ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: آئی جی پی کشمیر کا دعویٰ- نگروٹہ میں مارے گئے دہشت گرد انتخابات میں رخنہ ڈالنے کا ارادہ رکھتے تھے

کشمیر زون پولیس کے انسپکٹر جنرل وجے کمار نے کہا کہ جموں کے نگروٹہ علاقے میں مارے گئے دہشت گرد وادی کشمیر میں ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کونسل (ڈی ڈی سی) کے انتخابات میں رخنہ ڈالنے کا ارادہ رکھتے تھے۔ انہوں نےکہا کہ ہر ایک امیدوار کو سیکورٹی فراہم کرنا مشکل ہے تاہم ہر ایک کو سیکورٹی زون میں رکھا جا رہا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 19, 2020 08:02 PM IST
  • Share this:
جموں وکشمیر: آئی جی پی کشمیر کا دعویٰ- نگروٹہ میں مارے گئے دہشت گرد انتخابات میں رخنہ ڈالنے کا ارادہ رکھتے تھے
جموں وکشمیر: آئی جی پی کشمیر کا دعویٰ- نگروٹہ میں مارے گئے دہشت گرد انتخابات میں رخنہ ڈالنے کا ارادہ رکھتے تھے-

سری نگر: کشمیر زون پولیس کے انسپکٹر جنرل وجے کمار نے کہا کہ جموں کے نگروٹہ علاقے میں مارے گئے دہشت گرد وادی کشمیر میں ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کونسل (ڈی ڈی سی) کے انتخابات میں رخنہ ڈالنے کا ارادہ رکھتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ ہر ایک امیدوار کو سکیورٹی فراہم کرنا مشکل ہے، تاہم ہر ایک کو سکیورٹی زون میں رکھا جا رہا ہے۔ جب وہ انتخابی مہم چلانے کے لئے جاتے ہیں تو انہیں ڈبل اسکارٹ فراہم کیا جاتا ہے۔ وجے کمار نے یہ باتیں جمعرات کو یہاں ایک اسپورٹس تقریب کے حاشیے پر نامہ نگاروں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے کہیں۔ انہوں نے نگروٹہ تصادم کے بارے میں پوچھے جانے پر کہا: 'پچھلے کچھ دنوں سے پاکستان دراندازی کرنے کی بہت کوششیں کر رہا ہے۔ الیکشن چل رہا ہے، جس کی تیاریاں کی جا رہی ہیں۔ وہ انتخابی سرگرمیوں میں خلل ڈالنے کی کوششیں کر رہے ہیں۔ سکیورٹی فورسز نے بہترین تال میل سے چاروں دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا ہے۔ ان کا ارادہ کشمیر آکر انتخابات میں رخنہ ڈالنا تھا'۔

آئی جی پی نے کہا کہ ہم انتخابی امیدواروں کو بھی سکیورٹی فراہم کر رہے ہیں، جنہوں نے بقول ان کے انتخابی مہم چلانا بھی شروع کر دی ہے۔ ان کا کہنا تھا: 'ہم انتخابات کے لئے تیاری کر رہے ہیں۔ جموں و کشمیر پولیس اور دیگر سکیورٹی فورسز پوری طرح سے تیار ہیں۔ ہم انتخابی امیدواروں کو بھی سکیورٹی فراہم کر رہے ہیں۔ امیدواروں نے انتخابی مہم چلانا بھی شروع کر دیا ہے۔ کوئی ڈرنے کی بات نہیں ہے'۔ انتخابی امیدواروں کو سیکورٹی نہ فراہم کرنے کی شکایت پر وجے کمار نے کہا: 'ہر ایک امیدوار کو سیکورٹی فراہم کرنا مشکل ہے۔ مگر ہر ایک کو سیکورٹی زون میں رکھا جا رہا ہے۔ جب وہ انتخابی مہم چلانے کے لئے جاتے ہیں تو ان کو ڈبل اسکارٹ فراہم کیا جا رہا ہے'۔

وجے کمار نے جنوبی ضلع پلوامہ کے کاکہ پورہ میں گذشتہ شام ہونے والے گرینیڈ حملے کے بارے میں پوچھے جانے پر کہا: 'پلوامہ میں ایک بدقسمت واقعہ پیش آیا۔ دہشت گردوں کا ہدف پولیس اور سی آر پی ایف تھی'۔ انہوں نے کہا: 'گرینیڈ شہریوں کے بیچوں بیچ گر گیا، جس کے نتیجے میں 12 عام شہری زخمی ہوئے۔ چار زخمیوں کو سری نگر منتقل کیا گیا تھا جن کی حالت خطرے سے باہر ہے۔ ہمیں معلوم ہوا ہے کہ یہ گرینیڈ کس نے پھینکا ہے۔ جس نے پھینکا ہے اس کو بہت جلد پکڑ لیں گے'۔

یہ پوچھے جانے پر کہ کیا بی ڈی سی انتخابات کے پیش نظر حملوں میں اضافہ دیکھنے کو مل سکتا ہے تو آئی جی پی کا کہنا تھا: 'انتخابات ہوں یا 15 اگست یا 26 جنوری یا کسی وی وی آئی پی کا دورہ کشمیر اس وقت حملے کا خدشہ موجود ہوتا ہے۔ مگر ہم کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کے لئے تیار ہیں'۔ انہوں نے ایک اور سوال کے جواب میں کہا: 'لانچنگ پیڈس پر 200 سے 250 دہشت گرد سرحد کے اس پار دراندازی کرنے کے لئے تیار بیٹھے ہیں۔ مگر سیکورٹی فورسز پوری طرح سے مستعد ہیں۔ ان کی کسی بھی کوشش کو ناکام بنایا جائے گا'۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 19, 2020 07:52 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading