ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

لاک ڈاؤن سے پریشان مائیگرنٹ کشمیری پنڈت ملازمین کررہے ہیں جموں واپسی کامطالبہ، اہل خانہ سے بچھڑنےستا رہا ہےکا غم

کوروناوائرس وبا کے چلتے مرکز کے زیر انتظام ریاست جموں و کشمیر میں لاک ڈاون کی وجہ سے وادی کشمیر کے سرکاری دفاتر میں کام کر رہے مائیگرینٹ کشمیری پنڈتوں نے اپنے اہل خانہ سے ملنے کی خواہش ظاہر کرتے ہوئے ودای کشمیر سے جموں واپسی کا مطالبہ کیا ہے۔

  • Share this:
لاک ڈاؤن سے پریشان مائیگرنٹ کشمیری پنڈت ملازمین کررہے ہیں جموں واپسی کامطالبہ، اہل خانہ سے بچھڑنےستا رہا ہےکا غم
کوروناوائرس وبا کے چلتے مرکز کے زیر انتظام ریاست جموں و کشمیر میں لاک ڈاون کی وجہ سے وادی کشمیر کے سرکاری دفاتر میں کام کر رہے مائیگرینٹ کشمیری پنڈتوں نے اپنے اہل خانہ سے ملنے کی خواہش ظاہر کرتے ہوئے ودای کشمیر سے جموں واپسی کا مطالبہ کیا ہے۔

 کوروناوائرس وبا کے چلتے مرکز کے زیر انتظام ریاست جموں و کشمیر میں لاک ڈاون کی وجہ سے وادی کشمیر کے سرکاری دفاتر میں کام کر رہے مائیگرینٹ کشمیری پنڈتوں نے اپنے اہل خانہ سے ملنے کی خواہش ظاہر کرتے ہوئے ودای کشمیر سے جموں واپسی کا مطالبہ کیا ہے۔  وادی کشمیر کے مختلف علاقوں میں قائم کشمیری پنڈتوں کے لیے مخصوص ٹرانسٹ کیمپوں کے ساتھ ساتھ  دیگر کرایہ کے رہائشی مکانات میں درماندہ کشمیری پنڈتوں نے سرکار سے مطالبہ کیا ہے کہ انکی جموں واپسی کے پختہ انتظامات کیے جائیں۔  انہوں نے کہا ہے کہ وہ وادی کے مختلف اضلاع میں مائیگرینٹ پوسٹوں پر سرکاری ملازمت کر رہے ہیں۔ تاہم بعض درماندہ ملازمین کے بچے،  اہل خانہ اور ان کے والدین جموں میں ہیں اور انہیں پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔  وہ اپنے اہل خانہ سے ملنے کے لیے بے تاب ہیں جبکہ کئی ایک کنبوں کے بچے اور والدین جموں میں لاک ڈاون کے دوران تنہا ہیں۔

وادی کے ضلع اننت ناگ کے مٹن،  ویسو کولگام،   نتنوسہ کپوارہ،  ویرون باہمولہ،  کھیربھوانی گاندربل،  ہال پلوامہ میں قائم۔ ٹرانسٹ کیمپوں کے علاوہ دیگر شہروں اور گاوں دیہات میں کرایہ پے رہایش پزیر تقریبا ١٢ سو درماندہ کشمیری پنڈت ملازمین اور انکے اہل خانہ کوروناوائرس کی وبا اور اس کے لاک ڈاون سے اثر انداز ہو رہے ہیں۔ انہوں نے مرکزی سرکار اور جموں و کشمیر کے لیفٹنٹ گورنر سے ان کی جموں واپسی کی اپیل کی ہے۔ قاضی گنڈ اننت ناگ میں کرایہ ہر رہائش پزیر سنجے کاچرو اور اس کے بچوں کا کہنا ہے کہ وہ اپنے دیگر اہل خانہ سے ملنے کے لیے پریشان ہیں۔ انہوں نے سرکار سے مدد کی اپیل کی ادھر بارہمولہ کالونی میں رہنے والے اوتار بٹ نے اپنے اہل خانہ سے ملنے کی خواہش ظاہر کی ہے اور سرکار سے جموں واپسی کا مطالبہ کیا ہے۔


 ادھر کشمیری پنڈتوں کی نمائندہ تنظیم آل پارٹیز مائیگرینٹ کارڈینیشن کمیٹی کے چیئرمین ونود پنڈت نے ایک بار پھر وبا کے پیش نظر لاک ڈاون سے درماندہ ملازمین اور ان کے اہل خانہ کی وادی سے جموں واپسی کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے سرکار سے مطالبہ کیا ہے کہ دیگر ریاستوں کی طرح وادی میں بھی پھنسے کشمیری پنڈتوں کی جموں واپسی کے لیے اقدامات اُٹھاے جائیں۔

انہوں نے سرکار اور لیفٹنٹ گورنر سے امید ظاہر کی کہ ملازمین کو جلد جموں روانہ کیا جاے گا۔ ادھر ریلیف کمشنر ٹی کے بٹ نے کہا ہے کہ پورے ملک میں وبا پھیلی ہے جبکہ ریاست میں درماندہ مسافروں اور دیگر افراد کی گھر واپسی کے انتظامات کیے جا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ ڈیژنل کمشنر کشمیر نے اس حوالے سے ایک ٹیویٹ کر جانکاری دی ہے اور ١١ مئ کے بعد پاس کے حصول کے لیے کہا ہے انہوں نے کہا کہ سرکار جلد ہی اس میں اقدامات آُٹھا رہی ہے۔

 ( کولگام سے ظہور رضوی کی رپورٹ ) ۔
First published: May 07, 2020 02:01 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading