உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر میں رواں سال بدلتے موسمی حالات کے برے اثرات فصلوں پر ہورہے ہیں مرتب

    جموں وکشمیر میں موسم خشک ہونے کے ساتھ ہی درجہ حرارت میں اضافہ ہونے سے وادی کشمیر کے دیگر حصوں کی طرح ہی ضلع پلوامہ میں سیب کے درختوں پرعجیب سی بیماری نمودار ہوئی ہے۔

    جموں وکشمیر میں موسم خشک ہونے کے ساتھ ہی درجہ حرارت میں اضافہ ہونے سے وادی کشمیر کے دیگر حصوں کی طرح ہی ضلع پلوامہ میں سیب کے درختوں پرعجیب سی بیماری نمودار ہوئی ہے۔

    جموں وکشمیر میں موسم خشک ہونے کے ساتھ ہی درجہ حرارت میں اضافہ ہونے سے وادی کشمیر کے دیگر حصوں کی طرح ہی ضلع پلوامہ میں سیب کے درختوں پرعجیب سی بیماری نمودار ہوئی ہے۔

    • Share this:
    پلوامہ: جموں وکشمیر میں رواں سال بدلتے موسمی کے حالات کے برے اثرات مختلف فصلوں پر مرتب ہورہے ہیں۔ وادی کشمیر میں گرما کے موسم میں پہلے میدانی علاقوں میں بارشیں اور بالائی علاقوں میں برف باری کے سبب درجہ حرارت میں کافی کمی آئی تھی۔ موسم خشک ہونے کے ساتھ ہی درجہ حرارت میں اضافہ ہونے سے وادی کشمیر کے دیگر حصوں کی طرح ہی ضلع پلوامہ میں سیب کے درختوں پرعجیب سی بیماری نمودار ہوئی ہے۔

    تفصیلات  کے مطابق ضلع پلوامہ کے میوہ باغات میں گذشتہ کچھ روز سے سیب کے درختوں کے پتے ہرے رنگ سے پیلے ہوکر تیزی سے درختوں سے گررہے ہیں۔ سیب کے درختوں پر پہلی مرتبہ پتوں کا رنگ پیلا ہو رہا ہے اور بعد میں سوکھ کر پتے درختوں سے گررہے ہیں۔ درختوں سے پتوں کے گرنے کے ساتھ ہی اب سیب بھی درختوں سے گرنے لگے ہیں۔ تیزی سے درختوں پر لگ رہی بیماری سے میوہ کاشتکاروں میں کافی تشویش پائی جارہی ہے۔

    ٹیکنہ پلوامہ کے عارف فروٹ گروور نے نیوز18 اردو کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ رواں سال سیب کی پیداوار میں کافی اضافہ ہوا تھا۔ کاشتکاروں کو امید تھی کہ اس سال انہیں بہتر منافع ہوگا، لیکن سیب کے درختوں پرلگی بیماری سے کاشتکاروں کو بھاری مالی نقصان کا خدشہ ہو رہا ہے۔ تاہم محکمہ باغبانی کے ماہر نثار احمد نے اس حوالے سے نیوز18 اردو کو بتایا  کہ موسمی تبدیلی کے سبب یہ بیماری نمودار ہوئی ہے۔ تاہم کاشتکاروں کو ادویات کے چھڑکاو میں احتیاط برتنا لازمی ہے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: