உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگ کے سلسلے میں ایکشن میں امت شاہ، NSA Ajit Doval کے ساتھ کی میٹنگ

    Youtube Video

    Target Killing jammu and kashmir: وزیر داخلہ کشمیر کی صورتحال پر معلومات لے رہے ہیں۔ ادھر جمعرات کو بھی کشمیر میں ایک ہندو ملازم کو دہشت گردوں نے قتل کر دیا ہے۔ کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگ سے ناراض اور خوفزدہ ہندو کارکنوں نے بڑے پیمانے پر نقل مکانی کا انتباہ دیا تھا۔

    • Share this:
      نئی دہلی. مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ Home Minister Amit Shah نے جمعرات کو قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوبھال NSA Ajit Doval سے ملاقات کی اور کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگ کے حالیہ واقعات پر تبادلہ خیال کیا۔ مرکزی وزیر مملکت، وزیر اعظم کے دفتر ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے بھی میٹنگ میں شرکت کی۔ اطلاعات کے مطابق ملاقات ابھی جاری ہے۔ وزیر داخلہ کشمیر کی صورتحال پر معلومات لے رہے ہیں۔ ادھر جمعرات کو بھی کشمیر میں ایک ہندو ملازم کو دہشت گردوں نے قتل کر دیا ہے۔ کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگ سے ناراض اور خوفزدہ ہندو کارکنوں نے بڑے پیمانے پر نقل مکانی کا انتباہ دیا تھا۔

      یہ میٹنگ ایک ایسے دن ہوئی ہے جب جموں و کشمیر کے کولگام میں وادی میں ہندوؤں پر دوسرے ٹارگیٹ حملے میں راجستھان کے ایک بینک منیجر کو ایک دہشت گرد نے گولی مار کر ہلاک کر دیا ۔ دہشت گرد نے علاقائی دیہاتی بینک کی آریہ برانچ میں داخل ہونے کے بعد بینک منیجر وجے کمار کو گولی مار دی۔ سی سی ٹی وی فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ قاتل شاخ میں داخل ہوتا ہے، گولی چلاتا ہے اور فرار ہو جاتا ہے۔ زخمی وجے کمار نے اس وقت آخری سانس لی جب اسے اسپتال لے جایا جا رہا تھا۔ اس سے پہلے بھی ہندو خاتون ٹیچر رجنی بالا کو گولی ماری گئی تھی۔

      یہ بھی پڑھئے: IED Blast in Shopian: جموں۔کشمیر کے شوپیاں میں گاڑی کے اندر Blast، تین جوان زخمی

      غور طلب ہے کہ منگل کو دہشت گردوں نے کولگام ضلع میں ایک مہاجر کشمیری پنڈت استاد کو گولی مار کر ہلاک کر دیا۔



      قابل ذکر بات یہ ہے کہ مئی کے مہینے میں دوسری بار ایک کشمیری پنڈت کا قتل ہوا ہے۔ 12 مئی کو راہول بھٹ کو بڈگام ضلع کی چاڈورہ تحصیل میں تحصیلدار کے دفتر کے اندر گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا۔ کشمیر میں مئی کے مہینے میں اب تک ٹارگٹ کلنگ کے سات واقعات ہوچکے ہیں۔ ان میں سے چار عام شہری اور تین پولیس اہلکار تھے جو ڈیوٹی پر نہیں تھے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: