ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : گزشتہ 6 ماہ میں بنائے گئے 19لاکھ آیوشمان کارڈ ، لوگ جم کر اٹھا رہے ہیں فائدہ

Jammu and Kashmir News : اعداد و شمار کے مطابق جموں و کشمیر نے پچھلے چھ مہینوں میں 19 لاکھ آیوشمان کارڈ تیار کیے اور اس اسکیم سے لوگوں کو کافی فائدہ مل رہا ہے ۔ جموں و کشمیر میں سب پچھلے 6 مہینوں میں سب سے زیادہ آیوشمان کارڈ بنائے ہیں ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : گزشتہ 6 ماہ میں بنائے گئے 19لاکھ آیوشمان کارڈ ، لوگ جم کر اٹھا رہے ہیں فائدہ
جموں و کشمیر : گزشتہ 6 ماہ میں بنائے گئے 19لاکھ آیوشمان کارڈ ، لوگ جم کر اٹھا رہے ہیں فائدہ

جموں : نیشنل ہیلتھ اتھارٹی (این ایچ اے) حکومت ہند کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق پچھلے چھ مہینوں میں سب سے زیادہ تعداد میں جموں و کشمیر یوٹی میں آیوشمان کارڈ بنائے گئے ہیں ۔ اعداد و شمار کے مطابق جموں و کشمیر نے پچھلے چھ مہینوں میں 19 لاکھ آیوشمان کارڈ تیار کیے اور اس اسکیم سے لوگوں کو کافی فائدہ مل رہا ہے ۔ جموں و کشمیر میں سب پچھلے 6 مہینوں میں سب سے زیادہ آیوشمان کارڈ بنائے ہیں ۔


اے بی پی ایم  جے  اے وائی صحت کارڈ کا آغاز 26 دسمبر 2020 کو وزیر اعظم نے کیا  تھا ، جس کا مقصد فلوٹر کی بنیاد پر فی خاندان کو 5 لاکھ روپے یونیورسل ہیلتھ انشورنس کا فائدہ دلانا تھا۔ اے بی پی ایم جے  اے  وائی ہیلتھ کارڈ کے وہی فوائد ہیں جو پی ایم جے  اے وائی کے تحت دستیاب ہیں اور یہ اسکیم جموں و کشمیر کے تمام باشندوں سمیت حکومت جموں و کشمیر کے ملازمین / پنشنرز اور ان کے کنبے پر محیط ہے۔


آیوشمان بھارت پردھان منتری جن آروگیہ یوجنا SEHAT PM-JAY کے ساتھ مل کر صحت کی دیکھ بھال کی سہولیات تک کیش لیس رسائی فراہم کرتا ہے ۔  یہ جموں و کشمیر کے تمام باشندوں کو طبی علاج پر تباہ کن اخراجات کو کم کرنے میں مدد کرتا ہے اور اسپتال میں داخل ہونے سے پہلے 3 دن تک اور اسپتال میں داخل ہونے کے بعد 15 دن تک کے اخراجات ، جس میں تشخیص اور ادویات شامل ہیں ، کا احاطہ کرتا ہے۔ خاندان کی عمر یا جنس پر کوئی پابندی نہیں ہے۔  پہلے سے موجود تمام شرائط و ضوابط پہلے دن سے احاطہ کئے ہوئے ہیں۔  اسکیم کے فوائد پورے ملک میں پورٹیبل ہیں ۔ یعنی ایک مستفید ہندوستان میں اے بی  پی ایم جے اے وائی کے تحت 24000 سے زیادہ سرکاری یا نجی اسپتالوں (بشمول مرکزی زیر انتظام علاقے جموں و کشمیر میں شامل 226 اسپتالوں) میں کہیں بھی علاج کروا سکتا ہے ۔


اس اسکیم کو لیفٹیننٹ گورنر نے اولین ترجیح دی ہے ، جو اس اسکیم پر عملدرآمد کی کڑی نگرانی کر رہے ہیں ۔ چیف ایگزیکٹو افسر ، اسٹیٹ ہیلتھ ایجنسی جے اینڈ کے ، ڈاکٹر ساگر ڈوفوڈے نے بتایا کہ ریاستی ہیلتھ ایجنسی نے دیگر اقدامات کے ساتھ ساتھ ایک منفرد پہل 'گاؤں گاؤں آیوشمان' شروع کی ہے ، جس کا مقصد پوری آبادی کو کم سے کم مدت میں آیوشمان بھارت کارڈ فراہم کرنا ہے ۔ اس بات کو یقینی بنانے کے لیے کہ تمام اہل مستحقین رجسٹرڈ ہیں ، سی ایس سیز کی جانب سے رجسٹریشن کیمپ لگائے جا رہے ہیں ۔

جموں کے رہنے والے بشیر خان نے بتایا میرے پاس آیوشمان بھارت اسکیم کےتحت ایک کارڈ تھا۔ میری 23 سالہ بچی کے گردے کا آپریشن تھا ، لیکن میرے پاس اتنے پیسے نہیں تھے کہ میں اُس کا علاج کرا سکوں۔ میں ایک ڈاکٹر سے ملا ، اُس نے مجھ سے پوچھا کیا تمہارے پاس آیوشمان کا کارڈ ہے، تو میں نے ہاں کہا ۔ ڈاکٹر نے مجھے کہا کہ فوراً اپنی بچی کو داخل کراو ۔ اس کا آپریشن مفت میں ہوگا ، کیونکہ آپ کے پاس آیوشمان کارڈ ہے۔ بشیر خان نے مزید بتایا میں نے اپنی بچی کو داخل کیا اور اس کا آپریشن ہوگیا اور میرا ایک بھی پیسہ خرچ نہیں ہوا ۔ بھارت سرکار کی یہ اسکیم غریبوں کے لئے کافی فائدہ مند ہے۔

وہیں ڈوڈہ کے رہنے والے وشال شرما کا کہنا ہے میرے والد کی طبیعت اچانک سے کافی خراب ہوگئی ۔ ہمارے پاس اُس وقت والد کا علاج کرانے کیلئے درکار رقم دستیاب نہیں تھی ، لیکن ہمارے پاس والد کا آیوشمان کارڈ تھا ۔ وشال نے مزید بتایا کہ اسپتال میں ہم نے آیوشمان کارڈ دکھایا اور میرے والد کا علاج بنا کسی خرچے کے ہوا۔ حکومت ہند کی اس اسکیم سے کئی غریب لوگوں کی جان بچے گی ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 31, 2021 11:57 PM IST