص کی حالت مستحکم بتائی جارہی ہے۔ اس کے ہاتھ میں گولی لگی ہے۔ پولیس کے مطابق ملیٹنٹوں نے یہاں آکر اندھا دُھند گولیاں چلائیں۔ واضح رہے کہ گزشتہ کل یعنی دو جون کو ٹارگٹ کلینگ کا یہ دوسرا معاملہ رہا۔

      Target Killing: کشمیر میں دو غیر ریاستی مزدوروں کو ماری گئی گولی بہار کے ایک مزدور کی موت

      وہیں جموں و کشمیر کے بڈگام ضلع کے چاڈورہ علاقے میں بدھ کی دیر  رات دہشت گردوں نے ایک کشمیری ٹی وی اداکارہ امرین بھٹ کو گولی مار کر قتل کر دیا تھا۔ وہیں اس واقعے میں مقتول اداکارہ کا بھتیجا بھی شدید زخمی ہوگیا۔ اسے آرمی اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔
      یہ بھی پڑھئے:  کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگ کے سلسلے میں ایکشن میں امت شاہ، NSA Ajit Doval کے ساتھ کی میٹنگ

      غور طلب ہے کہ جمعرات کو بھی کشمیر میں ایک ہندو ملازم کو دہشت گردوں نے قتل کر دیا ہے۔ کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگ سے ناراض اور خوفزدہ ہندو کارکنوں نے بڑے پیمانے پر نقل مکانی کا انتباہ دیا تھا۔ جموں۔ کشمیر میں دہشت گرد اب ٹارگٹ کلنگ کرکے دہشت پھیلانا چاہتے ہیں۔ وہ غیر کشمیری اور ہندو شہریوں کو نشانہ بناکر حملے کررہے ہیں ۔ جمعرات کو بھی دہشت گردوں نے کوگلام میں ایک بینک مینجر کا گولی مار کر قتل کردیا تھا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: