உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    لاؤڈاسپیکر کے ذریعے ہندوستانی فوج  نے Pakistan Rangers کو کیا خبردار، 'غیر ضروری تعمیرات' روکنے کیلئے  ظاہر کی ناراضگی: سرکاری ذرائع

    ہندوستانی  فوج نے ٹیتوال سیکٹر میں ایل او سی کے ساتھ پاکستانی رینجرز کی جانب سے تعمیراتی کام  پر  اعتراض ظاہر کیا ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ہندوستانی فوج سرحد کے قریب پاکستان رینجرز ز Pakistan Rangers کی طرف سے تعمیر کی ایک 'غیرمعمولی سرگرمی' کو دیکھنے کے بعد، لاؤڈ اسپیکر کا استعمال کرتے ہوئے، پاکستان رینجرز سے 'غیر ضروری تعمیرات' روکنے کے لیے اپنی ناراضگی ظاہر کی۔

    ہندوستانی  فوج نے ٹیتوال سیکٹر میں ایل او سی کے ساتھ پاکستانی رینجرز کی جانب سے تعمیراتی کام  پر اعتراض ظاہر کیا ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ہندوستانی فوج سرحد کے قریب پاکستان رینجرز ز Pakistan Rangers کی طرف سے تعمیر کی ایک 'غیرمعمولی سرگرمی' کو دیکھنے کے بعد، لاؤڈ اسپیکر کا استعمال کرتے ہوئے، پاکستان رینجرز سے 'غیر ضروری تعمیرات' روکنے کے لیے اپنی ناراضگی ظاہر کی۔

    ہندوستانی  فوج نے ٹیتوال سیکٹر میں ایل او سی کے ساتھ پاکستانی رینجرز کی جانب سے تعمیراتی کام  پر اعتراض ظاہر کیا ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ہندوستانی فوج سرحد کے قریب پاکستان رینجرز ز Pakistan Rangers کی طرف سے تعمیر کی ایک 'غیرمعمولی سرگرمی' کو دیکھنے کے بعد، لاؤڈ اسپیکر کا استعمال کرتے ہوئے، پاکستان رینجرز سے 'غیر ضروری تعمیرات' روکنے کے لیے اپنی ناراضگی ظاہر کی۔

    • Share this:
    ہندوستانی فوج نے جموں کشمیر کے سرحدی ضلع کپواڑہ کے ٹیٹوال سیکٹر میں لائن آف کنٹرول کے ساتھ پاکستانی رینجر کی طرف سے شروع کی گئی 'تعمیر' پر اعتراض کیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ہندوستانی فوج سرحد کے قریب پاکستان رینجرز ز Pakistan Rangers کی طرف سے تعمیر کی ایک 'غیرمعمولی سرگرمی' کو دیکھنے کے بعد، لاؤڈ اسپیکر کا استعمال کرتے ہوئے، پاکستان رینجرز سے 'غیر ضروری تعمیرات' روکنے کے لیے اپنی ناراضگی ظاہر کی۔ سرکاری ذرائع نے نیوز 18 کو بتایا کہ ہندوستانی فوج کی وارننگ کے بعد علاقے میں 'تعمیر' رک گئی ہے۔

    واضح رہے پاکستانی رینجرز نے سرحد کے دوسری طرف کچھ ڈھانچہ بنانا شروع کر دیا تھا جو کہ اس طرف سے 500 میٹر کے دائرے میں آگیا کیونکہ ہندو پاک معاہدے کے مطابق دونوں طرف سے پانچ سو میٹر تک کوئی بھی تعمیر کا کام نہیں کرسکتا اسے خلاف ورزی تصور کی جاتی ہے ایک عام پروٹوکول کے طور پر کسی بھی فریق کو کسی بھی قسم کی تعمیر کی اجازت نہیں ہے جب تک کہ دونوں فریقوں کو پیشگی اطلاع نہ دی جائے۔

    انہوں نے مزید کہا کہ اگر انہیں مطلع کیا جاتا تو وہ ڈھانچہ تعمیر کر سکتے تھے۔ علاقے میں تعینات افسران کا کہنا ہے کہ تاہم فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ یہ بنکر تھا یا کوئی جھونپڑی۔ فعلال کام روکا گیا ہے اور سرحد پر امن امان برقرار ہے کیونکہ اس تعمیر سے سرحد پر تعاون کا ماحول پیدا ہوگیا تھا۔
    قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: