ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : جب ایم بی اے پاس بیٹا بنا تھا دہشت گرد تو حریت سربراہ نے کہی تھی یہ بات ، اب سیکورٹی فورسیز نے کیا ڈھیر

جنید سہرائی مارچ 2018 سے لاپتہ تھا اور بعد میں اے کے 47 تھامے ہوئی اس کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : جب ایم بی اے پاس بیٹا بنا تھا دہشت گرد تو حریت سربراہ نے کہی تھی یہ بات ، اب سیکورٹی فورسیز نے کیا ڈھیر
جموں و کشمیر : جب ایم بی اے پاس بیٹا بنا تھا دہشت گرد تو حریت سربراہ نے کہی تھی یہ بات ، اب سیکورٹی فورسیز نے کیا ڈھیر

جموں و کشمیر  (Jammu Kashmir) کے سری نگر (Srinagar) میں سیکورٹی فورسیز کے ساتھ انکاونٹر میں علاحدگی پسند تنظیم تحریک حریت کے سربراہ اشرف سہرائی  (Ashraf Sehrai)  کے دہشت گرد بیٹے جنید سہرائی (Junaid Sehrai)  سمیت دو دہشت گردوں کو مار گرایا گیا ہے ۔ جنید سہرائی مارچ 2018 سے لاپتہ تھا اور بعد میں اے کے 47 تھامے ہوئی اس کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی ۔


دہشت گرد جنید سہرائی نے کشمیر یونیورسٹی سے ایم بی اے کی اپنی ڈگری پوری کی تھی ۔ لائیو ہندوستان میں شائع ایک خبر کے مطابق اشرف سہرائی زیادہ شدت پسند مانے جاتے ہیں ۔ اشرف سہرائی نے بیٹے کے دہشت گرد بننے کے بعد میڈیا میں انٹرویو میں کہا تھا کہ جموں و کشمیر کی موجودہ نسل تعلیم یافتہ ہے ۔ یہ نسل اپنا راستہ خود منتخب کرسکتی ہے ۔ ہندوستان کی حکومت کو اس بات کا احساس ہونا چاہئے کہ آج کی نسل 1950 کی نہیں ہے ، جب شیخ عبد اللہ لوگوں کی قیادت کررہے تھے ۔ انہوں نے کہا تھا کہ یہ نسل 1990 کی ہے ۔ یہ نسل ہر بات سمجھتی ہے ۔ وہ لوگ کسی دباو کو نہیں برداشت نہیں کریں گے ۔ اگر ان کا حق چھینا جاتا ہے ، تو وہ سوال کرتے ہیں اور لڑنے کیلئے بندوق اٹھاتے ہیں ۔


بتادیں کہ علاحدگی پسند تنظیم تحریک حریت کے سربراہ اشرف سہرائی نے 23 مارچ 2018 کو سری نگر کے صدر پولیس اسٹیشن میں بیٹے جنید کی گمشدگی کی اطلاع دی تھی ۔ تب جنید کی عمر 28 سال تھی ۔ پولیس نے ان کی اطلاع پر جنید کی تلاش شروع کی تھی ، لیکن 24 گھنٹے بعد ہی دہشت گرد بنے جنید کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی تھی ۔ اس کے ہاتھوں میں اے کے 47 رائفل تھی ۔


اشرف سہرائی نے بیٹے جنید سے دہشت گردی سے دور رہنے کی اپیل کرنے سے بھی منع کردیا تھا ۔ اس وقت جموں و کشمیر کے ڈی جی پی ایس پی ویدھ نے بھی ان سے پیل کی تھی کہ وہ اپنے بیٹے سے دہشت گردی کا راستہ چھوڑنے کی اپیل کریں ، لیکن انہوں نے انکار کردیا تھا ۔ بتادیں کہ یہ پہلا ایسا معاملہ ہے جب جموں و کشمیر کے کسی علاحدگی پسند لیڈر کا بیٹا دہشت گردوں کی صف میں شامل ہوا ہو ۔
First published: May 19, 2020 09:41 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading