ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: شہریت قانون کے خلاف احتجاج درمیان، پاکستانی خاتون خدیجہ کوملی ہندوستانی شہریت

پونچھ میں ایک پاکستانی خاتون کو ہندوستانی شہریت دی گئی ہے۔ خدیجہ پروین نامی خاتون کو36 سال کے طویل انتظار کے بعد ہندوستانی شہریت دی گئی ہے۔

  • Share this:

ملک بھر میں شہریت قانون کے خلاف اور حق میں مظاہرے جاری ہیں۔اسی بیچ پونچھ میں ایک پاکستانی خاتون کو ہندوستانی شہریت دی گئی ہے۔ خدیجہ پروین نامی خاتون کو 36 سال کے طویل انتظار کے بعد ہندوستانی شہریت دی گئی ہے۔ ڈی سی پونچھ راہل یادو نے خدیجہ پروین کو شہریت کا سرٹیفکیٹ حوالے کیا۔ ہندوستانی شہریت ملنے سے خدیجہ اور ان کے ارکان خاندان بیحد مسرور ہیں اور انہوں نے حکومت کا شکریہ ادا کیا ہے۔




پاکستان میں پیدا ہوئی خدیجہ پروین کی شادی،اسّی کی دہائی میں پونچھ کے رہنے والے تاج محمد سے ہوئی تھی۔تب سے ہی وہ یہاں ویزا پر رہ رہی تھیں۔خدیجہ اور تاج محمد کو دو بیٹیاں اور ایک بیٹا ہے ۔خدیجہ کے مطابق سال دو ہزار میں انہوں نے شہریت کے لئے کاغذی کاروائی مکمل تھی تاہم ابھی تک انھیں کئی رکاوٹوں کا سامنا کرنا پڑا تھا۔انہوں نے ہندوستانی شہریت کے منتظر دیگر افراد کو بھی شہریت دینے کی حکومت سے اپیل کی ہے۔
First published: Dec 24, 2019 03:24 PM IST