உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہلی میں جماعت اسلامی ہند کی پریس کانفرنس، Target Killing کی مذمت کی، کہا! حکومت کی ذمہ داری ہے اس خوف کو ختم کرے۔۔۔

    Youtube Video

    Target Killing: جماعت اسلامی ہند نے واضح الفاظ میں کہا کہ کشمیر پر سیاست نہیں ہونا چاہیئے،حکومت کی ذمہ داری ہے کہ خوف کی فضا ختم کرے۔مائگریشن کو لیکر بھی جماعت نے اپنا موقف رکھتے ہوئے کہا کہ صرف ہندو ہی نقل مکانی نہیں کر رہے، دوسرے بھی کر رہے ہیں۔

    • Share this:
      دہلی میں جماعت اسلامی ہند نے پریس کانفرنس کی۔اس موقع پر جماعت اسلامی ہند نے ہم کشمیر میں ٹارگٹ کلنگ کی مذمت کی۔ جماعت اسلامی ہند نے واضح الفاظ میں کہا کہ کشمیر پر سیاست نہیں ہونا چاہیئے،حکومت کی ذمہ داری ہے کہ خوف کی فضا ختم کرے۔مائگریشن کو لیکر بھی جماعت نے اپنا موقف رکھتے ہوئے کہا کہ صرف ہندو ہی نقل مکانی نہیں کر رہے، دوسرے بھی کر رہے ہیں۔

      وہیں کل مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ (Union Home Minister Amit Shah) نے (کشمیر) وادی میں چنندہ طریقے سے ایک کے بعد ایک کئے جا رہے قتل عام (Target killing) کے پیش نظر جمعہ کو جموں وکشمیر کی سیکورٹی صورتحال کا جائزہ (Security Review Meeting) لیا۔ افسران نے یہ جانکاری دی۔

      قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوبھال، فوجی سربراہ منوج پانڈے اور جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا ان اہم لوگوں میں شامل تھے، جنہوں نے اس میٹنگ میں حصہ لیا۔ وزارت کے ایک افسر نے بتایا کہ وزیر داخلہ نے جموں وکشمیر کی سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لیا۔ انہوں نے بتایا کہ اس میٹنگ میں آئندہ امرناتھ یاترا کے لئے سیکورٹی انتظام کا موضوع بھی اٹھا۔

      وادی میں ٹارگیٹ کلنگ: کولگام میں دہشت گردوں نے بینک ملازم کا گولی مار کر کیا قتل

      یہ میٹنگ ایسے وقت میں ہوئی جب دہشت گردوں نے کشمیر وادی میں چنندہ ڈھنگ سے غیر مسلموں، سیکورٹی اہلکاروں، ایک فنکار اور مقامی شہریوں سمیت ایک کے بعد ایک کئی لوگوں کا قتل کیا ہے۔ جمعرات کو دو الگ الگ حادثات میں کشمیر میں ایک بینک ملازم اور اینٹ بھٹہ مزدور کا قتل کر دیا گیا جبکہ ایک دیگر مزدور کو زخمی کردیا گیا۔

      سری نگر میں 24 مئی کو پولیس اہلکار سیف اللہ کو ان کے گھر میں ہی گولی مار کر قتل کردیا گیا تھا جبکہ اس کے دو دن بعد ہی بڈگام میں امرین بٹ کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا تھا۔

      اجتماعی نقل مکانی کا خطرہ بڑھا

      وزیر اعظم پیکیج کے تحت 2012 میں تقرر کئے گئے کشمیری پنڈت، راہل بھٹ کے قتل کے بعد احتجاج ہو رہے ہیں، جس سے اجتماعی نقل مکانی کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔ وسطی کشمیر کے بڈگام ضلع کے چڈورا میں 12 مئی کو راہل بھٹ کا گولی مار کر قتل کردیا گیا تھا۔

      کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگ کے سلسلے میں ایکشن میں امت شاہ، NSA Ajit Doval کے ساتھ کی میٹنگ

      قابل ذکر بات یہ ہے کہ مئی کے مہینے میں دوسری بار ایک کشمیری پنڈت کا قتل ہوا ہے۔ 12 مئی کو راہل بھٹ کو بڈگام ضلع کی چاڈورہ تحصیل میں تحصیلدار کے دفتر کے اندر گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔ کشمیر میں مئی کے مہینے میں اب تک ٹارگیٹ کلنگ کے تقریبا سات سے آٹھ واقعات پیش آچکے ہیں۔ ان میں سے چار عام شہری اور تین پولیس اہلکار تھے جو ڈیوٹی پر نہیں تھے۔

       
      Published by:Sana Naeem
      First published: