உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں و کشمیر : پی او سی ایس او کے تحت 254 مقدمات 2015-19 کے درمیان رجسٹرڈ ہوئے

    جموں و کشمیر : پی او سی ایس او کے تحت 254 مقدمات 2015-19 کے درمیان رجسٹرڈ ہوئے ۔ علامتی تصویر ۔

    جموں و کشمیر : پی او سی ایس او کے تحت 254 مقدمات 2015-19 کے درمیان رجسٹرڈ ہوئے ۔ علامتی تصویر ۔

    Jammu and Kashmir News : پارلیمنٹ میں ایک تحریری جواب میں اسمرتی ایرانی نے کہا کہ قومی اور ریاستی کمیشن برائے تحفظ اطفال کو جے جے ایکٹ ، 2015 کے نفاذ کی نگرانی کا حکم دیا گیا ہے۔

    • Share this:
    جموں : وومن اینڈ چائلڈ ڈیولپمنٹ کی وزارت نے جمعہ کو پارلیمنٹ کو بتایا کہ جموں و کشمیر میں 2017-19 کے دوران پاکسو کے تحت کل 216 مقدمات زیر التوا ہیں ۔ جبکہ مختلف عدالتوں میں 2015-19 کے درمیان 254 مقدمات زیر التوا ہیں۔ وومن اینڈ چائلڈ ڈیولپمنٹ کی مرکزی وزیر اسمرتی ایرانی گزشتہ پانچ سالوں کے دوران مختلف عدالتوں میں زیر التوا بچوں کے جنسی استحصال کے مقدمات کی تفصیلات دے رہی تھیں ۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت نے طویل عرصے سے زیر التوا ایسے مقدمات کو کم کرنے اور نمٹانے کے لیے کیا خاص منصوبہ بنایا ہے۔  یونین آف انڈیا نے 1023 فاسٹ ٹریک اسپیشل کورٹ کے قیام کے لیے ایک اسکیم شروع کی ہے ، جس میں 389 خصوصی پاکسو عدالتیں شامل ہیں ۔

    جواب میں مزید بتایا گیا کہ 660 ایف ٹی ایس سی جن میں 343 خصوصی پی او سی ایس او عدالتیں شامل ہیں ، جو جون 2021 تک آپریشنل ہوچکی ہیں ، جنہوں نے ہائی کورٹس کی دستیاب معلومات کے مطابق 51،600 سے زائد زیر التوا مقدمات کو نمٹا دیا ہے۔ جموں و کشمیر کے اعداد و شمار کے بارے میں جواب میں کہا گیا کہ سال 2015-19 کے درمیان خطے میں پاکسو  کے تحت کل 254 مقدمات درج کیے گئے جبکہ 216 مقدمات متعلقہ قانون کے تحت 2017-19 کے درمیان درج کیے گئے۔

    وومن اینڈ چائلڈ ڈیولپمنٹ کی وزارت نے جمعہ کو پارلیمنٹ کو بتایا کہ جموں و کشمیر میں گزشتہ تین سالوں کے دوران بچوں کے خلاف جرائم کے کل 1،302 کیس سامنے آئے ہیں۔ پارلیمنٹ میں ایک تحریری جواب میں اسمرتی ایرانی نے کہا کہ قومی اور ریاستی کمیشن برائے تحفظ اطفال کو جے جے ایکٹ ، 2015 کے نفاذ کی نگرانی کا حکم دیا گیا ہے۔ ساتھ ہی بچوں کے حقوق کے تحفظ کے قومی کمیشن نے ملک میں بچوں کی دیکھ بھال کرنے والے اداروں سی سی آئیز کا سماجی آڈٹ کیا تھا۔

    جموں و کشمیر کے حوالے سے تفصیلات دیتے ہوئے مرکزی وزیر نے کہا کہ 2017 سے 2019 کے درمیان بچوں کے خلاف جرائم کے تحت مجموعی طور پر 1،302 مقدمات درج کیے گئے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: