உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: جموں و کشمیر میں شہید پولیس اہلکاروں کے اہل خانہ اور پولیس کے درمیان تعلقات کو بہتر بنانے کی پہل

    J&K News: جموں و کشمیر میں شہید پولیس اہلکاروں کے اہل خانہ اور پولیس کے درمیان تعلقات کو بہتر بنانے کی پہل

    J&K News: جموں و کشمیر میں شہید پولیس اہلکاروں کے اہل خانہ اور پولیس کے درمیان تعلقات کو بہتر بنانے کی پہل

    Jammu and Kashmir : پلوامہ پولیس نے شہداء کے اہل خانہ کے ساتھ ایک میٹنگ کا اہتمام کیا۔ ڈسٹرکٹ پولیس لائنز پلوامہ میں میٹنگ کا انعقاد کیا گیا اور اس کی صدارت ڈی وائی ایس پی (ڈی اے آر) پلوامہ نے کی۔

    • Share this:
    پلوامہ : جموں و کشمیر پولیس کی جانب سے پولیس کے شہدا کے اہل خانہ کے ساتھ تال میل کو بہتر بنانے کی پہل شروع کی گئی ہے ۔ جموں و کشمیر پولیس نے اس سلسلے میں پولیس شہداء کے اہل خانہ کے  ساتھ میٹنگ کی ۔ تفصیلات کے مطابق پولیس شہداء کے اہل خانہ اور محکمہ پولیس کے درمیان تعلقات کو مضبوط بنانے کے لیے جو دونوں پولیس کنبوں کا حصہ ہیں، آج پلوامہ پولیس نے شہداء کے اہل خانہ کے ساتھ ایک میٹنگ کا اہتمام کیا۔ ڈسٹرکٹ پولیس لائنز پلوامہ میں میٹنگ کا انعقاد کیا گیا اور اس کی صدارت ڈی وائی ایس پی (ڈی اے آر) پلوامہ نے کی۔

     

    یہ بھی پڑھئے: Baramulla Encounter میں فوج نے 3 پاکستانی دہشت گردوں کو مار گرایا، ایک جوان شہید


    اس میٹنگ میں ضلع پلوامہ کے پولیس شہداء کے متعدد NOKs نے حصہ لیا، جس کا مقصد پولیس شہداء کے اہل خانہ کی فلاح و بہبود اور ان کی شکایات سننا تھا۔ چیئرنگ افسر نے NOKs کی جانب سے پیش کیے گئے مسائل اور شکایات کو بغور سنا اور انہیں یقین دلایا کہ ان کی شکایات کو ترجیحی بنیادوں پر دور کیا جائے گا۔

     

    یہ بھی پڑھئے: دہشت گردوں نے کی تمام حدیں پار، کمسن بچی پر چلائی گولی، جلد دیا جائے گا جواب: IGP کشمیر


    انہوں نے شرکاء کو یہ بھی بتایا کہ محکمہ پولیس کی جانب سے NOKs کے فائدے کے لیے مختلف فلاحی اقدامات کیے گئے ہیں اور پولیس کے تمام یونٹ شہداء پولیس کے NOKs کو ہر ممکن مدد فراہم کرنے اور ان کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔

    انہوں نے مزید کہا کہ پولیس شہداء پولیس کنبہ کے ناقابل فراموش رکن ہیں اور ان کے NOKs کا خیال رکھنا محکمہ پولیس کی اولین ذمہ داری ہے ،کیونکہ شہداء نے مادر وطن کی خاطر اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا ہے ۔ انہوں نے تمام NOKs کو کسی بھی ممکنہ مدد کے لیے کسی بھی وقت اپنے دفتر سے رجوع کرنے کے لیے کہا۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: