உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹنے کے بعد پہلی بار سری نگر امت شاہ، شہید انسپکٹر کی فیملی سے ملاقات

    جموں وکشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹنے کے بعد پہلی بار سری نگر امت شاہ، شہید انسپکٹر کی فیملی سے ملاقات

    جموں وکشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹنے کے بعد پہلی بار سری نگر امت شاہ، شہید انسپکٹر کی فیملی سے ملاقات

    مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ ہفتہ کے روز جموں وکشمیر کے تین روزہ دورے پر سری نگر پہنچ گئے ہیں۔ جموں وکشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹنے کے بعد مرکز کے انتظام ریاست کا یہ پہلا سفر ہے۔ اس دوران وہ وادی میں سیکورٹی کی صورتحال کا جائزہ لیں گے۔

    • Share this:
      سری نگر: مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ ہفتہ کے روز جموں وکشمیر کے تین روزہ دورے پر سری نگر پہنچ گئے ہیں۔ جموں وکشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹنے کے بعد مرکز کے انتظام ریاست کا یہ پہلا سفر ہے۔ اس دوران وہ وادی میں سیکورٹی کی صورتحال کا جائزہ لیں گے۔ افسران نے بتایا کہ سری نگر ہوائی اڈے پر لیفٹینںٹ گورنر منوج سنہا نے امت شاہ کا استقبال کیا، جہاں جموں وکشمیر انتظامیہ کے دیگر سینئر افسران بھی موجود تھے۔ امت شاہ ایئر پورٹ پر اترنے کے بعد سب سے پہلے نوگام میں شہید انسپکٹر کے گھر متاثرہ فیملی سے ملنے پہنچے۔ وزیر داخلہ نے انسپکٹر پرویز احمد کے گھر جاکر اہل خانہ سے ملاقات کی، جن کا دہشت گردوں کے ذریعہ قتل کردیا گیا تھا۔

      وزیر داخلہ امت شاہ دن میں بعد ایک اعلیٰ سطحی سیکورٹی جائزہ میٹنگ کی صدارت کریں گے اور سری نگر - شارجہ کی پہلی اڑان کو ہری جھنڈی دکھا کر روانہ کریں گے۔ ان کے یہاں ایک نوجوان کلب کے اراکین کے ساتھ بات چیت کرنے کا بھی امکان ہے۔ پانچ اگست، 2019 کو آرٹیکل 370 کو منسوخ کرنے اور جموں وکشمیر ریاست کو مرکز کے انتظام دو خطوں میں تقسیم کرنے کے بعد امت شاہ کی یہ پہلا کشمیر کا دورہ ہے۔ امت شاہ کے وادی دورے سے پہلے پورے کشمیر میں سیکورٹی سخت کر دی گئی ہے۔

      شہید انسپکٹر پرویز احمد کی فیملی کے اظہار تعزیت کرتے ہوئے امت شاہ۔


      افسران نے بتایا کہ وادی میں سیکورٹی اہلکاروں کی اضافی تعیناتی کی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ خصوصی طور پر یہاں شہر میں سیکورٹی نظام سخت کردی گئی ہے۔ آفیشیل ذرائع نے بتایا کہ حال میں عام شہریوں کے قتل کے پیش نظر اضافی نیم فوجی اہلکاروں کی 50 کمپنیوں کو وادی میں شامل کیا جا رہا ہے۔

      افسران نے بتایا کہ سری نگر کے کئی علاقوں کے ساتھ کشمیر وادی کے دیگر حصوں میں سی آر پی ایف کے بنکر بنائے گئے ہیں۔ وہیں سری نگر میں کسی بھی مشتبہ سرگرمیوں پر نظر رکھنے کے لئے سی آر پی ایف کے ڈرون پورے آسمان پر چکر لگاتے ہوئے نظر آئے۔ اس کے علاوہ ڈل جھیل اور شہر کے اندرونی حصوں سے جھیلم ندی کی موٹر بوٹس کے ذریعہ نگرانی کی جارہی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: