ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

شوپیاں دہشت گردانہ مخالف آپریشن، جیش محمد کمانڈر'سجاد افغانی' بھی ہلاک

جنوبی ضلع شوپیاں کے راولپورہ میں ہفتے کو شروع ہونے والے دہشت گردانہ مخالف آپریشن میں ایک اور مشتبہ دہشت مارا گیا ہے، جس کے ساتھ مارے جانے والے دہشت گردوں کی تعداد بڑھ کر دو ہوگئی ہے۔ جموں و کشمیر پولیس نے پیر کو مارے جانے والے دہشت گردکی شناخت جیش محمد کے کمانڈر سجاد افغانی کے طور پرکی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 15, 2021 01:46 PM IST
  • Share this:
شوپیاں دہشت گردانہ مخالف آپریشن، جیش محمد کمانڈر'سجاد افغانی' بھی ہلاک
شوپیاں دہشت گردانہ مخالف آپریشن، جیش محمد کمانڈر'سجاد افغانی' بھی ہلاک۔ تصویر: یواین آئی اردو

سری نگر: جنوبی ضلع شوپیاں کے راولپورہ میں ہفتے کو شروع ہونے والے دہشت گردانہ مخالف آپریشن میں ایک اور مشتبہ دہشت مارا گیا ہے، جس کے ساتھ مارے جانے والے دہشت گردوں کی تعداد بڑھ کر دو ہوگئی ہے۔ جموں و کشمیر پولیس نے پیر کو مارے جانے والے دہشت گردکی شناخت جیش محمد کے کمانڈر سجاد افغانی کے طور پرکی ہے۔ کشمیر زون پولیس کے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر ایک ٹوئٹ میں کہا گیا: 'شوپیاں انکاونٹر میں جیش محمد کمانڈر سجاد افغانی کی ہلاکت پر آئی جی پی کشمیر نے شوپیاں پولیس اور سیکورٹی فورسز کو مبارکباد پیش کی ہے'۔


بتایا جا رہا ہے کہ ولایت لون عرف سجاد افغانی جیش محمد کا ضلع کمانڈر شوپیاں تھا۔ پولیس نے اتوارکو مارے جانے والے دہشت گردکی شناخت لشکر طیبہ سے وابستہ جہانگیر احمد وانی ولد مرحوم عبدالرحمان وانی ساکن رکھ نارہ پورہ شوپیاں کے طور پر کی تھی۔ پولیس نے یہ بھی کہا تھا کہ دہشت گردانہ مخالف آپریشن کے دوران تین رہائشی مکانات میں آگ لگ گئی۔

سری نگر میں قائم فوج کی پندرہویں کور کے ترجمان نے بتایا تھا کہ مسلح تصادم کی جگہ سے ایک امریکی ساخت ایم فور کاربائن، اس کی تین میگزینیں، دھات کو چھید کر پار ہونے کی صلاحیت رکھنے والی گولیوں کے 36 رائونڈز اور 9600 روپے نقدی برآمد ہوئی ہے۔ راولپورہ میں مسلح تصادم کی جگہ پر اتوار کو احتجاجیوں اور سکیورٹی فورسز کے درمیان شدید جھڑپیں بھی ہوئی تھیں جن میں کچھ احتجاجی نوجوان اور ایک پولیس اہلکار زخمی ہوا تھا۔


ذرائع نے بتایا کہ سکیورٹی فورسز نے پتھرائو کرنے والے نوجوانوں کو منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس کے گولے داغے اور پیلٹ بندوقوں کا استعمال کیا۔ انہوں نے کہا کہ سکیورٹی فورسز کی کارروائی میں دو احتجاجی نوجوان پیلٹ لگنے سے زخمی ہوئے جنہیں ضلع ہسپتال شوپیاں سے سری نگر کے ایس ایم ایچ ایس ہسپتال منتقل کیا گیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ پتھرائو کے دوران پولیس ہیڈ کانسٹیبل نذیر احمد سر میں پتھر لگنے سے زخمی ہوئے۔
قبل ازیں سرکاری ذرائع نے بتایا کہ شوپیاں کے راولپورہ علاقے میں جنگجوئوں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر پولیس، فوج کی 34 آر آر اور 14 بٹالین سی آر پی ایف نے مذکورہ علاقے کو ہفتے کی شام محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا۔ انہوں نے بتایا کہ ایک مشتبہ جگہ کی طرف پیش قدمی کے دوران وہاں موجود جنگجوئوں نے سکیورٹی فورسز پر فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے درمیان مسلح تصادم چھڑ گیا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ محاصرے میں پھنسنے والے جنگجوئوں کو بار بار خود سپردگی کی پیشکش کی گئی جو انہوں نے ٹھکرا دی۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 15, 2021 01:46 PM IST